• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • سینٹ نے کم عمربچوں سے زیادتی کے مرتکب افراد کو سرعام پھانسی دینے کی سفارش کردی

سینٹ نے کم عمربچوں سے زیادتی کے مرتکب افراد کو سرعام پھانسی دینے کی سفارش کردی

اسلام آباد: سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ نے زینب کیس کی روشنی میں 14 سال سے کم عمر بچوں سے  زیادتی   کے مرتکب افراد   کو سرِ عام  پھانسی دینے کی سفارش   کردی،کمیٹی نے  سفارش  کی کہ سرِ عام کے لیے تعزیرات پاکستان میں ترمیم کی جائے۔

تفصیلات کے مطابق سینٹ  کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس سینیٹر عبدالرحمان ملک کی صدارت میں ہوا۔ کمیٹی نے پولیس سے موبائل فون ایپلی کیشن واٹس ایپ پر ایک ہیلپ لائن قائم کرنے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ وہاں بچوں سے زیادتی کے واقعات کی اطلاع دی جاسکے۔کمیٹی نے بچوں کے اغوا اور ان سے جنسی زیادتی   کے واقعات کی مذمت میں ایک قرار داد منظور کی ہے اور اس نے ایسے گھناونے جرائم کے مرتکبین کو پھانسی   پر لٹکانے کی سفارش  کی ہے۔

قائمہ کمیٹی کے اجلاس میں سینیٹر شاہی سیّد کی سربراہی میں ایک ذیلی کمیٹی قائم کرنے کا بھی اعلان کیا ہے جو چار ہفتوں میں بچوں سے زیادتی کے واقعات سے نمٹنے کے لیے اپنی سفارشات پیش کرے گی۔

Shopping Revolution

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *