وزیراعظم کے انٹرویو پر سیاسی جماعتوں کا شدید ردعمل

مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے وزیراعظم عمران خان کے انٹرویو پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے وزیراعظم عمران خان کے انٹرویو پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ عمران صاحب نے بیان دیا اپوزیشن اُن کی حکومت کو گرانے کی کوشش کر رہی ہے، اپوزیشن کو حکومت گرانے کے لیے اقدامات کرنے ضرورت نہیں، عمران خان کی ٹیم اور ان کی کارکردگی حکومت گرانے کے لیے کافی ہے۔مریم اورنگزیب نے کہا کہ حکومت چلانا عمران خان اور ان کی ٹیم کے بس کی بات نہیں ہے، وزیراعظم کا یہ کہنا کہ عوام کے لیے باعث تشویش ہے کہ انتخابات قبل ازوقت ہوں گے، قبل از وقت انتخابات کے بیان کے بعد عمران خان اپنی کُرسی پر نہ بیٹھیں۔انہوں نے مزید کہا کہ جس وزیراعظم کو اپنی حکومت پر اعتماد نہیں، وہ ایک منٹ بھی اپنی کرسی پر نہ بیٹھے۔پاکستان کی فوج پی ٹی آئی کے منشورکے ساتھ کھڑی ہے، وزیراعظماین آر او کے مطالبے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ترجمان ن لیگ نے کہا کہ شہباز شریف این آر او مانگنے والے کا نام بتانے کا مطالبہ کر چکے ہیں، عمران خان نے اپنی نااہلی سے نظر ہٹانے کے لیے این آر او کی بات کی۔مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب نے جس کو این آر او دینا تھا دے چکے، وہ ہیں علیمہ باجی، علیمہ خانم کی منی لانڈرنگ کے پیچھے عمران خان ہیں۔انہوں نے کہا کہ جیل جانے والوں اور 150 سے زیادہ پیشیاں بھگتنے والوں کو این آر او کی ضرورت نہیں ہے۔ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو اہلیہ سے اپنے وزیر اعظم ہونے کا پتہ چلتا ہے، اور ٹی وی سے ڈالر مہنگا ہونے کا پتہ چلتا ہے، پاکستان کی عوام عمران خان کی حیثیت کو پہچان چکی ہے۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *