مزید 6 بچے بلیو وہیل کا شکار ہو گئے

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)۔بلیو وہیل نامی خونی گیم روزبروز بچوں اورنوجوانوں کو اپنا شکار بنارہی  ہے۔ریاست چھتیس گڑھ سے تعلق رکھنے والے مزید 6 بچے اس خونی کھیل کا شکارہوگئے۔آج کلسوشل میڈیا پربلیو وہیل نامی ویڈیو گیم کا بہت چرچا ہورہا ہے۔اس کھیل میں لوگوں کو مختلف ٹاسک دیے  جاتے ہیں جس میں خود کو زخمی کرنے کے ساتھ اپنے آپ کو نقصان پہنچانے والے ٹاسک شامل ہیں۔اس گیم کا اختتام زندگی کے خاتمے پرہوتا ہے یعنی آخری ٹاسک میں انسان کو خودکشی کرکے ثابت کرنا ہوتا ہے کہ وہ ڈرپوک یا بزدل نہیں۔ اس گیم سے متاثر ہوکر انڈیا  میں کئی نوجوان اپنی زندگی کا خاتمہ کرچکے ہیں اور اب ریاست  چھتیس گڑھ کے گاؤں کا ایک اورواقعہ سامنے آیا ہے جس میں 6 بچوں نے اس گیم کی وجہ سے خود کو زخمی کرلیا۔ چھتیس گڑھ کا ایک طالبعلم بلیو وہیل گیم  نامی کھیل کھیلتا تھا، گیم کے ٹاسک کے مطابق اس نے اپنی کلائی بلیڈسے کاٹ لی اور اپنے دوستوں کو یہ کارنامہ دکھا کر کہا کہ تم لوگ بزدل ہو اوریہ گیم نہیں کھیل سکتے۔ اس کی باتوں میں آکر باقی 5 بچوں نے خود کو مضبوط ظاہرکرنے کیلئے اپنے ہاتھوں پربلیڈ اورکانٹے سے کَٹ لگالیے۔ ایک رپورٹ کے مطابق اس گیم کی وجہ سے دنیابھر میں اب تک 150 سے زائد افراد موت کو گلے لگا چکے ہیں جن میں 130 افراد کا تعلق روس سے ہے۔

  • merkit.pk
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply