شیر علی انجم - ٹیگ

چین, ہندوستان اور گلگت بلتستان کا مستقبل۔۔۔شیر علی انجم

محترم قارئین5 اگست 2019 کو ہندوستان کے فاشسٹ وزیر اعظم مودی کی جانب سے جموں کشمیر لداخ کی خصوصی حیثیت کے حوالے سے ہندوستانی آرٹیکل 370 اور 35A کی خاتمے کے بعد کہا تو یہ جارہا تھا کہ مودی کے←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کا غیرمحفوظ مستقبل ۔۔ کچھ عملی اقدام وقت کا تقاضا ہے۔/شیر علی انجم

محترم قارئین سوشل میڈیا پر گلگت بلتستان کے ایک معروف صحافی کا 2014 میں بریک  کی ہوئی خبر وائرل ہورہی ہے جس میں اُنہوں نے تجزیہ پیش کیا تھا کہ مودی کسی بھی صورت  جموں کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم←  مزید پڑھیے

مودی، کشمیر اور گلگت بلتستان کا مقدمہ۔۔

مورخہ پانچ اگست 2019 کو ہندوستان کے فاشسٹ حکمران نریندرمودی کی جانب سے ریاست جموں کشمیر لداخ کی خصوصی حیثیت ختم کرنے اور اسٹیٹ سبجیکٹ رول کے خاتمےاور اس کام کو انجام دینے کیلئے دو ہفتے  پہلےسے جموں کشمیر لداخ←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کے عوام کی قومی پہچان کا نوحہ ۔۔۔شیر علی انجم

مسئلہ کشمیر سے منسلک ریاست جموں کشمیر کی سب سے بڑی اکائی گلگت بلتستان میں جہاں فکری، معاشی،اقتصادی،تعلیمی اور انفراسٹرکچر کی بدحالی اور خالصہ کے نام پر عوامی املاک پر سرکاری قبضہ ایک سنگین مسئلہ ہے وہیں قومی شناخت کا←  مزید پڑھیے

مسئلہ کشمیر کے تناظر میں تقسیم گلگت بلتستان ناممکن ہے۔۔۔شیر علی انجم

گزشتہ روز گلگت میں کچھ گمنام لوگ اچانک منظر عام پر آگئے جن کا نام گلگت بلتستان کے سیاسی میدان میں کبھی کسی نے سُنا ہی نہیں ہوگا۔ اُنہوں نے گلگت میں دھواں دھار پریس کانفرنس کرکے بڑا مطالبہ پیش←  مزید پڑھیے

آزاد کشمیر اسمبلی سے حقوق گلگت بلتستان کیلئے متفقہ قراداد۔۔۔۔شیر علی انجم

محترم قارئین گلگت بلتستان کا ریاست جموں کشمیر سے دو سوسالہ سیاسی اور قانونی رشتے کی داستان اندوہناک بھی ہے اور عجیب غریب بھی۔ 1840 سے 1947 تک کی تاریخ میں کہیں نظر نہیں آتا کہ گلگت بلتستان اور لداخ←  مزید پڑھیے

خونی لیکروں کے درمیان منقسم گلگت بلتستان کے خونی رشتوں کا نوحہ ۔۔شیر علی انجم

محترم قارئین جنگ کسی بھی معاشرے کیلئے نہ صرف بربادی کا سامان فراہم کرتی ہے بلکہ جنگ  زدہ علاقے معاشی طور پر بھی ترقی اور تعمیر کے عمل میں پیچھے رہ جاتے  ہیں ۔۔ جنگوں کی وجہ سے تقسیم ہونے←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کی اکہترسالہ محرومیاں اور سپریم کورٹ سے توقعات۔۔۔شیر علی انجم

پاکستان کے زیر انتظام مسئلہ کشمیر سے منسلک ریاست جموں کشمیر کی سب  بڑی اور وسیع اکائی سرزمین گلگت بلتستان کی تاریخ پر بہت کچھ لکھا چُکا ہے۔ آج ہماری  بحث یہ نہیں ہے کہ یہ خطہ ماضی بعید میں←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کا مقدمہ اور دفتر خارجہ۔۔۔شیر علی انجم

یہ پہلی بار نہیں ہے کہ دفتر خارجہ نے گلگت بلتستان کی آئینی اور قانونی حیثیت اور یہاں لگائے جانے والے غیر مدلل نعروں اور مطالبات کا قانونی جواب نہیں دیا ہو لیکن بدقسمتی سے گلگت بلتستان میں ایک طبقہ←  مزید پڑھیے

وزیر اعظم پاکستان کے نام سرزمین بے آئین سے پہلا خط۔۔۔ زیربحث علی انجم

جنا ب عمران خان صاحب آپ کو پاکستان کا بائیسواں وزیر اعظم بننا مبارک ہو۔ آپ کو یہ بھی مبارک ہو کہ آپکی زندگی جہدوجہد مسلسل اور کامیابیوں کی ایک طویل داستان کا نام ہے۔آپ کو مبارک ہو کہ آپ←  مزید پڑھیے

نجی ٹیلی ویژن پر گلگت بلتستان کے خلاف خوفناک ہرزہ سرائی۔۔۔شیر علی انجم

محترم قارئین مملکت پاکستان میں جنرل مشرف کے دور سے جس تیزی کے ساتھ الیکٹرانک میڈیا نے ترقی کی اور اُس ترقی کے نتیجے میں تجزیات ،صحافت کے نام     پر بے تکے لوگوں کو مدر پدر آزادی ملی←  مزید پڑھیے

زخمی دیامر(گلگت بلتستان) اور ہماری اجتماعی ذمہ داریاں۔۔۔۔شیر علی انجم

سرسبز پہاڑی سلسلوں اور قیمتی لکڑیوں کے جنگلات سے مالا مال اور گلگت بلتستان میں چلغوزوں کا واحد مرکز 10936 مربع کلومیٹر کے لگ بگ رقبہ اور دو لاکھ تیس ہزار کی آبادی پر مشتمل ضلع دیامر گلگت بلتستان کا←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان میں اخبارات کی منڈی اورخطے کا قومی بیانیہ۔۔۔۔شیر علی انجم

آج کے اس دور میں اگر میڈیا کی بات کریں تو کہا یہ جاتا ہے کہ کسی بھی ملک یا خطے کی  معیشت کی بہتری اورقومی صلاحیتوں کو بروئے کار لانے کیلئے سیاسی استحکام کے ساتھ ساتھ میڈیا کا آزاد←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان میں فورتھ شیڈول کا غیرمنصفانہ استعمال اور عوامی خدشات۔۔۔شیر علی انجم

محترم قارئین جیسا کہ آپ سب اس بات سے بخوبی آ گاہ ہیں کہ مملکت پاکستان میں گزشتہ کئی دہائیوں سے جاری دہشت گردی کے واقعات کی روک تھام کیلئے خصوصی طور پر قوانین بنایا گیا  جس میں نیشنل ایکشن←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان آرڈر 2018کے خلاف عوامی احتجاج اور حکومتی ہٹ دھرمی۔۔۔شیر علی انجم

اٹھائیس ہزار مربع میل پر مشتمل مسئلہ کشمیر سے منسلک خطہ گلگت بلتستان صدیوں پر محیط ایک تاریخی خطہ ہے۔ تاریخ کے دریچوں کو کھولیں تو معلوم ہوتا ہے کہ پانچویں صدی عیسوی سے یہاں دردستان، بلورستان اور بروشال کی←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کا کشمیرسےتعلق اور آج کے مسائل۔۔۔شیر علی انجم

قوموں کی تاریخ کا مطالعہ کریں تو معلوم ہوتا ہے کہ کسی ملک یا علاقے پر کسی دوسری قوم کا اقتدار مستقل قائم نہیں رہتا۔ حکومت اور اقتدار ہمیشہ مختلف رنگ، نسل، مسلک اور مذہب کے ماننے والے افراد، خاندانوں،←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان میں لینڈریفارمز کا شوشا اور سٹیٹ سبجیکٹ رول کی خلاف ورزیاں۔۔۔شیر علی انجم

حکومت گلگت بلتستان کی جانب سے خالصہ سرکار اور ناتوڑ قانون کے نام پر عوامی املاک کو سرکاری زمین قرار دیکر مختلف سرکاری اداروں کے نام پر انتقال کرنے کا سلسلہ گزشتہ دہائیوں سے جاری ہیں۔ ماضی میں کئی ہزار←  مزید پڑھیے

منظور پشتین ، حقوق گلگت بلتستان اور ملکی میڈیا۔۔شیر علی انجم

وزیرستان تحصیل سروکئی کے نواحی گاؤں کے سرکاری سکول ٹیچر کے گھر میں پیدا ہونے والا منظور احمد جو منظور پشتین کے نام سے اس وقت ملکی اور غیر ملکی ذرائع ابلاغ اورالیکٹرانک چینل پر چھایا ہوا ہے۔ اُنہوں نے←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان کے تناظر میں سٹیٹ سبجیکٹ رول اور معاہدہ کراچی کا معاملہ۔۔شیر علی انجم

قوموں کی زندگی میں عروج و زوال کے حوالے سے مطالعہ کریں تو معلوم ہوتا ہے کہ یہ مسئلہ دنیا کی تاریخ میں ایک پیچیدہ، پراسراراور غم و اندوہ سے بھرپور عمل ہے۔ یہ ایک ایسا المیہ ہے کہ جو←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان میں ٹیکس مخالف تحریک۔۔ کیا کھویا اور کیا پایا؟

لنین ایک  سوشلسٹ رہنما تھے آج بھی دنیا میں اُن کا نام  انقلابی  رہنماؤں  میں  سرفہرست لیا جاتا ہے۔ اُن کے نظریے  کے چند نکات جو آج بھی کمزور اور منتشر معاشروں کیلئے مشعل راہ  ہیں ۔ انقلاب روس کے←  مزید پڑھیے