عورتوں کے حقوق۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔عبدالحنان ارشد/سو لفظوں کی کہانی

خواتین کے لیے وہ بچپن سے ہی کچھ کرنا چاہتا تھا۔ اندر ہی اندر کڑھتا کہ خواتین کو اُن کے حقوق نہیں ملتے۔

تین جن کے شوہر انہیں توجہ نہیں دیتے تھے۔ انہیں ہر طرح کی امداد دینے کے لیے مہر وقت میسر رہتا تھا۔ چاہیے دنیا والے اُس رشتے کو غلط کہتے ہوں۔
اُس کا نظریہ تھا خاتون کبھی غلط نہیں ہوتی۔
یہاں تک کہ سوشل میڈیا پر صنفِ نازک کے پاؤں پر بھی دل والا نشان ہی بھیجتا تھا۔

آج معلوم ہوا دس سال سے ہمشیرہ سے قطعہ تعلقی ہے، کیونکہ بہن نے جائیداد سے حصہ مانگ لیا تھا۔

عبدالحنان ارشد
عبدالحنان ارشد
عبدالحنان نے فاسٹ یونیورسٹی سے کمپیوٹر سائنس کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ ملک کے چند نامور ادیبوں و صحافیوں کے انٹرویوز کر چکے ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ آپ سو لفظوں کی 100 سے زیادہ کہانیاں لکھ چکے ہیں۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *