عظمٰی عارف کی تحاریر
عظمٰی عارف
عظمٰی عارف
ادب کی ایک طالبہ جو زمانے کو دیکھنے اور پرکھنے کے تمام مروج آئینوں سے بے زار ہے۔۔۔

مرد و عورت کا رشتہ صرف جنسیاتی نہیں، عمرانی بھی ہے۔۔۔عظمی عارف

کہتے ہیں پرانے زمانےمیں  بادشاہ ہرن کا شکار کرنے جایا کرتے تھے -یہ ان کے لیے بہت تفریحی سرگرمی تھی لیکن حقیقت میں بکرے اور ہرن کے گوشت میں انیس بیس کا فرق بھی نہیں ہے – ہرن چونکہ پہنچ←  مزید پڑھیے

تنہائی کے سو سال(نوبل انعام یافتہ) ۔۔۔عظمی عارف

تنہائی کے سو سال(نوبل انعام یافتہ) گیبریل گارسیا مارکیز یہ بوئندا خاندان کی 100 سالہ عروج و زوال اور انسانی جبلتوں کے اظہار اور انکار کی ایک شاندارکہانی ہے – کہانی کا آغاز ایک چھوٹی سی بستی ماکوندو سے ہوتا←  مزید پڑھیے

امرتا پریتم جو ابھی تک امر ہے ۔۔عظمٰی عارف / قسط 2

امرتا کے ساتھ اس کی مادری زبان سے تعلق رکھنے والوں نے کچھ اچھا سلوک نہیں کیا ، دنیا والے بھی سوجھ بوجھ رکھنے والی روح کو بد راہ کہہ کر جینے نہیں دیتے اور اگر سچ مچ وہ دیوانہ←  مزید پڑھیے

امرتا پریتم جو ابھی تک امر ہے۔۔عظمٰی عارف/قسط1

ایسا لگتا ہے تاریخ نے اپنےا وارق پلٹے ہوں ، گھڑی کی سوئیاں  تھم  گئی ہوں ، ماضی کے دریچے پرت در پرت کھل رہے ہوں۔ وقت، امرتا کے لازوال استعارے کی طرح حیران و پریشان کہیں میرے کمرے میں←  مزید پڑھیے