عرب، - ٹیگ

مصر ، رمضان تہذیبی مظاہر کا مرکز۔۔منصور ندیم

مصر میں رمضان کے آغاز کے ساتھ ہی سڑکوں پر رمضان کی خصوصی تزئین و آرائش نظر آنے لگتی ہے۔ اس دوران میں گھروں اور عمارتوں میں خصوصی روایتی "فانوس" اپنی جگہ لے لیتے ہیں۔ فانوس کا رمضان میں استعمال آج پورے عرب معاشرے کی پہچان ہے←  مزید پڑھیے

اہل حجاز میں رمضان کا چاند دیکھنے کا تاریخی جائزہ

ہم اہل حجاز کو تاریخی منظر سے ہی عموماً دیکھتے ییں، اور ہمیشہ مذہبی واقعات میں ہم ترقی سے پہلے کے قصوں سے مخصوص تخیل بنالیتے ہیں، آج کا حجاز یعنی سعودی عرب جی ٹوینٹی ممالک کی قیادت کررہا ہے،←  مزید پڑھیے

مکہ مکرمہ کا روایتی رمضان۔۔منصور ندیم

قریب دہائی پہلے مکہ میں رہنے والے رمضان کی آمد پر عربوں کی ایک قدیم روایت افطار کے وقت توپ کے گولہ داغنے کی آواز سنتے تھے، یہ روایت مکہ مکرمہ میں آٹھ برس سے متروک ہوچکی ہے، ورنہ اہل←  مزید پڑھیے

نزار قبانی (عرب مشاہیر)۔۔منصور ندیم

نزار قبانی نے بطور شاعر ہمارے اردو تراجم میں خوب جگہ بنائی، نزار بن توفیق القبانی (سنہ ہجری پیدائش ۱۳۴۲ - سنہ ہجری انتقال ۱۴۱۹ / سنہء پیدائش 1923 - سنہء انتقال 1998) بطور شامی سفارت کار Syrian Diplomat اور بطور عوامی شہرت بطور شاعر مقبولیت پائی تھی←  مزید پڑھیے

عرب تہذیب کے سحر انگیز فن پارے۔۔منصور ندیم

یہ عرب کے قدیم بازاروں، گلیوں کی تصاویر ہیں، ان تصاویر میں عرب تہذیب کی عکاسی ایسی ہے جو واقعی دلوں کو کھینچنے کی صلاحیت رکھتی ہے، اتنی خوبصورت تصاویر اس تہذیب کے کسی فرد نے نہیں بلکہ ملک چلی←  مزید پڑھیے

عرب اندلس میں۔۔فہیرہ رحمان

عرب ایک ایسی قوم ہےجودیگراقوام سےازروئےگویائی ،فصاحت اوربلاغت بیان مشہورچلی آتی ہے۔یہی وجہ ہےکہ انہیں یہ نام دیاگیا,کیونکہ عرب کےلفظی معنی “اظہاروبیان”کےہیں۔چنانچہ جب کوئی شخص اپنےمافی الضمیرکااظہارکرتاہےتوکہاجاتا  ہے أعرب الرجل عمافي ضميره(فلان نےاپنےمافی الضمیرکااظہارکیا)۔دراصل عرب ایک ایسی قوم کانام ہےجس←  مزید پڑھیے

عرب میں اونٹوں سے گاڑی تک کا سفر ۔۔منصور ندیم

سعودی عرب دنیا میں ان چند ممالک میں آتا ہے جہاں دنیا کی جدید ترین اور مہنگی ترین گاڑیاں اور ملک کی مجموعی آبادی سے زیادہ گاڑیاں موجود ہیں، سعودی عرب میں تیل سے چلنے والی جدید گاڑیوں سے پہلے←  مزید پڑھیے

عرب اسرائیل تعلقات کی خفیہ اور طویل داستان ۔۔جوزف مسعد

پچھلے کچھ عرصے کے دوران اسرائیلی حکام بشمول خلیجی ریاستوں، مراکش اور سوڈان کے دیگر عرب ممالک کے ساتھ قریبی تعلقات کی استواری کے لیے کوششیں کرتے نظر آئے ہیں۔ یہ وہ ریاستیں ہیں کہ انہیں بھی اب یہ محسوس←  مزید پڑھیے

پیراڈائم شفٹ میں ہم کہاں کھڑے ہیں؟۔۔اسلم اعوان

مسلم دنیا بالخصوص عربوں کو تقدیر کی گردشوں نے ایسے دو راہے پہ لا کھڑا کیا،جہاں ایک طرف فلسطینی مسلمانوں کی مظلومیت ان کے تعاقب میں ہے وہاں دوسری جانب اُن استبدادی حکومتوں کی بقاءکے تقاضوں نے انہیں آ گھیرا،جنہیں←  مزید پڑھیے

متحدہ عرب امارات اسرائیل معاہدہ اور یو اے ای کے پاکستان سے تعلقات کا جائزہ۔۔ بلال شوکت آزاد

جن کا خیال ہے کہ کورونا وباء ہی 2020ء کی اہم ترین اور عظیم خبر ہے انہیں خبر ہو کہ اس سال اسرائیل عرب امارات معاہدہ دراصل کورونا وباء سے بھی اہم ترین اور عظیم خبر ہے اور اس سے←  مزید پڑھیے

سعودی عرب، العلاء میں مدائن صالح و الحجرا کی تاریخ(پہلا حصّہ)۔۔منصور ندیم

مدینہ منورہ ضلع میں “العلاء ایک ایسا ریت کا صحرا جو پتھروں سے بھرا ہوا ہے، اور اپنے سیاہ آسمان کی وجہ سے مشہور ہے کیونکہ اس کی فضائی آلودگی سے پاک تاریکی ستارہ شناس ماہرین کے لیے بہت پُرکشش←  مزید پڑھیے

مکہ کی روایتی سنہری صراحیوں کی تاریخ۔۔منصور ندیم

سعودی عرب میں رہنے والے یا جو لوگ یا کسی نہ کسی واسطے مقیم یا کبھی سفر پر آئے ہوں ،انہوں نے یہاں بڑے پنج ستارہ ہوٹلوں یا کسی مخصوص روایتی میلوں میں سنہری رنگ کی منقش قد آدم اور←  مزید پڑھیے

سعودی عرب میں متروک ہوتی قدیم زبانیں۔۔منصور ندیم

اہلِ  عرب سے ہٹ کر اکثر اہلِ  عجم میں یہ سمجھا جاتا ہے کہ پورے عرب میں صرف ایک ہی عربی زبان بولی جاتی ہے، لیکن ایسا حقیقتاً ہے نہیں، اس وقت سعودی عرب کی قومی زبان عربی ہے۔ اور←  مزید پڑھیے

عبدالالہ الفارس ،عرب تاریخی مقامات سے شہرت پانے والا فوٹوگرافر۔۔منصور ندیم

سعودی عرب سے تعلق رکھنے والے نوجوان فوٹو گرافر عبد الالہ الفارس نے  آج سے قریب دس سال پہلے خواب دیکھا تھا اور اس خواب کو عملی تعبیر دینے کے لیے اپنے شوق فوٹوگرافی کو ہی چنا، عبدالالہ الفارس نے←  مزید پڑھیے

سعودی عرب میں پھنسے لاوارث پاکستانیوں کا غم۔۔ابو محمدمکّی

دنیا بھر کی طرح سعودی عرب میں بھی کرونا وائرس کی وجہ سے نظامِ  زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے۔ اس وقت سعودی عرب میں سرکاری میڈیا پر جاری اعداد و شمار کے مطابق کرونا وائرس کے شکار مریضوں کی←  مزید پڑھیے

عربوں سے زیادہ عرب اور انگریزوں سے زیادہ انگریز۔۔فرحان جمالویؔ

“میرا جسم میری مرضی” بظاہر ایک نعرہ ہے ۔سوال یہ ہے کہ کیا نعرے اور استعارے سوچ کے دھارے موڑ سکتے ہیں؟ یہ حقیقت ہے کہ معاشرے استعاروں سے بنتے بگڑتے ہیں۔بنجامین فرانکلین نے”ٹائم اِز منی”(وقت ایک دولت ہے) کا←  مزید پڑھیے