Aslam Awan کی تحاریر
Aslam Awan
Aslam Awan
اس وقت یبوروچیف دنیا نیوز ہوں قبل ازیں پندرہ سال تک مشرق کا بیوروچیف اور آرٹیکل رائٹر رہاں ہوں،سترہ سال سے تکبیر میں مستقل رپوٹ لکھتا ہوں اور07 اکتوبر 2001 سے بالعموم اور 16مارچ 2003 سے بالخصوص جنگ دہشتگردی کو براہ راست کور کر رہاں ہوں،تہذیب و ثقافت اور تاریخ و فلسفہ دلچسپی کے موضوعات ہیں،

نیشنل سکیورٹی اورمزاحمتی تحریکیں۔۔اسلم اعوان

توقع کے عین مطابق اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی میں حکومت مخالف تحریک چلانے پہ اتفاق رائے کے بعد سیاسی کشیدگی میں شدت آ گئی،حکومتی وزرا کی شعلہ بیانیوں سے قطع نظر طاقت کے مراکز کی طرف سے براہ←  مزید پڑھیے

سیاسی کشمکش کی نئی راہیں۔۔اسلم اعوان

آل پارٹی کانفرنس میں ملک کی تمام اپوزیشن جماعتوں کا حکومت مخالف تحریک چلانے کے لئے اتفاق رائے تک پہنچنے کے فیصلہ نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں بظاہر ایف اے ٹی ایف کے تقاضوں کی تکمیل کی خاطر کی←  مزید پڑھیے

افغانستان کا بحران ایشو نہیں رہا ؟۔۔اسلم اعوان

نائن الیون کی انیسویں برسی کے دن قطر کے دارالحکومت دوحہ میں انٹرا افغان مذاکرات میں پہلی بار خود افغان گروپوں کو ایک میز پہ بیٹھانے کی اہمیت تو فقط علامتی ہے کیونکہ یہی سانحہ افغانستان پہ امریکی حملہ کا←  مزید پڑھیے

مڈل ایسٹ میں جنگ کے نئے کردار۔۔اسلم اعوان

عالمی منظرنامہ میں جوہری تبدیلی یہ آ رہی ہے کہ لیبیا سے لیکر ایران تک پھیلے پورے مڈل ایسٹ پہ محیط جنگووں کی آگ سے امریکی مقتدرہ اپنے قدم باہرنکال کے اس خطہ میں اسرائیلی بالادستی کی راہ ہموار بناتی←  مزید پڑھیے

آفاتِ سماوی اور انسانی تدابیر۔۔اسلم اعوان

مرکزی دھارے کے میڈیا کی توجہ اگرچہ کراچی میں بارشوں سے ہونے والے نقصانات پہ مرتکز رہی لیکن حالیہ بارشوں کی غیر معمولی لہر نے صوبہ خیبرپختونخوا میں بھی انفرادی اور اجتماعی نظامِ زندگی کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے۔←  مزید پڑھیے

سیاسی تنازعہ گہرا ہو گیا؟۔۔اسلم اعوان

اس وقت بظاہر تو ہمارے سیاسی ماحول میں کسی قسم کی کوئی غیر معمولی کشیدگی کے آثار دیکھائی نہیں دیتے لیکن جس طرح مولانا فضل الرحمٰن تسلسل کے ساتھ محاذ آرائی کی طرف بڑھ رہے ہیں اس سے طاقتور مذہبی←  مزید پڑھیے

نئے سیاسی موڑ۔۔اسلم اعوان

تیزی کے ساتھ بدلتے ہوئے عالمی حالات کے تناظر میں ہماری قومی سیاست بھی کوئی نیا موڑ مڑنے والی ہے،جس کے عمیق اثرات ملک کی داخلی سیاست پہ نمایاں ہونے لگے ہیں،ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اگلے چند ماہ میں←  مزید پڑھیے

طلوع ِ سحر۔۔اسلم اعوان

دنیا میں معاشی اور نظریاتی بنیادوں پر تیزی سے تشکیل پاتی نئی عالمی صف بندیاں کسی نئے عہد کی تمہید دیکھائی دیتی ہیں،بظاہر یہی دیکھائی دیتا ہے کہ لیبیا کی سول وار میں الجھی عیسائی اور مسلم مملکتیں کسی بھی←  مزید پڑھیے

پیراڈائم شفٹ۔۔اسلم اعوان

کورونا وباءکی پراسرار لہر نے مشرق وسطہ میں جاری غیر محدود پراکسی جنگووں کی جس آگ کو عارضی طور پہ بجھا دیا تھا،بیروت میں امونیم نائٹریٹ دھماکوں نے اسی دم توڑتی کشمکش کو ازسر نو زندہ کرکے مڈل ایسٹ کے←  مزید پڑھیے

نئے صوبوں کے مطالبات اور اقتدار کے تقاضے ۔۔اسلم اعوان

مملکت خداداد کے طول و عرض میں نئے صوبوں کے قیام کی گونج مدت سے سنائی دیتی آ رہی ہے لیکن ہماری قومی لیڈر شپ اور اجتماعی دانش اُن اہم انتظامی امورکو سلجھانے کی صلاحیت سے عاری نکلی،جن کی تدوین←  مزید پڑھیے

آیا صوفیہ اور جوابی بیانیہ۔۔اسلم اعوان

سنہ 1829 میں مصر میں کسی فرقہ وارانہ تصادم میں مسلمانوں کے ہاتھوں چند عیسائی کی ہلاکت کے بعد اس وقت کے پوپ Pius VIII نے برطانیہ کے بادشاہ جارج چہارم کو لکھا،یہ واقعہ معمولی نہیں،معاملہ کی تہہ تک پہنچنے←  مزید پڑھیے

کورونا کے بعد دنیا بدل جائے گی؟۔۔اسلم اعوان

اس امر میں اب کوئی شبہ باقی نہیں رہا کہ کورونا وباءکے تدارک کے لئے نافذ کئے گئے ہمہ گیر لاک ڈاون نے مجموعی طور پہ عالمی سماج کی ہیت بدل ڈالی اور دنیا بھر کے سیاسی نظریات،فلسفیانہ اصول اور←  مزید پڑھیے

پولیس کو ریگولیٹ کون کرے گا؟۔۔اسلم اعوان

جب سے پولیس ایکٹ دوہزارسترہ کے تحت پولیس فورس کو سول انتظامیہ کی نگرانی سے نجات اورغیر محدود داخلی خود مختیاری ملی اُسی دن سے پولیس اپنے اجتماعی اور انفرادی رویّوں کو کسی ایسے خاص نظم وضبط میں نہیں ڈھال←  مزید پڑھیے

اپوزیشن کیا چاہتی ہے؟۔۔اسلم اعوان

کورونا لاک ڈاؤن کے آشوب سے نکلنے کے بعد قومی سیاست کے تالاب میں ایک بار پھر اضطراب کی لہریں اٹھنے لگی ہیں اور اس ناقابل پیشگوئی ماحول میں بھی مرکزی دھارے کے ذرائع ابلاغ اپوزیشن کی دوبڑی جماعتوں کی←  مزید پڑھیے

زوال پذیر سیاسی عمل۔۔اسلم اعوان

قومی سیاست پہ جس گہرے جمود نے پنجے گاڑ رکھے ہیں‘ بظاہر اس سے جلد نجات کی کوئی امید نظر نہیں آتی‘ کیونکہ جس طرح اقتدار کے سنگھاسن پہ بیٹھے لوگ مایوسی کے اندھیروں میں ٹامک ٹوئیاں مار رہے ہیں‘اسی←  مزید پڑھیے

اپنی بقا کی خاطر پولیس کو پیچھے ہٹنا پڑے گا۔۔اسلم اعوان

پچھلے دو سالوں کے دوران خیبر پختون خوا پولیس کے طرز عمل میں ایسی غیر معمولی تبدیلیاں واقع ہوئیں جس نے پولیس فورس کو صوبہ کے سول انتظامی ڈھانچہ کی اجتماعی معاونت سے جدا اور رفتہ رفتہ عوامی حمایت سے←  مزید پڑھیے

پولیس کی زیادتیوں کا تدارک کون کرے گا؟۔۔اسلم اعوان

پولیس آرڈر 2000 کی منظوری کے ذریعے اس امید پہ پولیس کو جوابدہی کے روایتی نظام سے ماورا کرکے وسیع اختیارات دیئے گئے کہ یہاں سیاسی مداخلت سے آزاد ہو کے فرینڈلی ماحول میں اعلی سطح کی مہارت پہ مبنی←  مزید پڑھیے

ارطغرل غازی اور منتظر قوم ۔۔اسلم اعوان

ترک مسلمانوں کے رومانوی کردار ارطغرل غازی پہ بنائی گئی ڈرامہ سیریل کی پاکستانی سماج میں مقبولیت کوئی حیران کن بات نہیں بلکہ مغلوب قوموں کے لئے اپنے شاندار ماضی سے امید کی روشنی لینا (انسپائریشن) فطری امر ہے۔حیرت انگیز←  مزید پڑھیے

مہذب دنیا میں نسلی تفریق کا المیہ۔۔اسلم اعوان

امریکا کی ریاست منی سوٹا کے شہر میناپولس میں سیاہ فام شہری جارج فلائیڈ کی پولیس کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد بھڑک اٹھنے والے فسادات؛ اگرچہ کوئی انہونی بات نہیں تھی‘ کیونکہ اس سے قبل بھی امریکی سماج کم و←  مزید پڑھیے

معیشت پہ وبائی اثرات۔۔اسلم اعوان

دہشتگردی کے ہاتھوں مملکت کے بنیادی ڈھانچہ کے انہدم،غیر محدود کرپشن اورسیاسی عدم استحکام کی وجہ سے قومی معیشت پہلے ہی دگرگوں تھی،اب کورونا وباءکے ہنگام اور لاک ڈاون کی سختیوں نے گردش زر کے نظام کو بگاڑ کے ہماری←  مزید پڑھیے