سید شازل شاہ گیلانی کی تحاریر
سید شازل شاہ گیلانی
سید شازل شاہ گیلانی
پاسبان وطن سے تعلق , وطن سے محبت کا جذبہ اور شہادت کی تڑپ

وفا جن کی وراثت ہو (باب دوئم ,پانچویں ،آخری قسط)۔۔سید شازل شاہ گیلانی

کانوائے کی تمام گاڑیاں بیک کورڈ ہونگی, صرف ایک ڈرائیور ہوگا جو گاڑی چلا رہا ہو ،اس کے علاوہ گاڑی میں کوئی  آدمی نہ ہو۔ ہر دو گاڑیوں کے درمیاں کم از کم دو میٹر کا فاصلہ ہونا چاہیے۔ اگر←  مزید پڑھیے

گدھا گاڑی کی ڈرائیونگ۔۔سید شازل شاہ گیلانی

وہ لوگ ذرا نیڑے نیڑے آ جائیں جنہوں نے بچپن میں کھوتا ریڑھی کی ڈرائیونگ کی ہوئی ہے، میں نے تو خیر بھری جوانی میں بھی یہ مزے لوٹنے سے گریز یا پرہیز نہیں برتا لیکن یہ فن محض تسکین←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو (باب دوئم ,قسط 4)۔۔سید شازل شاہ گیلانی

اگلے دن تمام ٹیم ممبرز کانفرنس روم میں اکٹھے تھے اور سی او سر انہیں ان کے مشن کے حوالے سے بریف کر رہے تھے ۔ بِسمِ اللّہ الرَحمٰنِ الرَحِیم! جوانو! جیسا کہ تم  سب جانتے ہو ہم لوگ ہر←  مزید پڑھیے

شہزادہ سلیم اور فلپائنی دوشیزہ۔۔سید شازل شاہ گیلانی

شہزادہ دس دن تک مسلسل انار کلی کا سوگ مناتا رہا۔ اسی سوگ میں اس نے عطاءاللہ عیسیٰ  خیلوی کی ساری کیسٹیں سن ڈالیں۔ شہزادےکا لٹکا ہوا منہ دیکھ کر ملکہِ عالیہ سے برداشت نہ ہوا اور انہوں نے اٹھ←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو (باب دوئم قسط 3)۔۔سید شازل شاہ گیلانی

امی نے نماز فجر ادا کرنے کے  بعد ابھی تلاوت قرآن شروع کی تھی ، “ان کا فون بج اٹھا ” “یا اللہ خیر ، اتنی صبح صبح کس کی کال آگئی” وہ پریشان ہو کر لپکیں ۔ “احمد کا←  مزید پڑھیے

چوہدری اور یوگا۔۔سید شازل شاہ گیلانی

شیقے ۔۔وے شیقے ،وے جلدی آ ۔۔۔۔ بڑی چوہدرانی بھاگتی ہوئی  باغیچے  میں آئیں ۔ وے شیقیا چوہدری صاحب کو کچھ ہو گیا ہے ، کونوں بولنوں (بات چیت کرنے سے )  ہٹ گئے ہیں۔ شیقا اندھا دُھند چوہدرانی کے←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(باب دوئم،قسط2)سید شازل شاہ گیلانی

گنتی کے چند  دن کیسے گزرے ،پتہ ہی نہیں چلا اور آج اس نے یونٹ جانا تھا ۔ سب نے اپنا خیال رکھنے کی تاکید کی اور بوجھل دل کے ساتھ اسے رخصت کیا ۔ وہ سوچ رہا تھا کہ←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(باب دوئم،قسط1)سید شازل شاہ گیلانی

دیوار پہ لٹکے کیلنڈر کو دیکھ کر زین کو یاد آیا کہ آج تو بائیس اگست ہے احمد کی سالگرہ ،وہ احمد جو زندگی کی شوخیوں سے بھر پور نوجوان تھا ۔ کشادہ پیشانی اور روشن آنکھوں والا لڑکا جس←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(قسط4)سید شازل شاہ گیلانی

گزشتہ قسط وہ اٹھنے کی کوشش کرنے لگے مگر ٹانگیں اب جواب دے چکی تھیں وہ ایک دم سے زمین پہ گرے۔ دل سے دعا نکلی” یا اللہ ہم سب کو اتنی ہمت دےکہ آج ان میں سے کوئی بچ←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(قسط3)سید شازل شاہ گیلانی

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(قسط2)سید شازل شاہ گیلانی “بیٹا شاپنگ کر لی مکمل ؟ ” ماں جی نے لاؤنج کے صوفے پر بیٹھی ہوئی سعدیہ سے پوچھا جو تھکی تھکی سی دکھائی دے رہی تھیں۔ انہوں نے نظر کی عینک←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔۔(قسط2)سید شازل شاہ گیلانی

“بابا, بھائی کب تک آئیں گے کچھ بتایا انہوں نے ؟” نہیں بیٹا آج کال کر کے پوچھتا ہوں, خیر تو ہے تم لوگ کیوں بار بار پوچھ رہے ہو ؟”بابا نے رمشاء سے پوچھا۔ ” بابا ! آپکو پتا←  مزید پڑھیے

وفا جن کی وراثت ہو۔۔(قسط1)سید شازل شاہ گیلانی

شام کے دھندلکے بڑھ رہے تھے, یہاں سارا سال ہی موسم بہت اچھا رہتا ہے مگر آج خنکی کچھ زیادہ ہی تھی, شمال سے آنے والی سرد ہوائیں بہت تیزی سے درجہ حرارت کو نقطہ انجماد کی طرف لے جا←  مزید پڑھیے