• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • امریکا کے بعد گوئٹے مالا کا بھی اپنا سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اعلان

امریکا کے بعد گوئٹے مالا کا بھی اپنا سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اعلان

امریکا کے بعد گوئٹے مالا بھی اسرائیل کا حامی بن کر سامنے آگیا،فیس بک پوسٹ پر گوئٹے  مالا کے  صدر جمی مورالیس نے  اسرائیل میں موجود اپنے سفارت خانے کو مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کا حکم دے دیا۔

ان کا کہنا تھاکہ یہ فیصلہ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو سے بات کرنے کے بعد کیا گیا کیونکہ اسرائیل گوئٹے مالا کا دیرینہ دوست ہے۔صدر گوئٹےمالا نے  متعلقہ حکام کو سفارت خانہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے سے پہلے ضروری اقدامات کرنے کی ہدایت بھی جاری کردی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے وہ قرارداد منظور کی تھی جس میں امریکا سے کہا گیا ہے کہ وہ مقبوضہ بیت المقدس یا مشرقی یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان واپس لے۔اس قرارداد کے حق میں 128 ممالک نے ووٹ دیا، 35 نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا جبکہ 9 نے اس قرار داد کی مخالفت کی،قرارداد کی مخالفت کرنے والے ملکوں میں ایک گوئٹے مالا بھی تھا۔

Shopping Revolution

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *