کورونا کے دوران ذہنی صحت کا خیال کیسے رکھا جائے؟

کورونا وائرس کے بارے میں معلومات کی بہتات کی وجہ سے بہت سے لوگ نفسیاتی مسائل کا شکار ہو گئے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ جتنا سوشل میڈیا سے دور رہیں گے اتنا ہی ذہنی حالت کو سکون ملے گا۔

کورونا وائرس کا خوف لوگوں کے دل و دماغ پر بری طرح سے چھا چکا ہے اس عالمی وبا سے متعلق خبریں ان لوگوں کے لیے زیادہ خطرناک ثابت ہوسکتی ہیں جو پہلے ہی کسی ذہنی اضطراب کا شکار ہیں۔

عالمی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے بھی کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے دوران ذہنی صحت کے تحفظ پر زور دیا ہے۔

ذہنی صحت کے حوالے سے فلاحی ادارے اینگزائٹی یو کے کے مطابق غیر یقینی صورتِ حال کو برداشت نہ کرنے کا خوف ذہنی صحت کی خرابی کی عام علامات میں سے ایک ہے۔

ذہنی صحت کے تحفظ کے لیے ایسی خبروں سے اجتناب کرنا ہوگا جو پینک اٹیک کا باعث بنتی ہیں لہٰذا نیوز ویب سائٹس اور سوشل میڈیا سے زیادہ دیر کے لیے دور رہیں۔

یہ بھی مشورہ دیا گیا ہے کہ درست معلومات کے لیے مستند ذرائع پر انحصار کریں جس میں حکومت اور ڈبلیو ایچ او شامل ہیں۔

ذہنی صحت کو بہتر بنانے کے لیے تجویز کیا گیا ہے کہ ٹی وی پر انٹرٹینمنٹ دیکھیں اور کتابیں پڑھیں۔

ماہرین نے یہ تجویز بھی دی ہے کہ جہاں تک ممکن ہو قدرت کا نظارہ کریں، سورج کی روشنی میں بیٹھیں، ورزش کریں، اچھی غذا کھائیں اور پانی پیتے رہیں۔

Advertisements
julia rana solicitors london

پرسکون اور مطمئن رہنے کے لیے اپنوں سے سوشل میڈیا یا ٹیلی فون کے ذریعے زیادہ سے زیادہ رابطے میں رہیں۔

Facebook Comments

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply