اختصاریئے    ( صفحہ نمبر 28 )

ان دیکھی سموگ

وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ لوگ بدل جاتے ہیں، رویے بدل جاتے ہیں یا پھر اقدار اپنا رنگ بدل لیتی ہیں، سمجھ سے بالا تر ہے… کچھ دن پہلے ایک پرائیویٹ کلینک کی انتظار گاہ میں بیٹھے ایسا فیشن میگزین←  مزید پڑھیے

کوئی تو اپنے کیے پر شرمسار ہو

معروف مزاح نگار ڈاکٹر يونس بٹ نے اپني ايک کتاب ميں ماضی کی ايک معروف اداکارہ کے بارے ميں تحرير کيا ہے کہ اس کا قد تو چار فٹ آٹھ انچ ہے مگر انا آٹھ فٹ چار انچ ہے۔ يہ←  مزید پڑھیے

احتجاجی سیاست اور تشدد کا ایندھن

9 اپریل 1977کو وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو کے خلاف احتجاج کے دوران لاہور میں لوہاری گیٹ کی مسلم مسجد کے باہر فائرنگ سے نو سے دس افراد مارے گئے۔جس کے بعد دیگر شہروں میں بھی درجنوں شہریوں نے نظام←  مزید پڑھیے

ٹرک کی بتی

میں لطیفے کو بھی ایک حکایت ہی سمجھتا ہوں جس میں مزاح کا رنگ پایا جاتا ہے۔ ایک بہت پرانا لطیفہ ہے، جو اب ایک محاورے کا درجہ رکھتا ہے کہ کسی زمانے میں دیہاتی لوگ معصوم سمجھے جاتے تھے←  مزید پڑھیے

ریاست مقدم ہے یا انا پرستی

یہ جملہ سن سن کر میرے کانوں کی میل بھی باہر آچکی ہے کہ “جمہوریت سے مراد جمہور کی حکمرانی ہے”۔ صاحبان دانش کہیں جمہور کے معنی خاندانی نوازشات اور بندربانٹ تو نہیں؟ یا پھر جمہور کے معنی شخصی اناؤں←  مزید پڑھیے

رحم کی اپیل

ایک لمحے کے لیے سوچ لیجیے کہ عمران خان وزیراعظم ہے۔ اب یہ سوچیے کہ عمران خان کی نسبت نواز شریف کے لیے اپوزیشن جماعتوں سے مل کی کوئی تحریک چلانا کتنا مشکل یا کتنا آسان ہوگا؟ یہ بھی یاد←  مزید پڑھیے

عدالت عالیہ اور تلاشی

یوم تشکر نہیں، یہ یوم تفکر ہے مجھ جیسے “ان پڑھ” شہری کے لئے یوم تشکر تو تب منایا جاتا جب حالیہ تاریخ میں ہماری عدالتوں نے درج ذیل مقدمات کو منطقی انجام تک جلد از جلد پہنچایا ہوتا ١)←  مزید پڑھیے

دھواں دھواں

دھوئیں اور انسان کا تعلق کہتے ہیں اس وقت سے ہے جب انسان اور جہنم وجود میں آئی ۔ آگ جلانے کے لیے لکڑی کا استعمال ہوتا ہے اور لکڑی دھواں دیتی ہے ۔ زندگی کی گاڑی چلنے کے لیے←  مزید پڑھیے

مکالمہ نمبر 01

٭٭٭٭٭ کاونٹ ڈاون ٭٭٭٭٭ باس : ” صحافی کا کیا ہوا ؟ ” ماتحت : ” سر ای سی ایل سے نام نکال دیا ہے اسکا ” باس : ” ای سی ایل میں نام ڈالا کیوں تھا ” ماتحت←  مزید پڑھیے

رنگ چوکھا آئے

ہم نے جب سے ہوش سنبھالا یہی سنتے آئے ہیں پاکستان خطرہے میں ہے۔ وقت نے کروٹ لی پاکستان کو دہشتگردی سے خطرہ ہونے لگا۔ دہشتگرد ملک میں داخل ہو گئے ہیں پاکستان کو دہشتگردی سے خطرہ ہے۔ جب سے←  مزید پڑھیے

یہ تو وہی جگہ ہے گزرے تھے ہم جہاں سے

پاکستانی قوم کو 69 برس سے جاری اقتدار کے کھیل کی نئی قسط مبارک ہو۔ اگر غور کیا جائے تو یہ شاید دنیا کا طویل ترین سوپ سیریل کہلائے گا۔ جو کچھ اس وقت پنجاب اور خیبر پختون خوا کی←  مزید پڑھیے

کمال فن

ہمارے بزرگوں نے کمال کی حکایات بیان کی ہیں۔ ایک حکایت میں ہے کہ تین صاحب کمال افراد جمع ہوئے اور وہاں ایک اجنبی ان کے گروہ میں شامل ہوا۔ ہر شخص کے پاس ایک کمال تھا، انھوں نے مل←  مزید پڑھیے

راولپنڈی بند

نظریات اور زبان سے لاکھ اختلافات سہی لیکن کوئی شک نہیں کہ فرزند پاکستان(بقلم خود) شیخ رشید احمد ایک مکمل موقع پرست سیاستدان ہیں اگرچہ عوامی مسلم لیگ کے وہ خود ہی سربراہ ہیں اور خود ہی کارکن بھی لیکن←  مزید پڑھیے

چھکا لگانا ہی ہوگا

میچ اور وہ بھی کرکٹ کا جب بھی ہوتا ہے اس میں موسم کا بڑا عمل دخل ہوتا ہے۔ جب بات سیاسی کرکٹ میچ کی ہو تو ایمپائر اور ٹیموں کے ساتھ ساتھ کپتان کے علاوہ کھلاڑیوں کے مزاج پر←  مزید پڑھیے

عوامی حافظہ

راجہ داہر نے اپنی بہن سے شادی کا ارادہ کیا جس کی اجازت اس وقت کا ہندو معاشرہ نہ دیتا تھا۔ راجہ نے اپنے ایک وزیر سے مشورہ لیا۔ وزیر موصوف نے کہا حضور یہ عوام کچھ دن کے اندر←  مزید پڑھیے

شریفوں کی کہانی

وہ میرا تیس سالہ پرانا نوکر تھا، کچھ دن پہلے اسکا باپ مر گیا تو میں نے سوچا کہ باپ کا جنازہ پڑھنے سے رہ نہ جائے، اسکو ترنت گاؤں بھیج دیا۔ دو دن بعد مجھے خیال آیا کہ اتنا←  مزید پڑھیے

اشارے

اشارے دینا ، اشارے کرنا اور اشارے کو سمجھنا یہ ایک فن ہے ۔ کھلاڑی کھیل کے اشارے کو خوب سمجھتا ہے اگر وہ کھیل کے میدان میں ہو ۔ جب وہ کھیل کے میدان سے باہر ہوتا ہے یہی←  مزید پڑھیے

جمہوریت خطرے میں ہے

پاکستان میں شرپسندوں کی ہمیشہ موجودگی رہی ہے۔ پہلے یہ شر پسند پاکستان میں اپنی حرکات سے اسلام کو خطرے میں ڈالتے تھے۔ یہ لوگ کوشش کرتے کہ کسی ٹی وی اینکر کا ڈوپٹہ کھسک جائے, ان کو اندازہ نہیں←  مزید پڑھیے

بلوچستان… ایک تجویز

بلوچستان کی نازک صورتحال کے پیشِ نظر ایک تجویز ہے کہ اگر کوئیٹہ کو سال میں تین ماہ کے لئیے وفاقی دارالحکومت قرار دے دیا جائے اور حکومتی کارپرداز وہیں بیٹھ کر امورِ سلطنت چلائیں اس سے بلوچستان کے احساسِ←  مزید پڑھیے

خان صاحب! ہوگا تب انصاف۔۔۔۔۔۔ جب بڑھیں گے پہلے آپ۔

آپ کو یاد ہوگا کہ جب عمران خان لفٹر سے گرے تھے تو پی ٹی آئی کے کارکن شوکت خانم ہسپتال کے باہر دھاڑیں مار مارکر رورہے تھے اور اس وقت تک بیٹھے رہے جب تک عمران خان کے بارے←  مزید پڑھیے