khansasaeed کی تحاریر

ریت میں کھلتے گلاب۔۔خنساء سعید

بچے پھولوں کی طرح نرم و نازک ہوتے ہیں پھولوں کی طرح ہی رنگین اور ہر طرف اپنی بھینی بھینی خوشبو بکھیرنے والے ۔ تتلیوں کے پروں پر لگے رنگوں کی مانند یہ بچےکہ اگر ذرا سی سختی سے پکڑو←  مزید پڑھیے

ملکہ کوہسار میں ننھے مزدور۔۔خنساء سعید

میدان ہوں یا پہاڑریگستان ہو یا صحرا ،دریا ہو یا سمندر ،ہر جگہ ہماری جمالیاتی حِس  کی تسکین کے لیے ذرائع موجود ہیں ،جو دیکھنے والوں کی آنکھوں کو تراوٹ  و تسکین اورروح کو مسرت و شادمانی بخشتے ہیں ۔پاکستان←  مزید پڑھیے

اک تم ہو کہ جم گئے ہو جمادات کی طرح۔۔خنساء سعید

اسلام کی عالمگیر اخوت یہ تھی کہ اس نے زمین کے دور دراز گوشوں کو ایک کر دیا تھا ۔اسلام کا ظہور ریگستان ِ حجاز میں ہوا مگر صحرائے افریقہ میں اس کی صدا بلند ہوئی، تاریخ کی نگاہیں جس←  مزید پڑھیے

ذہانت کی دنیا کے بے تاج بادشاہ۔۔خنسا سعید

صدیوں پہلے کا انسان سالہا سال لاکھوں کتابیں پڑھتا ،تحقیق کرتا ،محنت کرتا ،حکمت  پڑھتا  ،پھر  وہ ایک سائنس دان ڈاکٹر یا حکیم بن پاتا تھا ۔مگر جیسے ہی سوشل میڈیا وجود میں آیا، یوٹیوب آئی ،تو ہر گھر میں←  مزید پڑھیے

ہم ہیں مزدور !ہمیں کون سہارا دے گا۔۔خنساء سعید

قدرت اللہ شہاب لکھتے ہیں “بھوک کی اذیت دنیا کی تمام مصیبتوں سے بڑ ھ کرہے، بھوک سے مرنے والے کی روح ایک ہی دم قفس ِعنصری سے پرواز نہیں کرتی بلکہ مرنے والے  کے پور پور کو آہستہ آہستہ←  مزید پڑھیے

ہرلمحہ تغیّر سے عبارت ہے زمانہ۔۔خنساء سعید

یہ دنیا تضادات کا مجموعہ ہے ۔اس دنیا میں اگر زوال کا وجود ہے تو عروج بھی ہے ،پھول ہیں تو کانٹے بھی پھولوں کے ساتھ ہی ہیں ،سیاہ ہے تو سفید بھی ہے ،بہار ہے تو خزاں بھی ہے←  مزید پڑھیے

موجودہ عورت کے مسائل اور متنازع نعرے۔۔خنساء سعید

عورت گھر کی زینت، زمین کا زیور، دل کا سکون، قوموں کی عزت، ویرانے کی رونق، خلوت کی آبادی، گلشنِ ہستی کا سب سے خوبصورت پھول، عورت کتابِ زیست کا دیباچہ ہے، عورت کے متعلق مختلف مفکرین نے اپنی اپنی←  مزید پڑھیے

حسن کے سوا دنیا میں رکھا کیا ہے ۔۔خنساء سعید

ہم لوگ انسان ہونے کے ناطے حس ِلطافت سے بالکل محروم ہوتےجا رہے ہیں زندگی کی چیرہ دستیوں نے ہمیں بہت تلخ اور کڑوا بنا دیا ہے ۔ہماری بصارت حسن کے نظاروں کو دیکھنے سے بالکل قاصر ہو چکی ہے←  مزید پڑھیے

مسئلہ کشمیر رہا وہیں کا وہیں ۔۔ خنساء سعید

1947 میں دو قومی نظریے کو بنیاد بنا کرہندوستان کی تقسیم کے نتیجے میں نئے ملک پاکستان اور بھارت وجود میں آئے ،اور کشمیر پاکستان کے حصے میں آیا ۔مگر دہشت گرد بھارت نے نا حق کشمیر پر قبضہ کر←  مزید پڑھیے

انسان فطرت کو پامال کر رہے ہیں۔۔ خنساء سعید

اللہ تعالی نے جب کائنات تخلیق کی تو کائنات میں ہر طرف خو بصورتی ہی خو بصورتی دکھائی دیتی تھی ۔زمین پر سبزہ تھا ،لہلہاتے ہوئے کھیت کھلیان تھے ،دریا اپنی ہی موج میں بہتے تھے ،سمندروں کی شفاف ٹھاٹھیں←  مزید پڑھیے

ہم امن چاہتے ہیں !مگر ظلم کے خلاف۔۔خنساء سعید

پاکستان ہمارا پیارا وطن ہے یہ دھرتی ماں ہمیں اپنی جان سے بھی پیاری ہے ۔ہمارا پیارا وطن ہمارے زندہ خوابوں کی تابندہ تعبیر ہے ۔ارض ِ وطن زندہ قوموں کے لیے روشنی اور نکہت و نور کا استعارہ ہوا←  مزید پڑھیے

صد شکر! غموں کا سال گیا۔۔ خنساء سعید

گریہ ماتم اور نغمہ شادی کے حسین امتزاج کا نام ہی زندگی ہے اور رو روکر ہنسنا اور ہنس ہنس کر رونے کا نام بھی زندگی ہے ۔یہ انسانی زندگی ہی ہے کہ ہر روز ہونے والے واقعات و حادثات←  مزید پڑھیے

وہ کوہکن کی بات گئی کوہکن کے ساتھ۔۔ خنساء سعید

قیادت اُن لوگوں کی منتظر رہتی ہے جو اُٹھ کر یہ کہنا جانتے ہوں کہ ،وہ کیا سوچتے ہیں ۔بہترین قائد وہ ہے جو مشن کےحصول کے لیے نہ صرف خود پُر عزم ہو بلکہ دوسروں کو بھی عمل پر←  مزید پڑھیے

نفرت !اُردو پڑھنے والوں سے یا اپنی قومی زبان سے۔۔۔خنساء سعید

کچھ عرصہ پہلے کی بات ہے میں علامہ اقبال لائبریری میں بیٹھی ممتاز مفتی کاناول “علی پور کا ایلی “پڑھ رہی تھی ۔میرے سامنے ایک خاتون بیٹھ کر نوٹس بنا رہی تھیں ۔وہ نوٹس بناتے بناتے کن اکھیوں سے مجھے←  مزید پڑھیے

کرونا تیرے جانثار ،بے شمار بے شمار۔۔خنساءسعید

کرونا وائرس کی دوسری لہر آئی تو حکومت نے ملک بھر میں تمام تعلیمی ادارے بند کرنے کا فیصلہ کیا یہ خبر سنتے ہی بچوں کی خوشیاں قابل ِ دیدتھیں بچوں کی تو جیسے عید ہو گئی خیر بچے تو←  مزید پڑھیے

جدید سائنس اور اُردو شاعری۔۔خنساء سعید

سائنس ایک منطقی طریقہ کار کے تحت کسی بات کو جاننے یا اس کا علم حاصل کرنے کو کہا جاتا ہےسائنس میں تجربے یا مشاہدے سے حاصل شدہ معلومات کو عقلی اور منطقی دلائل سے پرکھا اور جمع کیا جاتا←  مزید پڑھیے

ملت کو نئی زندگی اقبال نے بخشی ۔۔ خنساء سعید

نطق کو سو ناز ہیں تیرے لبِ اعجاز پر محو حیرت ہے ثریا رفعت ِ پر واز پر علامہ محمد اقبال کی ملی شاعری میں مرثیہ خوانی کا رنگ موجود ہے وہ مسلمانوں کی حالت ِ زارکو دیکھ کر کڑھتے←  مزید پڑھیے

انقلاب ِ محمدی عصر ِحاضر کے لیے بہترین نمونہ ۔۔خنساء سعید

پچھلی کئی صدیوں سے اس دنیا نے بہت سے انقلابات اپنی آنکھوں سے دیکھے, جس میں راب سپئیر کا انقلاب فرانس ،روسو اور والٹیئر کا آزادی کا انقلاب ،ان کا نتیجہ کیا ہوا یہ انقلابات اپنے ہی بچوں کو زندہ←  مزید پڑھیے

پنک اکتوبر۔۔خنساء سعید

عورت اس دنیا کی سب سے زیادہ خوب صورت تخلیق ہے ۔عورت جس کی وجہ سے ہی اس کائنات کی مصوری میں رنگ بھرے گئے ۔عورت جو ہنسے توکائنات میں اس کی ہنسی سے جلترنگ بجیں ۔اس ایک عورت کی←  مزید پڑھیے

شیخ مکتب ہے اک عمارت گر۔۔خنساء سعید

چاند کا سفر، مریخ کی سیر، سمندر کی تہہ میں مسکن، مظاہر فطرت کو قدموں میں لا کھڑا کرنا انسان کی یہ قوت یہ دہشت کہ جس سے وہ چٹانوں کے جگر چاک کر دے چرند پرند انسان کے خوف←  مزید پڑھیے