محمداظہار الحق کی تحاریر

The World Is No More The Same

عبداللہ صاحب یاد آ رہے ہیں! یہ ملازمت کے درمیانی عرصہ (مِڈکیریئر) کی بات ہے۔ اگلی ترقی کیلئے تربیتی کورس لازم تھا۔ ساڑھے چار ماہ کا یہ تربیتی کورس کراچی کرنا تھا یا لاہور یا پشاور! اسلام آباد سے پشاور←  مزید پڑھیے

سہیلی بوجھ پہیلی ۔۔محمد اظہارالحق

گھر میں بیٹھے ہیں تو کیا کریں؟ بچوں کے ساتھ لڈو کھیلی۔ کیرم بورڈ کھیلے۔ اس میں میرا نواسہ ہاشم مجھے مات کر دیتا ہے۔ کتابیں پڑھتے ہیں۔ ٹی وی دیکھتے ہیں۔ سب گھر والے کسوٹی بھی کھیلتے ہیں۔ ویسے←  مزید پڑھیے

لشکروں میں سے ایک لشکر ۔۔محمد اظہارالحق

کچھ باتیں جو فہم و ادراک سے باہر تھیں‘ سمجھ میں آنے لگی ہیں؎ اقبال تیرے عشق نے سب بل دیئے نکال مدت سے آرزو تھی کہ سیدھا کرے کوئی ایک ذرۂ ناچیز‘ جو نظر بھی نہیں آتا‘ جس کے←  مزید پڑھیے

پَھل سے لدی ٹہنی نیچے کی طرف جُھکتی ہے ۔۔محمد اظہارالحق

”استاد محترم! مطلع کرنا چاہتا ہوں کہ مجھے فارس (ایران) کی سرزمین پر ایسے افراد ملے ہیں جو زرخیز ذہن اور صائب رائے کے مالک ہیں۔ یہ لوگ حکمرانی کے اہل ہیں؛ چنانچہ میں نے فیصلہ کیا ہے کہ انہیں←  مزید پڑھیے

کیا پی ٹی اے اور کابینہ ڈویژن سُن رہے ہیں؟ ۔۔محمد اظہارالحق

اگر شہر میں کچھ افراد ہاتھوں میں چھرے لے کر گھوم رہے ہوں‘ کچھ بندوقیں پکڑے ہر طرف ہوائی فائر کرر ہے ہوں اور کچھ چوراہوں پر کھڑے ہو کر عوام میں نشہ آور گولیاں تقسیم کر رہے ہوں تو←  مزید پڑھیے

کیا عرب اور ترک علما کی آرا خلافِ شریعت ہیں؟ ۔۔محمد اظہارالحق

‘دنیا‘‘ ٹی وی پر جناب مجیب الرحمن شامی اور عزیزم اجمل جامی کے پروگرام ”نقطۂ نظر‘‘ میں پاکستان کے معروف اور بہت ہی محترم عالمِ دین نے رُولنگ دی کہ سنتیں اور نوافل گھر میں پڑھیں‘ جمعہ کا خطبہ مختصر←  مزید پڑھیے

بے نیازی حد سے گزری بندہ پرور! کب تلک؟ ۔۔۔محمد اظہارالحق

امریکہ اور میکسیکو کے درمیان واقع سرحد تین ہزار ایک سو پچاس کلومیٹر طویل ہے۔ دنیا کے کوئی سے دو ملکوں کے درمیان یہ دسواں طویل ترین بارڈر ہے۔ ہر سال 99 کروڑ افراد اس پر آتے اور جاتے ہیں۔←  مزید پڑھیے

انوکھی وضع ہے‘ سارے زمانے سے نرالے ہیں ۔۔اظہارالحق

الصَّلوٰۃ فی بیوتکم۔ الصَّلوٰۃ فی بیوتکم نماز اپنے اپنے گھروں میں ادا کیجیے۔ نماز اپنے اپنے گھروں میں ادا کیجیے۔ یہ ہے وہ جملہ جو مشرقِ وسطیٰ کے ایک ملک میں اذان میں کہا گیا۔ حیَّ علیَ الصلوٰۃ‘ نماز کے←  مزید پڑھیے

کہنے اور کرنے میں بہت فرق ہے ۔۔محمد اظہار الحق

اگر آپ مریخ سے نہیں اترے‘ اگر آپ کی ساری زندگی یورپ یا امریکہ میں نہیں گزری‘ اگر آپ یہیں کی پیدائش ہیں اور یہیں پلے بڑھے ہیں تو مجھے بتائیے کہ ایک شخص جو آٹھ سال مسلسل مملکت کا←  مزید پڑھیے

ادبی میلے کا پاکھنڈ اور دہلی کا قتلِ عام ۔۔محمد اظہار الحق

آکسفورڈ یونیورسٹی پریس، آکسفورڈ یونیورسٹی کا حصّہ ہے۔ اس کی پاکستانی شاخ کا منیجنگ ڈائریکٹر، آکسفورڈ یونیورسٹی ہی کا اہلکار ہے۔ اسے کیا پڑی تھی کہ تین روزہ ادبی میلے میں ایک نشست اس قتلِ عام کے بارے میں رکھتا←  مزید پڑھیے

خدا خیر کرے ۔۔محمد اظہار الحق

کسی بھی پاکستانی کے گھر میں چلے جائیے، چھوٹا ہے یا بڑا، غریب کا ہے یا امیر کا، کوٹھی ہے یا دو کمروں کا مکان، ہر طرف اسلامی جذبہ کارفرما ملے گا۔ ایک دیوار پر خانہ کعبہ کی تصویر آویزاں←  مزید پڑھیے

بیورو کریسی… وزیر اعظم کی خدمت میں چند گزارشات

یہ قصّہ اُن دنوں کا ہے جب سربراہ حکومت کا تعلق ملتان سے تھا۔ ملتان ہی سے تعلق رکھنے والے ایک پروفیسر صاحب کو بنگلہ دیش میں ہائی کمشنر یعنی سفیر تعینات کر دیا گیا۔ ان پروفیسر صاحب کے والد←  مزید پڑھیے

خدا کے لیے یہ نیکر رہنے دو۔۔محمد اظہار الحق

پہلے فرغل اُترا۔ پھر صدری! پھر کرتا اتار کر ایک طرف رکھ دیا۔ کچھ عرصہ بعد پاجامہ گیا۔ اب صرف زیر جامہ رہ گیا۔ یعنی نیکر! وہ جو اردو کو انگریزی حروف تہجی میں لکھنے پر مُصر ہیں یعنی رومن←  مزید پڑھیے

ہر معاملے میں جوتے تلاش کرنے کا عمل ۔۔محمد اظہار الحق

لکھنؤ کی اُس دعوت میں ایک سکھ مہمان بھی تھا۔ میزبان نے ملازم کو بلایا۔ رقم دی اور حکم دیا کہ جا کر بازار سے دہی لے آئو۔ ملازم جیسے ہی کمرے سے نکلا‘ میزبان نے کمنٹری شروع کر دی!←  مزید پڑھیے

دوسروں کی میزبانی پر کب تک انحصار کریں گے؟؟۔۔محمد اظہار الحق

آزاد ہے! افغانستان آزاد ہے! روسی ہار کر چلے گئے۔ امریکی شکست کھا گئے۔ نیٹو افواج نے دھول چاٹی۔ مجاہد اور غازی سرخرو ہوئے! آزاد ہے! افغانستان کے پہاڑ، افغانستان کی زمین، افغانستان کے کوہ و دشت، سب آزاد ہیں!←  مزید پڑھیے

کس کا دروازہ کھٹکھٹائیں۔۔محمد اظہارالحق

کوئی ہے‘ جو ہمیں ان قاتلوں سے بچائے؟ اس ملک کی زمین ان وحشیوں سے بھر گئی ہے۔ یہ درندے ہر طرف‘ ہر بستی‘ ہر شہر‘ ہر قریے میں دندنا رہے ہیں! انسان ان کے لیے گاجر مولی سے زیادہ←  مزید پڑھیے

ہنگامہ ہے کیوں برپا ۔۔محمد اظہار الحق

بات کا آغاز دادا خان نوری سے کرتے ہیں۔ 1992ء میں جب سوویت یونین کا انہدام ہوا اور ترکستان کی ریاستیں آزاد ہوئیں تو جو پاکستانی پہلے پہل وہاں پہنچے ان میں یہ کالم نگار بھی شامل تھا۔ معروف صحافی←  مزید پڑھیے

عمر کٹ جائے آنے جانے میں ۔۔محمد اظہار الحق

یہ میری آنکھیں مُند کیوں رہی ہیں؟ یہ خون میں لرزش سی کیوں ہے؟ یہ رگوں میں لہو ہے یا مشعلیں جل رہی ہیں؟ یہ راستہ جس پر گاڑی دوڑ رہی ہے، کیا وہی ہے جس پر اونٹنی اِس کائنات←  مزید پڑھیے

گلہ جو حرم کو اہلِ حرم سے ہے ۔۔محمد اظہار الحق

جس شہر کو جہانوں کے پروردگار نے آخری رسولﷺ کی ولادت کے لیے منتخب کیا‘ اس میں آج تیسرا دن ہے! ہوا نرم اور لطیف ہے‘ موسم سرد نہ گرم! فضا خوشگوار ہے‘ دل کو طمانیت بخشنے والی! نمازِ فجر←  مزید پڑھیے

کئی موسم گزر گئے مجھ پر احرام کے ان دو کپڑوں میں ۔۔محمد اظہار الحق

”کوئی تکلیف‘ کوئی مسئلہ‘ کوئی پرابلم ہے تو بتائیے! کچھ چاہیے ہو تو حکم کیجیے۔‘‘ ہمارے دوست عامر شہزاد نے پوچھا۔عامر طویل عرصہ سے اس شہر میں رہائش پذیر ہیں‘ جہاں حضرت عبدالمطلب نے خدا کے گھر کو خدا کے←  مزید پڑھیے