• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • زکریا یونیورسٹی میں بھی جنسی سکینڈل کی بازگشت،پروفیسر و طالبعلم گرفتار،70 فلمیں برآمد

زکریا یونیورسٹی میں بھی جنسی سکینڈل کی بازگشت،پروفیسر و طالبعلم گرفتار،70 فلمیں برآمد

ملتان: ملک کی نامی گرامی یونیورسٹیوں کے بعد زکریا یونیورسٹی ملتان بھی جنسی سکینڈل کی زد میں آگئی ۔واقعہ میں ملوث ملزم اجمل مہار اور علی رضا کو با اثر افراد کی پشت پناہی حاصل ہے۔علی رضا قبضہ مافیا کے سر گرم رکن اختر عالم قریشی کا بیٹا ،تاجر شاہد عالم قریشی کا بھتیجا ہے۔ ملزموں نے کئی طالبات کو نہ صرف جنسی طور پر ہراساں کیا بلکہ زیادتی بھی کی،متاثرہ طالبہ کئی ماہ تک انصاف کی دہائی دیتی رہی، لیکن کہیں شنوائی نہ ہوئی، تاہم اب معاملہ سامنے آنے پٌر پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے۔مقدمہ درج ہونے کے باوجود پولیس معاملہ دبانے کی کوشش کرتی رہی۔دونوں ملزموں کو جیل میں خصوصی پروٹوکول دیا جاتا رہا۔ذرائع کے مطابق دونوں ملزمان منشیات کے دھندے میں بھی ملوث تھے اور گھر اور دفتر میں منشیات کا سٹاک جمع رکھتے تھے۔پولیس نے کارروائی کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے ملزم علی رضا کے تنزیل نامی دوست کو بھی حراست میں لیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہےاجمل مہار کو میرٹ اور قوائد و ضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہوئے لیکچرار بھرتی کیا گیا تھا۔ملزم زمانہ طالبعلمی سے ہی جنسی سکینڈل اور فحش حرکات میں ملوث بتایا جاتا ہے۔لیکن متنازعہ کیرئیر اور سنگین الزامات کے باوجود یونیورسٹی نے کبھی کوئی ایکشن نہیں لیا۔

زیادتی کا شکار ہونے والی طالبہ کا کہنا ہے کہ اس نے وائس چانسلر کو درخؤاست دی تھی لیکن کوئی کارروائی نہ کی گئی۔جبکہ ترجمان کا موقف ہے کہ یونیورسٹی کو کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *