• صفحہ اول
  • /
  • نگارشات
  • /
  • دائمی امراض میں مبتلا افراد کی صحت سے متعلق معیارِ زندگی پر حجامہ کے اثرات۔۔۔۔ڈاکٹر حافظ عثمان اسد

دائمی امراض میں مبتلا افراد کی صحت سے متعلق معیارِ زندگی پر حجامہ کے اثرات۔۔۔۔ڈاکٹر حافظ عثمان اسد

تحقیق کا مقصد دائمی امراض میں مبتلا افراد کی صحت اور معیار زندگی پر حجامہ کے اثرات جانچنا تھا۔
سعودی میڈیکل جرنل میں شائع ہونے والی تحقیق میں 629 افراد کا ایک سال تک جائزہ لیا گیا۔

کنگ عبدالعزیز یونیورسٹی ہسپتال کی تحقیقاتی ٹیم نے مختلف دائمی امراض میں مبتلا افراد کے دو گروپ بنائے۔ ایک گروپ کو حجامہ کیا جبکہ دوسرا گروپ بغیر حجامہ کے رکھا گیا۔

حجامہ سے پہلے دونوں گروپس کے صحت اور معیار زندگی کا مشاہدہ کیا گیا اور پھر حجامہ کے ایک ماہ بعد دوبارہ انہی مریضوں کی صحت اور معیار زندگی کا جائزہ لیا گیا اور دونوں گروپس کا آپس موازنہ کیا۔

تحقیقاتی ٹیم نے جب نتائج کا تجزیہ کیا تو یہ بات سامنے آئی  کہ حجامہ کے بعد مریضوں کی صحت اور معیار زندگی میں واضح برتری آئی ۔ حجامہ کروانے کی بنیادی وجہ درد کی شکایت تھی
تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ دائمی امراض اور درد میں مبتلا افراد کی صحت اور طرز زندگی بہتر بنانے میں حجامہ اہم کردار ادا کر سکتا ہے

تحقیق کاروں نے کپنگ تھراپی کہ جس میں جسم پر مخصوص جگہ پر کپ اور کٹ لگا کر ایک خاص مقدار میں جلد سے خون نکالا جاتا ہے کو دائمی امراض خصوصاً  درد کے لیے complementary medicine / معاون طریقہ علاج کے طور پر تجویز کیا ہے۔

 

ڈاکٹر حافظ عثمان اسد
ڈاکٹر حافظ عثمان اسد
ڈاکٹر حافظ عثمان اسد لیکچرر یونیورسٹی آف لاہور فزیو تھراپسٹ کپنگ تھراپسٹ آکوپنکچرسٹ ہپناٹسٹ

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *