مشق سخن    ( صفحہ نمبر 3 )

چھوڑ آئے ہم وہ گلیاں ۔۔۔ شاہ عالم

پھر پتہ نہیں کب ہم بڑے ہوگئے اور ان سب چیزوں سے دور ہوگئے۔ شاید جس دن ہم نے اسکول چھوڑا اسی دن بچپن ختم ہوگیا۔ شاید جس دن خود محنت کرکے پیسے کمائے اسی دن لڑکپن ختم ہوگیا۔ بہتیرے دوست تھے جو بعد میں بھی پٹی کھیلتے رہے مگر ہم پٹی سے کیا، ان دوستوں سے بھی دور ہوگئے۔ اب حیرت ہوتی ہے کہ ہم کتنے بے فکرے ہوتے تھے۔←  مزید پڑھیے

کیفیت ساری انتظاری ہے۔۔۔۔۔۔اسما مغل

مجھے نہیں معلوم کہ تمہیں انتظار کی کیفیت میں دل پر گزرنے والی واردات کا کچھ ادراک ہے یا نہیں۔۔۔لیکن یہ ضرور جانتی ہوں کہ میں اس کیفیت کی سختی سے دن رات میں بیسیوں بار نبردآزما ہوتی ہوں۔۔ صبح←  مزید پڑھیے

ایک بھکاری سے مکالمہ۔۔۔سیٹھ وسیم طارق

باو جی ! دس روپے  ۔۔۔ چائے پینی ہے۔ ایک بھکاری نے آتے  ہی آواز لگائی۔ میں ریلوے اسٹیشن کی ٹوٹی ہوئی  کرسی پہ بیٹھا اپنی ہی سوچوں اور خیالوں میں مگن تھا  ۔دس روپے پاس نہیں تھے تو اس←  مزید پڑھیے

کشمیر خون کی وادی ۔۔۔ راجہ فرقان احمد

بھارت کی تاریخ گواہ ہوگی کہ اگست کے مہینے میں کچھ شرپسندوں نے بھارت کو نہرو اور گاندھی کی تعلیمات سے دور کرنے کی کوشش کی. وہ بھارت جو سیکولرازم کوفوقیت دیتا تھا, جو مذہب اور سیاست کو اپنے آئین←  مزید پڑھیے

قربانی۔۔۔ڈاکٹر شاکرہ نندنی

ساجد کے دل میں کب سے تھا کہ وہ بھی ایک بار قربانی کرے۔ مگر اس کی مالی حالت اس بات کی اجازت نہ دیتی تھی۔ بڑے دنوں بعد،آج اس کی یہ حالات ہوئے  تھے  کہ وہ قربانی کر سکے۔←  مزید پڑھیے

آرمی چیف ،ایکسٹینشن ، حکومت اور عوام۔۔۔قیس

15 اگست 1947سے لیکر 20اگست2019تک سولہ جنرل پاکستان ٓارمی کے سپہ سالار رہ چکے ہیں۔ جمہوری ادوار میں یہ دوسرا موقع  ہے کہ کسی چیف آف آرمی اسٹاف کو ایکسٹینشن دی گئی ہے۔ اس  سے پہلے صدر آصف علی زرداری صاحب←  مزید پڑھیے

سائیڈ افیکٹ ۔۔۔ مدیحہ الیاس

بڑھاپے کے نو مولود آثار کی نمائندہ چند جھریاں بابا جی کے بے رونق چہرے کی رونق بڑھانے میں کافی معاون ثابت ہو رہی تھی۔ باغ جناح کے دل افروز مناظر بابا جی کے لبوں پہ گاہ بگاہے مسکان بکھیرنے میں سرخرو کامل تھے۔ یوں لگتا تھا جیسے آج اولڈ ہاؤس سے فرار حاصل کرکے دنیا جہاں کی خوشیاں اپنے ساتھ بنچ پہ بٹھائے تنہائی کو مات دے رہے ہوں۔ ←  مزید پڑھیے

عافیہ کو واپس لاؤ۔۔۔عبداللہ ماحی

مسلمانوں کا ایک دور وہ تھا جب  ان کے حکمران غیرت مند تھے۔ اپنی عزت ان کو ہر شئے  سے عزیز تھی۔ عورت کو بھی اپنی عزت سمجھا جاتا تھا۔ اگر کوئی کسی قوم کی عورت کے ساتھ بُرا سلوک←  مزید پڑھیے

کشمیر اور قومی اتفاق رائے۔۔۔مدثر محمود

کشمیر میں بھارتی فوج کی بربریت اور ظلم کی وجہ سے ہندوستان کا یوم آزادی اس بار نہیں مناؤں گا”۔۔۔ سلمان رشدی جیسے ملعون اور شیطان کی زبان سے نکلے یہ الفاظ اس بات کے غماز ہیں کہ  بھارتی مظالم←  مزید پڑھیے

لو جی دانشور بن گیا میں بھی۔۔۔۔منیب پاکستانی

تو بات کچھ ایسے ہے کہ کشمیر کا ایشو   آج کل بڑے شوق سے ،درد سے اور خوف۔۔الغرض نفرت سے بھی موضوع بنا ہوا ہے ۔ مختلف قسم کے دانشور مختلف قسم کے قاری ،مختلف آراء پیش کر رہے ہیں←  مزید پڑھیے

کیا ہمیں کچھ جاننے کا حق ہے؟۔۔۔رضوان یوسف

سن 65 کی جنگ کے فوراً  بعد جب تاشقند میں پاکستان کے صدر فیلڈ مارشل ایوب خان اور انڈیا کے پردھان منتری لال بہادر شاستری کی ملاقات کروائی گئی اور ایک طرح کا صلح نامہ تاشقند معاہدہ تحریر کیا گیا←  مزید پڑھیے

پاکستانی عوام کے جمہوری تصورات۔۔محسن علی

میں سمجھتا ہوں پاکستان میں شخصیت پرستی خاص کر سیاسی شخصیت پرستی کو وہ ملکہ حاصل رہا ہے جو کسی اور کو نہیں یا مُلائیت کو اس کی بنیادی وجہ مذہب اور شاید ہمارا گلیمرائز  کرتا ہُوا ماضی ہے جہاں←  مزید پڑھیے

سو لفظوں کی کہانی/غیبت۔۔۔اسرار احمد

غیبت تو جیسے معاشرے میں سرایت کر گئی ہے۔ اب علی کو ہی دیکھ لو جہاں بیٹھے گا دوسروں کی برائیاں شروع،فلاں یہ کرتا ہے فلاں وہ۔۔۔ کوئی اس سے پوچھے تم کیا کرتے ہو ۔۔۔ کیا بتاؤں بھائی صاحب←  مزید پڑھیے

کشمیر ایشو،حل اورسٹانس۔۔۔۔ماسٹر محمد فہیم امتیاز

کشمیر ہمارے ہاتھ سے نکل سکتا ہے اگر یہاں پر ذرا سی بھی ڈھیل اور غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کیا گیا تو۔ پہلا قدم یہ اٹھایا  گیا ہے، کہ  آرٹیکل 370 کا خاتمہ بھارتی پلان کا پہلا آدھا حصہ←  مزید پڑھیے

سرکاری اعلان ہوا ہے، سچ بولو۔۔۔۔ جاوید بلوچ

ہر معاملے میں دو ممکنات ہوتے ہیں جیسے کہ سہی غلط ،موجود غیر موجود وغیرہ وغیرہ ، بالکل اسی طرح جہاں جہاں سچ نے پڑاو کیا وہاں جھوٹ نے بھی اپنی جڑیں پیوست کرکے بھر پور مقابلہ کرنے کی ہمیشہ←  مزید پڑھیے

مختصر کہانی۔۔۔عبدالحنان ارشد

رجو کی بیٹی نے میٹرک نمایاں نمبروں سے پاس کیا تو گاؤں میں اس کی بیٹی کی قابلیت کی دھاک بیٹھ گئی۔ رجو نے شہر کے بڑے کالجوں سے رابطہ کیا تاکہ بیٹی کو اچھے کالج میں داخل کروا سکے۔←  مزید پڑھیے

رو رو کے وادی دے رہی جلتی ہوئی ہم کو صدا۔۔۔۔ گداؔ  یوسف بن محمد

رو رو کے  وادی دے رہی جلتی ہوئی ہم کو صدا ہم خوش نفس تکتے رہیں اس آگ کے حسن و ادا شیشے کو پتھر جو لگا وہ ریزہ ریزہ ہو گیا ساری خماری چھو ہوئی شب خون ہے تم←  مزید پڑھیے

خوف ۔۔محسن علی

کیا ہے خوف؟ کیوں ہے خوف ؟ اسکی کیا وجوہات ہیں یا کیا ہوسکتی ہیں ؟ خوف کسی بھی بات سے ڈرنے کا نام ہے پھر چاہے وہ مذہبی حوالے سے ہو ، جادو سے ہو ، یا دُنیا کی←  مزید پڑھیے

عمیرہ احمد کے ناول والی ہاوس آفیسر (پہلی قسط) ۔۔ ڈاکٹر مدیحہ الیاس

وہ صبح سویرے فجر کیلئے بیدار ہوئی۔ دور کہیں ہد ہد کی آواز آ رہی تھی۔ چڑیاں اپنے رب کی حمد بیان کر رہی تھیں اور کوے دیر سے اٹھنے پر اپنی جیون ساتھیوں کی سرزنش کر رہے تھے۔ اس←  مزید پڑھیے

سو لفظوں کی کہانی:ہاکی ہمارا قومی کھیل۔۔۔۔عبدالحنان ارشد

آج وزیراعظم ملک کا نام روشن کرنے والوں کے اعزاز میں عشائیہ دے رہے تھے۔ کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی آئے تو میں نے آگے بڑھ کر سلام کیا اور آٹو گراف کے لیے کاپی آگے بڑھا دی۔ کچھ لمحات کے توقف کے بعد←  مزید پڑھیے