اقبال دیوان کی تحاریر

ظفر الطاف کے بغیر پاکستان کے تین سال۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

ظفر الطاف ڈپٹی کمشنر ساہیوال تھے۔ سن تھا 1977.۔ چیف سیکرٹری مسعود نبی نور ان سے ناراض ہوئے۔بڑے صاحب ان سے کچھ ایسے کام لینا چاہتے تھے جو وہ کرنے پر کبھی بھی رضامند نہ ہوتے۔ان میں سے ایک کام←  مزید پڑھیے

ہاؤس آف کشمیر اور کمیونٹی پنشمینٹ…. محمد اقبال دیوان

ہمارے پرانے دوست صغیر احمد جانے امریکہ کب پہنچے۔جب بھی پہنچے تب امریکہ ایسا کٹھور نہ تھا جیسا اب ہوچلا ہے۔ ان دنوں آنے والوں پر بڑی محبت کی نظر رکھتا تھا۔اس سرزمین کثرت (Land of Plenty) نے جلد ہی←  مزید پڑھیے

ارد شیر کاؤس جی اور فریال نینسی۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/دو سری اور آخری قسط

ارد شیر کاؤس جی حسب وعدہ ہمیں اپنی مرسڈیز اسپورٹس میں لینے پہنچ گئے۔پھولدار شرٹ اور خاکی ٹراؤزر۔ہم نے کار میں بیٹھ کر انہیں تنگ کرنے کے لیے جب گجراتی میں یہ کہا کہ Wire-Tapping نوں تو پروگرام نتھی؟ (خفیہ←  مزید پڑھیے

ارد شیر کاؤس جی اور فریال نینسی۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/قسط1

دو اقساط کی قسط اول عبداللہ کو سب پتہ تھا۔ پرانے کراچی کی ساری پرانی بلڈنگز کی تعمیر سے ملکیت تک کے تمام رموز جتنے سٹی سروے کی  رجسٹر میں محفوظ تھے ان کے بارے میں کہیں زیادہ تفصیلات اس←  مزید پڑھیے

دل دھڑکنے کا سبب یاد آیا۔۔۔۔ محمد اقبال دیوان

نئے پڑھنے والے پہلے یہ پڑھیں راگ شنکارا اور پرواز۔۔۔محمد اقبال دیوان نازو(اصلی نام نازنین زہرہ) فرحین کے میاں اور ان کی پہلی بیوی شہلا نقوی کی صاحبزادی ہیں۔وہ اور اس کا بھائی فرحین کے گھر پر رہتے ہیں دونوں←  مزید پڑھیے

راگ شنکارا اور پرواز۔۔۔محمد اقبال دیوان

یہ مضمون ایک سال کے وقفے سے لکھے گئے دو حصوں پر مشتمل ہے۔اسے حقیقت اور افسانے کی بائی فوکل عینک لگا کر پڑھا جائے تو زیادہ سواد آئے گا۔گو کردار سو فیصد اصل اور گفتگو بھی بہت حد تک←  مزید پڑھیے

ایک سے جب دو ہوئے۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

خاک سارانِ جہان را بہ حقارت نہ نگر تو چہ دانی کہ در ایں گرد سوارے باشد (یہ جو دنیا میں خاک سار دکھائی دیتے ہیں۔ان کو حقارت سے مت دیکھو تم کیا جانو کہ اس اڑتی ہوئی دھول کے←  مزید پڑھیے

ستاروں کی شاہراہ سے دور۔۔۔ مزید آنٹی ایم/ محمد اقبال دیوان

کتاب ” جسے رات لے اڑی ہوا ” اشاعت کے بعد کچھ نئے گل کھلا گئی۔سندھ میں تو سابقہ رابطے بحال ہوئے مگر لاہور میں اس کے ایک قاری عاصم کلیار صاحب نے اسے خلائی مخلوق کی مدد سے ڈھونڈ←  مزید پڑھیے

آنٹی ایم ۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

نوٹ : زیر نظر مضمون اقبال دیوان صاحب کی کتاب ”جسے رات لے اڑی ہوا“ میں شامل ہے۔دیوان صاحب نے لاہور کے ایک نسبتاً گمنام بزرگ کی ہدایت پر اس کا دوسرا حصہ بھی قلمبند کیا جوان کی دوسری کتاب←  مزید پڑھیے

رات بھی، نیند بھی، کہانی بھی۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/دوسری اور آخری قسط

نوٹ:زیر ِ نظر کہانی محمد اقبال دیوان کی کتاب “پندرہ جھوٹ اور تنہائی کی دھوپ “میں شامل ہے! (گزشتہ سے پیوستہ) “تیرا وہ کراچی کا ڈان اور کیا کہتا تھا؟۔۔۔ ” ایچ۔بی۔کے کو حسد سے زیادہ تجسس نے گھیر لیا←  مزید پڑھیے

رات بھی، نیند بھی، کہانی بھی۔۔۔۔۔ محمد اقبال دیوان/قسط1

دو اقساط پر مبنی زیرنظر کہانی محمد اقبال دیوان کی کتاب ”پندرہ جھوٹ اور تنہائی کی دھوپ“ میں شامل ہے۔ سرجن قاضی عبدالحکیم حسین بخش قاضی کا اصل نام تو صرف حسین بخش قاضی ہے مگراس کی تمام دستاویزات میں←  مزید پڑھیے

لہو بسمل کا مقتل کی زمیں پر۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/حصہ اول

سعودی صحافی جمال خشوگی جی کی ہلاکت سے متاثر ایک خیالی کہانی۔صرف خاتون کردار کا خیالی خاکہ (نامکمل ہے) میرا نام ایمل ہے۔ میں مقتول سالم جبیر کی دوست تھی، کچھ لوگ نادانی میں مجھے اس کی منگیتر بھی کہتے←  مزید پڑھیے

ففتھ کالم۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

A fifth column انگریزی زبان کی اصطلاح میں ایسے چھوٹے سے گروپ کو کہا جاتا ہے جو کسی محصور بستی یا مملکت کو اندر رہ کر پوشیدہ طور پر یا اعلانیہ نقصان پہنچاتا ہے۔ اخباری کالم کو ہم صحافت کا←  مزید پڑھیے

آخری قہقہہ۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/دوسری ،آخری قسط

ایڈیٹر نوٹ:زیر مطالعہ طویل کہانی “وہ ورق تھا دل کی کتاب  کا “میں شامل ہے۔مکالمہ اس کتاب کی عام قاری تک عدم رسائی کے  باعث اسے یہاں شائع کررہا ہے۔برا سمجھے  جانے والے انسانوں میں بے نام فلاح انسانیت کے←  مزید پڑھیے

آخری قہقہہ۔۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/قسط اول

ایڈیٹر نوٹ:    زیر مطالعہ طویل کہانی  ”وہ ورق تھا دل کی کتاب کا“ میں شامل ہے۔۔مکالمہ اس کتاب کی عام قاری تک عدم رسائی کے  باعث اسے یہاں شائع کررہا ہے۔ برا سمجھا جانے والے انسانوں میں بے نام فلاح←  مزید پڑھیے

لیا درس نسخہء عشق کا(ادھر اُدھر کی باتیں)۔۔۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

وہ ہم سے ایک دن پہلے اسکول میں داخل ہوئی تھی۔ فرح نیسنی نام تھا   مگراس نام کا کوئی تعلق انگریزوں سے نہیں ،نینسی گجراتی بولنے والے کاروباری لوگ ہیں۔ ہم دونوں کا معاملہ بھی عیسائیوں کے اس مدرسے←  مزید پڑھیے

میر ؔمعلوم ہے،ملازم تھا۔۔۔۔محمد اقبال دیوان /دوسری اور آخری قسط

ایڈیٹر نوٹ :یہ کہانی ان کی زیر طباعت کتاب ”چارہ گر ہیں بے اثر“میں شامل ہے۔کہانی اپنی طوالت اور ا ٓ پ کی مصروفیت کی وجہ سے   دو اقساط پر مشتمل ہے۔دوسری قسط پیش خدمت ہے۔ میر ؔمعلوم ہے،ملازم←  مزید پڑھیے

میر ؔمعلوم ہے،ملازم تھا۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/پہلی قسط

ایڈیٹر نوٹ :یہ کہانی ان کی زیر طباعت کتاب ”چارہ گر ہیں بے اثر“میں شامل ہے۔کہانی اپنی طوالت اور ا ٓ پ کی مصروفیت کی وجہ سے   دو اقساط پر مشتمل ہے،دوسری قسط کل ملاحظہ فرمائیے گا۔ اس وقت←  مزید پڑھیے

مجنوں جو مرگیا ہے توجنگل اداس ہے۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/دوسری اور آخری قسط

44ایدھی صاحب سے جڑی کچھ نجی یادیں دوسری اور آخری قسط ایدھی صاحب سے اپنی پیشہ ورانہ ملاقاتوں کا سلسلہ بشرہ زیدی والے حادثے سے تیزی پکڑ گیا اور ان کی وفات حسرت آیات تک جاری رہا۔ 15 , اپریل←  مزید پڑھیے

مجنوں جو مرگیا ہے توجنگل اداس ہے۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/حصہ اول

ایدھی صاحب سے جڑی کچھ ذاتی یادیں دو اقساط کی پہلی قسط ایدھی صاحب سے میری ملاقات 1983 کے وسط میں چھاجوں برستی ہوئی بارشوں میں ہوئی۔تب تک بھارتی فلم ”نمک حلال“ ریلیز ہوچکی تھی۔تین موٹی کیسٹوں والا وی سی←  مزید پڑھیے