لاپتہ، - ٹیگ

اداس کیمپوں کی باتیں کون لکھے گا؟ ۔ محمد خان داؤد

روسی دانشور فیدر ٹیو ٹیچیف کے الفاظ پر ٹالسٹائی کی آنکھیں بھیگ جایا کرتی تھیں اور وہ الفاظ تھے کہ ‏،،LET ME PARTAKE OF ANNIHILATION ‏LET ME BE DIFFUSED IN ‏THE SLUMBERING UNIVERSE ‏NOTHING LEAVES ANY TRACE ‏AND IT IS←  مزید پڑھیے

کوئٹہ جلسہ: عوام کی امنگوں کا ترجمان۔۔گوتم حیات

ان تصویروں میں جبری طور پر اٹھائے گئے افراد کی دکھی ماؤں اور نوعمر لڑکیوں کو انہوں نے اپنے سینے سے لگایا ہوا تھا۔۔۔ وہ جبری طور پر گمشدہ افراد کے لواحقین کے غم میں مبتلا اپنے ان ہموطنوں کے←  مزید پڑھیے