شیر علی انجم کی تحاریر
شیر علی انجم
شیرعلی انجم کا تعلق گلگت بلتستان کے بلتستان ریجن سے ہے اور گلگت بلتستان کے سیاسی،سماجی اور معاشرتی مسائل کے حوالے سے ایک زود نویس لکھاری ہیں۔

گلگت بلتستان میں صحافت کے نام پر اخباری کاروبار۔

آج کے اس دور میں اگر میڈیا کی بات کریں تو کہا یہ جاتا ہے کہ کسی بھی ملک یا خطے کی معیشت کی بہتری اورقومی صلاحیتوں کو بروئے کار لانے کیلئے سیاسی استحکام کے ساتھ ساتھ میڈیا کا آزاد←  مزید پڑھیے

کشمیریوں کی آل پارٹیز کانفرنس اور ہمارا مطالبہ

میں ہمیشہ لکھتا ہوں کہ قوموں کی زندگی میں جب قیادت کا فقدان اور سیاست میں قحط الرجال ہو تو اُس قوم کے فیصلے ہمیشہ غیروں کے اشاروں پر ہوتے ہیں۔ میرا تعلق ایک ایسے معاشرے سے ہے جہاں میں←  مزید پڑھیے

سوشل میڈیا صحافت اور حکومت ۔۔

محترم قارئین ہمیشہ کی طرح ایک بارپھر سرزمین بے آئین کا ایک اہم اور قابل مکالمہ ایشو کو لیکر حاضر خدمت ہوں۔ کہتے ہیں صحافت مختصر تعریف میں معلومات حاصل کرنے کا ایک ذریعہ اور اس کے مقاصد میں عوام←  مزید پڑھیے

گلگت بلتستان میں سیاسی اصلاحات کی تاریخ

گلگت بلتستان تاریخی حوالے سے صدیوں پر محیط ایک خطہ ہے جہاں پانچویں صدی عیسوی سے دردستان، بلورستان اور بروشال کی ریاستیں قائم تھی اور یہ خطہ تبت ریاست کی ایک اہم اکائی تھی لیکن حال کی طرح ماضی میں←  مزید پڑھیے

فکری جمود کا شکار معاشرہ

محترم قارئین میرا تعلق ایک ایسے معاشرے سے ہے جس کے بارے میں ہمارے ایک ممتازشاعر نے کیا خوب فرمایا، پہاڑی سلسلے چاروں طرف اور بیچ میں ہم ہیں۔۔مثال گوہر نایاب ہم پتھر میں رہتے ہیں۔ قدرت کے اس عظیم←  مزید پڑھیے

فاٹا اصلاحات اورگلگت بلتستان

تاریخ کے دریچوں کو اگر کھولیں توپتہ چلتا ہے کہ تقسیم برصغیر کے بعد قائد اعظم محمدعلی نے بحیثیت گورنر جنرل قبائلیو ں کے ساتھ جرگے میں اس بات پر زور دیا تھا کہ فاٹا میں کوئی بھی تبدیلی فاٹا←  مزید پڑھیے

مردم شماری میں ہماری زبانیں نظرانداز کیوں۔؟

کہتے ہیں کسی بھی علاقے یا ملک کی زبانیں اس معاشرے کے احساس کی تربیت کا نام ہے۔زبان جس طرح کسی بھی معاشرے کی ایک پہچان ہے بلکل اسی طرح زبان ذریعہ اظہار کا نام ہونے کے ساتھ کسی بھی←  مزید پڑھیے