محمداظہار الحق کی تحاریر

ماتم کرو اے اہلِ پاکستان،ماتم کرو۔۔۔محمد اظہار الحق

افسوس! کوئی طہٰ حسین اس ملک کی قسمت میں نہیں! بنفشہ اور گلاب کے پودے جڑوں سے اکھاڑ دیے گئے۔ دھتورے کے بوٹے لہلہا رہے ہیں۔کہاں وہ ساون کے آم کے درختوں سے ٹپکا لگتا تھا۔ ہر طرف حنظل‘ نیم←  مزید پڑھیے

جیفرلٹ کی پذیرائی سرکاری سطح پر کیوں نہیں کی جا رہی

کرسٹوف جیفرلٹ فرانس کے مشہور دانشور، عالم اور ماہر علم سیاسیات ہیں۔ وہ پیرس میں واقع معروف ’’سینٹر فار سٹڈیز ان انٹرنیشنل ریلیشنز‘‘ کے ڈائریکٹر ہیں۔ بیس برس کی عمر میں ڈاکٹر کرسٹوف جیفرلٹ پہلی بار بھارت گئے اور پھر←  مزید پڑھیے

فیس بک۔۔ مشتری ہشیارباش

چند دن پہلے فیس بک پر کچھ نوجوانوں کی ترتیب دی ہوئی ’’پسندیدہ‘‘ شعرا کی فہرست دیکھی! عباس تابش اور اختر عثمان کے سوا کوئی معتبر شاعر اس نام نہاد فہرست میں شامل نہ تھا۔ شعرا پرتو نہیں، شاعری پر←  مزید پڑھیے

میرا گریبان مجھ سے کتنا دور ہے؟۔۔۔محمد اظہار الحق

یہ صرف چار پانچ خاندانوں کی کرپشن نہیں جس کا رونا رویا جائے! ایک عمران خان نہیں‘ ایسے دس عمران خان بھی آ جائیں تو تبدیلی نہیں آئے گی! آپ اُس باغ کو کیسے ہرا بھرا کر سکتے ہیں جس←  مزید پڑھیے

ٹھیکہ اب کے آئی ایم ایف نے خان صاحب کو دیا ہے۔۔۔محمد اظہار الحق

بیسویں صدی ختم ہونے میں تین برس باقی تھے جب مہاتیر محمد آئی ایم ایف کے سامنے خم ٹھونک کر کھڑا ہو گیا اور اپنا راستہ الگ کر لیا۔ کرنسی کے بحران نے سارے جنوب مشرقی ایشیا کو اپنی لپیٹ←  مزید پڑھیے

غلط کہا وزیر اعظم نے،سراسر غلط…محمد اظہار الحق

نہیں! جناب وزیر اعظم! غلط کہا آپ نے! سراسر غلط! اگر آپ کا اندازِ فکر یہی رہا تو دامن کا چاک سلے گا تو کیا! گریباں کے چاک سے آ ملے گا! پیراہن کے بخیے ادھڑ جائیں گے! مانا آپ←  مزید پڑھیے

فی سبیل اللہ فساد۔۔۔۔محمد اظہار الحق

خ۔م۔صاحب سے اس وقت سے شناسائی تھی جب ہم دونوں کالج پڑھتے تھے۔ نہیں معلوم وہ آگے تھے یا پیچھے۔ بہر طور کلاس فیلو نہیں تھے۔ ہم دونوں چک لالہ سے سائیکلوں پر آتے تھے۔ زیادہ تر ملاقات راستے میں←  مزید پڑھیے

تحریکِ انصاف کی درویشی۔۔۔محمد اظہار الحق

یہ کوئی معمولی بات نہیں۔ اس پر بھی ردعمل خاموشی کی شکل میں ہوا تو یہ اونٹ کی پیٹھ پر آخری تنکا ثابت ہو گا!! اس سے پہلے وزیر اعظم عمران خان ایک اور نازک موقع پر خاموش رہے ہیں۔←  مزید پڑھیے

مسلمان تارکینِ وطن کا مستقبل۔۔۔محمد اظہار الحق

ساڑھے چھ فٹ طویل مصری عالم دین جناب اعلیٰ الزقم میلبورن کے محلے ہائیڈل برگ کی جامع مسجد میں خطبہ دے رہے تھے۔ فصیح و بلیغ آسان عربی میں اور تھوڑی تھوڑی دیر بعد مافی الضمیر انگریزی میں ڈھال رہے←  مزید پڑھیے

مگر مچھ کے آنسو۔۔۔۔محمد اظہار الحق

کیا آپ نے کبھی مگر مچھ دیکھا ہے؟ اگر آپ کا جواب اثبات میں ہوتا تو اگلا سوال یہ تھا کہ کیا کبھی مگر مچھ کو آنسو بہاتے بھی دیکھا ہے۔ مگر مچھ کے آنسو بہانے کا محاورہ ہمارے ہاں←  مزید پڑھیے

پاکستان کا مطلب کیا۔۔۔۔۔۔۔محمد اظہار الحق

افسوس ہم اپنی بنیاد سے بے خبر ہو چکے۔ ہیہات! ہیہات!ہم اپنی تاریخ بھول گئے۔ کیا کبھی ایسا بھی ہوا ہے کہ کوئی قوم اپنی وجہ تخلیق فراموش کر بیٹھے؟ نرم ترین لفظ بھی اس عمل کے لیے خودکشی ہے،←  مزید پڑھیے

خوشی کی خبر۔۔۔محمد اظہار الحق

سب سے پہلے خوشی کی یہ خبر صدر ٹرمپ کو وزیراعظم مودی نے ہاٹ لائن پر سنائی۔ صدر ٹرمپ نے اسی وقت اسرائیل کے وزیراعظم بنجمن نتن یاہو کو فون کیا۔ یاہو اس وقت اسرائیل کے مذہبی رہنمائوں کے ساتھ←  مزید پڑھیے

سوہنی دھرتی اللہ رکھے۔۔۔محمد اظہار الحق

وہ بچپن تھا جب صحن ایک تھا۔ بہت بڑا صحن، سب اس میں مل کر کھیلتے۔ گرمیوں میں ڈیوڑھی ٹھنڈی لگتی اور جاڑوں میں اندر کا نیم تاریک کمرہ گرم ہوتا۔ بڑے اس میں گھنٹوں بیٹھتے۔ بچے اندر جاتے تو←  مزید پڑھیے

زمیں سے معشوق لیں گے چاند آسماں سے لیں گے ۔۔۔۔۔۔۔۔محمد اظہارالحق

سچ کہا تھا منیر نیازی نے کہ شاعر ہی تصورات پیش کرتے ہیں‘ جسے دوسرے عملی شکلوں میں ڈھالتے ہیں۔ یہاں تک کہ چاند پر پہنچنے کا آئیڈیا بھی سائنسدان کو شاعروں ہی نے دیا۔ چالیس سال بنی اسرائیل صحرا←  مزید پڑھیے

اور کچھ نہیں تو ساحل کی قدر ہی کرلو۔۔۔محمد اظہار الحق

کیا آپ نے کبھی سوچا ہے کہ بے گھر انسان پر کیا گزرتی ہے! سعدیؔ کے پاس جوتے نہیں تھے۔ سفرکر رہے تھے شاکی اورنالاں ! راستے میں دیکھا کہ ایک مسافر کا پائوں ہی نہیں تھا! شکر بجا لائے←  مزید پڑھیے

شالا پردیسیاں نی خیر ہووے۔۔۔۔محمد اظہار الحق

نیوزی لینڈ میں مائوں کے جگر گوشے خون میں نہا گئے۔ باپ مارے گئے۔ بیویاں شہید ہوئیں۔ بیٹیوں کے لہو سے مسجدوں کے خون حنارنگ ہوئے۔ اپنے اپنے وطن سے ہزاروں میل دور، پردیس میں، قیامت گزر گئی۔ کچھ وہیں←  مزید پڑھیے

نیوزی لینڈ میں دہشتگردی،ایک زاویہ اور بھی ہے۔۔۔۔محمد اظہارالحق

کئی برسوں سے سن رہا تھا اور پڑھ رہا تھا کہ فرانس پر وہ لوگ ’’حملہ آور‘‘ ہورہے ہیں جو سفید فام نہیں ہیں۔ میں سمجھتا تھا کہ یہ مبالغہ آرائی ہے اور اس کا مقصد سیاسی سکور حاصل کرنا←  مزید پڑھیے

ہرن کی حفاظت کے لیے تیندوؤ ں کا جلوس۔۔۔محمد اظہار الحق

ضمیر جعفری عین ہماری نبض پر انگلی رکھتے تھے۔ ایسا مزاح جس میں آنسو چھپے تھے۔ آبادی بم کے بارے میں متنبہ کیا کہ ؎ شوق سے نور نظر، لخت جگر پیدا کرو ظالمو تھوڑ سی گندم بھی مگر پیدا←  مزید پڑھیے

پنڈی گھیب سے لاہور۔ لاہور سے دہلی۔۔۔۔محمد اظہار الحق

ماسٹر جگت سنگھ1885ء میں کیمبل پور(اٹک) کے قصبے پنڈی گھیب میں پیدا ہوئے۔1902ء میں راولپنڈی سے ہائی سکول پاس کیا۔ پہلے پرائمری سکول گولڑہ اور پھر میونسپل بورڈ ہائی سکول جہلم میں مدرس رہے۔ مزید تعلیم کے شوق میں سنٹرل←  مزید پڑھیے

کوئی انت ہے یا نہیں؟؟۔۔۔۔محمد اظہار الحق

یہ اڑھائی تین سال پہلے کی بات ہے! ایک عزیز کی شادی تھی۔نکاح مسجد میں پڑھایا جانا تھا۔ یہ کالم نگار اہلیہ کے ہمراہ دیئے ہوئے ایڈریس پر پہنچا۔ مین دروازے پر ایک کلاشنکوف بردار سدِّ راہ بنے کھڑا تھا۔←  مزید پڑھیے