مکالمہ کی تحاریر
مکالمہ
مکالمہ
مباحثوں، الزامات و دشنام، نفرت اور دوری کے اس ماحول میں ضرورت ہے کہ ہم ایک دوسرے سے بات کریں، ایک دوسرے کی سنیں، سمجھنے کی کوشش کریں، اختلاف کریں مگر احترام سے۔ بس اسی خواہش کا نام ”مکالمہ“ ہے۔

پی ایف سی کیساتھ گلگت بلتستان کی سیر۔۔۔شہباز افضل

ہمیشہ کی طرح اس دفعہ بھی اچانک سلمان صاحب صدر پاکستان فیڈریشن آف کالمسٹ کا مسیج موصول ہوا کہ پی ایف سی کے سلیکٹدڈ ممبرز اس دفعہ جشن آزادی گلگت بلتستان میں سلیبریٹ کریں گے اور مجھے بھی اس حوالے←  مزید پڑھیے

خوئے دل نوازی۔۔ڈاکٹر اظہر وحید

آج کا کالم معمول سے ہٹ کر متفرق موضوعات پر مشتمل ہے۔ کبھی کبھی دل چاہتا ہے، دقیق علمی باتوں سے کنارہ کش ہو کر ہلکے پھلکے انداز میں باتیں کی جائیں۔ کالم کو کالم ہی رہنا چاہیے، کالم کا←  مزید پڑھیے

پِنجرہ ( چار دِلوں کی داستان )قسط2۔۔سید علی شاہ

” بہتر ہوگا کہ تُم دونوں بہن بھائی آج ہی آفس چھوڑ دو ۔ میں ایک ماہ کی تنخواہ تم دونوں کے اکاؤنٹ میں ٹرانسفر کروا دیتا ہوں اور آج کے بعد سے تم دونوں کا ساعقہ انڈسٹریز سے کوئی←  مزید پڑھیے

لہو سے ٹپکتے آنسو۔۔ملک جان کےڈی

کہتے ہیں کہ مزاحمت زندگی ہے ، جو لوگ مزاحمت نہیں کرتے اس کا واضح مقصد یہ ہے کہ وہ لوگ غلامی پسندانہ سماج کو قبول کرنا چاہتے ہیں ، یہ وہ معاشرہ   قبول کرنا چاہ رہے ہیں جہاں←  مزید پڑھیے

شہدائے کربلا اور انصارالحسین میں” اصحابِ رسولۖ “کون شخصیات تھیں؟۔۔توقیر کھرل

حضرت امام حسین علیہ السلام کے الہیٰ لشکر اور مجاہدین فی سبیل اللہ کو روایا ت اور تاریخ میں بہت سے مختلف ناموں کے ساتھ یاد کیا گیا ہے ان القابات اور ناموں سے ظاہر ہوتا ہے کہ اصحاب امام←  مزید پڑھیے

سوال کرنا جُرم کیوں ؟۔۔میر افضل خان طوری

شخصیت  سازی کیلئے ضروری ہے کہ انسان میں سوال کرنے کی بہترین صلاحیت موجود ہو۔ انسان کی معاشرتی زندگی کا آغاز سوال سے ہی ممکن ہوا۔ انسان سازی کا ارتقاء سوال کے بغیر ناممکن ہے۔ جب تک انسان سوال نہیں←  مزید پڑھیے

پِنجرہ ( چار دِلوں کی داستان )قسط1۔۔۔سید علی شاہ

نوشین مُٹھیاں بھینچے اور دانت کچکچاتے مسلسل کمرے میں اِدھر سے اُدھر پھِر رہی تھی ابھی کُچھ دیر پہلے اُس نے کانچ کے  دو گِلاس بھی دیوار پر مار کر توڑ دیے تھے ۔ وہ کبھی بیڈ پر بیٹھ جاتی←  مزید پڑھیے

کربلا کے شہید حفاظِ قرآن کریم۔۔توقیر ساجد کھرل

حق و باطل کے معرکہ کربلا کو صدیاں بیت گئیں مگر محرم الحرام کا چاند نظر آتے ہی کربلا والوں کاغم تازہ ہوجاتاہے دل افسردہ ہوجاتا ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے جیسے کربلا کا واقعہ آج ہی ہوا ہے۔←  مزید پڑھیے

روشنی اور گھٹن۔۔ثناء آغا خان

اگر تعلیمی ادارے ہی تعفّن اور گھٹن کا مرکز ہوں گے توہمارے مستقبل کا کوئی معیار نہ رہے گا ۔گزشتہ ماہ سوشل میڈیا پر متعدد طلبہ نے تعلیمی اداروں میں جنسی ہراسانی کے واقعات پر آواز اٹھائی۔افسوس کے ساتھ کہنا←  مزید پڑھیے

احترام واحسانات سے اَٹے پاک سعودی تعلقات۔۔انعام الحق

پاکستان کے قیام سے تقریبا ًپندرہ سال قبل 23ستمبر 1932کو مملکت سعودیہ العربیہ معرض وجود میں آئی، پاکستان اور سعودیہ کے درمیان پہلا معاہدہ ابن سعود کے دور 1951 میں ہوا ،اسکےبعد ہرگزرتے دن کے ساتھ دونوں برادر اسلامی ملکوں←  مزید پڑھیے

فیصل عرفان پوٹھوہاری زبان کا محسن۔۔۔ڈاکٹرزاہدحسن چغتائی

خود رو پودے اور درخت انسانی زندگی کی بقا اور شفا کی علامت بن کر عرف عام میں جڑی بوٹیوں کا درجہ حاصل کر لیتے ہیں،ان کے مقابلے میں کاشت کاری کے اصولوں کے مطابق اگائے گئے پودے و درخت←  مزید پڑھیے

بلوچوں کا سستا خون اور میڈیا۔۔ملک جان کےڈی

آج کی 21 ویں صدی میں بلوچستان سے لاپرواہی کے رویے شدت کے ساتھ موجود ہیں۔ فرق پڑا ہے تو صرف اتنا کہ اب ہمیں کہیں کہیں یہ محسوس ہونے لگا ہے کہ یہ نام نہاد اصول اور رسم و←  مزید پڑھیے

ضیاء کیوں زندہ ہے؟ ۔۔۔ احمد صہیب اسلم

جذبات و پسند ناپسند کو ایک طرف رکھ کر سوچا جائے تو ہر عام لیڈر یا ڈکٹیٹر شاید یہی چاہے گا کہ اس کی چھاپ معاشرے پر گہری ہو اور لوگ اسے قبولیت یا پاپولیرٹی بخشیں۔ ضیاء الحق وفات کے بتیس سال بعد اگر سب برائیوں کا ذمہ دار ہے تو کیا وہ سُپر ہیرو تھا یا بعد میں آنے والے حکمران کم ہمت نکلے اور ضیاء ان کے لئے بہترین قربانی کا بکرا ٹھہرا؟ ایک نئی سوچ سوچئے گا ضرور!←  مزید پڑھیے

کرونا وبا کی اصلیت(دوسری،آخری قسط)۔۔مونا شہزاد

25 نومبر 2019 کی ایک سرد شام تھی۔فین لی نے اپنی کشتی واپس ووہان کی گودی کی طرف موڑتے ہوئے سوچا : “طبیعت کبھی پہلے تو ایسی مضحمل نہیں ہوئی تھی۔” اس کے سر میں شدید درد ہورہا تھا ۔درد←  مزید پڑھیے

فراغت اور مصروفیت۔۔ ڈاکٹر اظہر وحید

راولپنڈی سے ماہتاب قمر نے ۔۔ ذرا نام پر غور کریں‘ ماہتاب بھی اور قمر بھی، گویا چاند دوچند۔۔ ایک سوال پوچھا۔ سوچا ‘ اسے فون پر جواب دینے کی بجائے تحریر کی صورت میں جواب دیا جائے تاکہ افادِ←  مزید پڑھیے

کوت العمارہ: جنگِ عظیم اوّل کی ایک داستان ۔۔ قُرسم فاطمہ

نیلے آسمان کے اس گنبد کے نیچے اپنے خون سے ایک تاریخ رقم کرنے والے اُن شہیدوں کو سلام اتحادِ اسلام اور وطن کے لیے جو بلا خوف و خطر اپنا سینہ تانے چل پڑے اُن شہیدوں کو سلام نیلے←  مزید پڑھیے

کرونا وبا کی اصلیت(قسط 1)۔۔مونا شہزاد

30 اکتوبر 2019 کی ایک ٹھٹھرتی ہوئی شام تھی۔ ملٹی سٹوری بلڈنگ خالی ہوچکی تھی۔ سکیورٹی گارڈز بھی جانے کی تیاریوں میں تھے۔ اچانک سٹیو کے فون پر ایک میسج آیا ۔اس نے باقی سکیورٹی گارڈز کو مخاطب کرتے ہوئے←  مزید پڑھیے

پیاری دشمن (لاہور کی اس دوشیزا کے نام ایک خط)۔۔شعیب شاہد

پیاری دشمن! برسوں ہوئے تمہیں بچھڑے ہوئے۔ اتنے برسوں میں کبھی تمہیں خط نہ لکھ سکا۔ کیا لکھتا؟ قلم کو جب بھی سیاہی میں ڈبوتا ہوں، تو اس کو لہو میں ڈوبا ہوا ہی پاتا ہوں۔ آج ہمت کر کے←  مزید پڑھیے

ہم زندہ قوم ہیں ۔۔الف افضال

ہر سال  یوم آزادی انتہائی جوش جذبے سے منایا جاتا ہے۔ فوٹو لائبریریوں سے نہایت رقت آمیز اور دل کو چیر دینے والی فوٹوز نکال کر اخبارات اور سوشل میڈیا کی زینت بنائی جاتی ہیں۔ برقی و پرنٹ میڈیا کہیں←  مزید پڑھیے

یہ عبرت کی جا ہے تماشا نہیں ہے ۔۔معصوم مراد آبادی(انڈیا)

یہ گزشتہ یکم اگست کاواقعہ ہے۔ ملک بھر میں عید الاضحیٰ کا تہوار جوش وخروش کے ساتھ منایا جارہا تھا۔لوگ جو ق در جوق سنت ابراہیمی کی پیروی میں مشغول تھے۔ اچانک ٹوئٹر پر ایک نوجوان کا دردانگیز پیغام ابھرتا←  مزید پڑھیے