سائنسی ماہرین نے سگریٹ نوشی کا اہم فائدہ بتا دیا

نیویارک: سائنسی ماہرین کا کہنا ہے کہ سگریٹ میں پائے جانے والے زہریلے مادہ نکوٹین دماغی علاج میں مددگار ثابت ہوسکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق دنیا بھر کے ماہرین تمباکو نوشی اور خصوصا سگریٹ پینے والے حضرات کو متنبہ کرتے رہے ہیں کہ اُن کے اس عمل کی وجہ سے نہ صرف صحت متاثر ہوتی ہے بلکہ یہ ہلاکت کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

عالمی ادارے میں شائع ہونے والی رپورٹ میں یہ انکشاف کیا گیا ہے کہ دنیا بھر میں کروڑوں لوگ تمباکو نوشی کی بری لت میں مبتلا ہیں جن میں سے ہر سال لاکھوں لوگ مختلف بیماریوں کی وجہ سے ہلاک ہوجاتے ہیں۔

یہ پہلا موقع ہے کہ نیویارک میں واقع ’دی فیلر یونیورسٹی‘ کے ماہرین نے سائنسی جریدے ’پی این اے ایس‘ میں شائع ہونے والے تحقیقاتی مضمون میں انکشاف کیا کہ نکوٹین دماغ کے دو اہم حصوں کا رابطہ کروانے میں معاون ثابت ہوتا ہے۔

ماہرین نے نکوٹین کے اثرات جاننے کے لیے چوہوں کے جسم میں اس زہریلے مادے کو داخل کیا جس کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ دماغ کے دو حصوں آئی پی این اور ایم ایچ بی کا آپسی رابطہ بحال ہوا اور دماغ کے دو حصے نیورون میں موجود نیروٹرانسمیٹرز متحرک ہوئے۔

محققین کا کہنا ہے کہ ’نکوٹین کا دماغ کو متحرک کیے جانے سے یہ اشارہ ملتا ہے کہ یہ دماغی علاج اور ذہنی مسائل کو حل کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتی ہے کیونکہ یہ دونوں حصے انسانی جسم میں پائے جاتے ہیں جو احساس اور جذبات پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

سائنسی جریدے میں شائع ہونے والے مضمون میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ چونکہ یہ تحقیق محدود پیمانے پر کی گئی اس لیے یہ ابتدائی نتائج ہے، اس ضمن میں مستند اور دیرینہ تحقیق کی ضرورت ہے جسے جلد شروع کیا جائے گا۔

Shopping Revolution

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *