شفقت راجہ کی تحاریر
شفقت راجہ
شفقت راجہ
برطانیہ (لندن)میں مقیم باشندہ جموں کشمیر

اقوام متحدہ کی جنگ بندی لکیرپرجنگ۔۔شفقت راجہ

ریاست جموں و کشمیر کا تنازعہ دراصل تقسیم ہند 1947کے دوران پیش آنے والے سانحات میں سے وہ سانحہ ہے کہ جس کے جسم کے گہرے زخموں سے تاحال لہوٹپک رہا ہے۔ یوں تو قانون آزادی ہند کے تحت15اگست 1947کو←  مزید پڑھیے

1931تحریک،گلینسی کمیشن اور تنازعہ کشمیر۔۔شفقت راجہ

29 اپریل1931 کو جموں میں خطبہ عید کے دوران فرعون کے ظالمانہ نظام حکومت کے ذکر پر امام محمد اسحاق کو پولیس اہلکار کھیم چند نے خطبہ سے روک دیا جس کے خلاف مسلمانوں نے صدائے احتجاج بلند کی اور←  مزید پڑھیے

جوناگڑھ سے جموں کشمیر تک۔شفقت راجہ

برصغیر ہند میں انگریز حکومت دو حصوں پر مشتمل رہی ہے جس کا باقاعدہ آغاز برطانیہ اور فرانس کے درمیان تین کرناٹک جنگوں (1844-56) اور جنگ پلاسی (1857) کے بعد ایسٹ انڈیا کمپنی کی فتح اور بنگال پر قبضے سے←  مزید پڑھیے

غدار کون۔۔؟

گزشتہ دنوں پاکستانی وزیراعظم میاں نواز شریف کی پاکستانی عدلیہ سے نااہلی کے فیصلے کے شدید رد ِ عمل میں اپنی آئینی اور جغرافیائی حدود سے تجاوز کرتے ہوئے متنازعہ ریاست جموں وکشمیر کے پاکستانی زیر انتظام حصوں گلگت بلتستان←  مزید پڑھیے