مشق سخن    ( صفحہ نمبر 4 )

تکون کی چوتھی جہت(گرد کا طوفان)۔۔۔تبصرہ:محسن علی

سال کی پہلی کتاب اقبال خورشید کی پڑھی ،جس میں دو ناولٹ ہیں ۔ اس میں لکھاری نے ہمیں بچپن میں پڑھی کسی کہانی کی طرز پر ۔ ۔ جس میں ہر فرد اپنی کہانی سُنا رہا ہوتا ہے ،وہ←  مزید پڑھیے

کشمیر رہے گا پاکستان کا۔۔ندا خان

مودی سرکار اور اس کے حواری اس خوش فہمی میں ہیں، کہ کشمیر میں دنیا کا  بدترین کرفیو نافذ کرکے اور کشمیریوں کا دنیا سے رابطہ منقطع کرکے وہ کشمیر کو بھارت کا حصہ بنا لے گا،جو کہ ناممکن ہے←  مزید پڑھیے

 بے وفا کے نام۔۔سلمان امین

  میری طرف سے آپ کو سلام اور امید ہے کہ تم جواب میں والسلام نہیں کہوں گی کیوں کہ سلام کا مطلب سلامتی کی دعا کرنا  ہے،اور اگر تم یہ دعا کرو گی تو مجھے لگے گا کہ جیسے←  مزید پڑھیے

یہ ہو کیا رہا ہے؟۔۔ہُما جمال

اداروں کا نقشہ بگڑ سا گیا ہے ملک و ملت کا بیڑہ غرق ہورہا ہے، محافظ نے ہے تھاماسیاست کا ڈنڈا جہاں منصفوں کا زِیر و زَبر ہورہا ہے یہ ہو کیا رہا ہے؟ نمائندہ عوامی و سیاسی مقبول ہوکر←  مزید پڑھیے

ناراضی قبول مگر اب کسی کے کام نہیں آنا۔۔اے وسیم خٹک

اگر دوستی کسی غرض کے لیے نہیں تو میری جانب سے بھی دوستی پکی سمجھو، اگر اس میں کہیں بھی غرض کا عنصر شا مل ہے تو خدارا   مجھ سے دور  ہو جائیے، کیونکہ میر ے پاس غرض کی←  مزید پڑھیے

سایہ دار درخت کیوں گِر جاتے ہیں؟۔۔محمد شفیق

سایہ دار درحت کيوں گر جاتے ہيں باپ ایسے کیوں مر جاتے ہیں محبتوں کے ،پیار کے قافلے کیوں بچھڑ جاتے ہیں جب باپ مرجاتے ہیں آسماں کیوں گر جاتے ہیں زندگی میں ایسے موڑ کیوں آتے ہیں جب کوئی←  مزید پڑھیے

موٹیویشنل سپیکرزکا ادھورا پیغام اور ڈاکٹر ہیڈی گرانٹ۔۔انجینئر ڈاکٹر محمد اعجازاحمد

ڈاکٹر ہیڈی گرانٹ کولمبیا یونیورسٹی امریکہ کے شعبہ موٹیویشن سائنس کی ایسوسی ایٹ ڈائریکٹر ہیں اور موٹیویشن کی نفسیات پر تحقیق کی وجہ سے دنیا بھر میں کافی مشہورہیں۔ آپ 2017 میں یورپ کی “تھنکر ز 50 ” تنظیم کی←  مزید پڑھیے

کشمیر ہماری جان ہے۔۔نہال زاہد سخی

کبھی تو کسی کو دنیا میں اس کے حق سے نوازا جارہا ہوتا ہے تو  کبھی کسی کے ناجائز مطالبوں کو مانا جاتا ہے ۔ کبھی دنیا کے نام نہاد دہشت گرد اور درندہ صفت آدم خوروں کو عالمی عدالت←  مزید پڑھیے

کہ تجھے ہر شوقِ جنوں سے آواز آئے۔۔خالد حسین مرزا

ادبی ذوق، تماشہء حُسن ہائے ساقی کیا کہنے وہ دیکھو شوقِ مستی میں کیسے مجنوں بنے ہے حُسن جوان رہتا ہے، زندگی بوڑھی ہو جاتی ہے، حسن دلکش ہوتا ہے ہر کسی کی آنکھ کو بھاتا ہے اور سب سے←  مزید پڑھیے

اُمید۔۔۔شاہد محمود ایڈووکیٹ

ایک عمر گزر گئی خواب لگتا ہے  اب کہ  برف سے ڈھکے پہاڑوں کی  چھت پیر چناسی کہ جہاں گھروں کی چھتوں اور پہاڑوں میں فرق صرف چمنیوں کے دھوئیں سے ہوتا تھا جہاں سڑک کے ایک طرف نہیں بلکہ←  مزید پڑھیے

سُنونا بابا۔۔۔۔سلمیٰ سیّد

سنو نا بابا کہا بھی تھا کہ مجھے اندھیرے ڈرا رہے ہیں ابھی نہ جانا ابھی تو میں نے تمھارے پہلو میں سانس لی ہے مجھے زمانے کے سرد و گرم کا پتا نہیں ہے کہا بھی تھاکہ مجھے سکھانا←  مزید پڑھیے

عبادت اور نیکی۔۔سلمان امین

ہمارے گاؤں کے ایک بزرگ ہیں اُن کا گھر جس گلی میں ہے وہی گلی مسجد کی طرف جاتی ہے۔ عشاء کے وقت اندهیرا ہوتا ہے جس کی وجہ سے نمازی حضرات کو گزرنے میں مشکل درپیش ہوتی ہے ۔←  مزید پڑھیے

مرد طاقتور یا کمزور؟۔۔ذیشان چانڈیہ/اختصاریہ

بچپن سے لے کر آج تک ایک ہی بات سُنتے آرہے ہیں کہ  مرد بہت طاقتور ہوتا ہے، جب کہ عورت کمزور ہوتی ہے ۔  بظاہر لگتا بھی ایسا ہی ہے،  لیکن یہ  تو اس سچ کا ایک پہلو ہے،دوسرا←  مزید پڑھیے

میرے پردیسی بچو۔۔حبیب شیخ

میرے بچو! میرے پیارے بچو! تم میرے دشمن کیوں بن گئے ہو؟ میں اب بھی تم سے اسی طرح پیار کرتی ہوں اس دن کی طرح جب تم اس دنیا میں آئے تھے۔ تم غیر موجود سے موجود ہو گئے۔←  مزید پڑھیے

کشمیر(سرینگر میں گزاری ایک شام)۔۔یوسف

رورو کے وادی دے رہی جلتی ہوئی ہم کو صدا ہم خوش نفس تکتے رہیں اس آگ کے حسن و ادا شیشے کو پتھّر جو لگا وہ ریزہ ریزہ ہو گیا ساری  خماری چھو ہوئی ، شب ہےخون  تم کو سدا←  مزید پڑھیے

میں یہاں کیسے پہنچا ۔۔عبدالرؤف

ہمارے اک دوست ہیں وہ   بھاشن   بہت اچھا دے لیتے ہیں ،ان کے ساتھ کام کرنے والے ان کے بھاشن سے بہت نالاں ہیں ۔جب مالک ہر  روز   ایک ہی  راگ اپنے ماتحتوں  کے سامنے الاپتا رہے←  مزید پڑھیے

محنت کشوں کا استحصال اور سیاسی اقدار۔۔اعجاز احمد بلوچ

سیاست تدبیرِ سماج كا نام ہے۔ سماج کی تدبیر امن ومحبت کے ماحول میں ہی ممکن ہے،سو، سیاست دان کا کام نفرت کے ماحول کا خاتمہ ہونا چاہیے۔لیکن اس سرمایہ دارانہ سیاست میں سیاست دان کا مقصد صرف اور صرف←  مزید پڑھیے

سورج کی غربت۔۔ہما جمال

ایک اور سال بیت گیاانسان صدیوں پرانا ہوچکا لیکن اسکی رِیت نہ بدلی۔۔2019 اختتام پذیر ہوا، لیکن شروع ہونے سے ختم ہونے تک اس سال کے سورج نے دنیا پر ہزاروں تماشے دیکھے،کہیں زندگی کو بیزار دیکھا، کہیں زندگی کو←  مزید پڑھیے

پاکستانی قوم اور انٹرنیٹ۔۔نازیہ علی

پاکستانی نوجوان نسل اور پاکستانی قوم تیزی سے انٹرنیٹ کے منفی استعمال سے تباہی کا شکار ہوتی دکھائی دے رہی ہے جو کہ کسی المیے سے کم نہیں اپنی  دینی تعلیمات اور خاندانی روایات کو بھلا کر جب انسان اپنے←  مزید پڑھیے

ادب انسانوں کی کہانی۔۔سلمان امین

میں جب دسویں جماعت میں تھا تو میں نے انگلش کی ایک کہانی (A World without books ) جس میں ایک جملہ تھا ” ادب انسانوں کی کہانی ہے” (Literature is the story of  human )۔ میں نے جب یہ←  مزید پڑھیے