انسانوں سے پیار کیجیے۔۔۔محمد اسد شاہ

گزشتہ چند ہفتوں سے مجھے اس بات کا شدت سے احساس ہو رہا ہے کہ انسانیت کا رشتہ بہت بڑا رشتہ ہے – سری لنکا میں ایسٹر کے موقع پر عیسائیوں کی مذہبی تقریبات میں 8 مقامات پر بم دھماکوں اور 290 افراد کی ہلاکت نے ہر ذی شعور اور باضمیر انسان کو افسردہ کر دیا ہے – دنیا میں جس قدر بدامنی اور خون خرابہ ہے ، اس کی وجوہات تلاش کرنا اور پھر ان کا تدارک کرنا شاید میرے جیسے کم فہم کے بس میں نہ ہو – لیکن جہاں کہیں بے گناہوں پر ظلم ہو ، اس کو ناپسند کرنا تو دین اسلام نے ہمیں سکھایا ہے – میرے پیارے نبی سیدنا محمد مصطفیٰ صلی اللّٰہ علیہ و آلہ و سلم تو حالت جنگ میں بھی کفار کے بے گناہ بچوں ، بوڑھوں ، خواتین ، حتیٰ کہ ان کی فصلوں اور درختوں تک کے احترام کا حکم دیتے تھے – فلسطین ، کشمیر اور برما میں گزشتہ تقریباً 8 دہائیوں سے مسلمان قوم کی باقاعدہ نسل کشی جاری ہے – اس دہشت گردی میں اسرائیل ، بھارت اور برما کی ریاستیں اعلانیہ ملوث ہیں – وہاں کی صیہونی ، ہندو اور بدھ بھکشوؤں کی دہشت گرد تنظیمیں بھی ملوث ہیں – ہم بحیثیت مسلمان ان تاریخی حقائق سے شدید مضطرب ہیں اور ہمیں ہونا بھی چاہیے – بحیثیت مجموعی ، مسلمان ممالک کی حکومتیں اور “عالم اسلام” بے حسی کے مرتکب ہیں – انھیں شاید اس امر کا احساس نہیں ہو سکا کہ یہ صدمہ کتنا گہرا اور کتنا دیرپا ہے – اس معاملے میں صرف مذمتی قراردادوں والے ڈرامے الٹا ، مسلمان ممالک کے عوام کو شرمندہ کرتے ہیں – اللّٰہ ان حکومتوں کو توفیق بخشے کہ وہ مظلوم و مجبور مسلمانوں کی مدد کر سکیں –

Advertisements
merkit.pk

گزشتہ دنوں جب نیو زی لینڈ میں دو مساجد میں صلواۃ الجمعہ ادا کرتے مسلمانوں پر دو دہشت گرد عیسائیوں نے انتہائی خوف ناک حملے کیے ، اور 50 بے گناہ مسلمانوں کو شہید کیا ، تب بھی ہم سب شدید کرب میں مبتلا ہوئے – ہمیں ہمیشہ یہ شکوہ رہتا ہے کہ یورپی میڈیا عموماً مسلمانوں کا خون بہنے پر کسی درد کا اظہار نہیں کرتا – لیکن نیو زی لینڈ کی خاتون وزیراعظم جیسینڈرا آرڈرن نے دنیا کو ایک شان دار روپ دکھایا – انھوں نے جس طرح مسلمانوں کے ساتھ یک جہتی کی عملی مثال قائم کی ، اسے دنیا بھر میں سراہا گیا – مسلمانوں کے دکھ کو ، انھوں نے پورے نیو زی لینڈ کا قومی دکھ بنا دیا – وہاں کے پر امن عیسائی مرد و خواتین نے مسلمانوں کے ساتھ صلواۃ الجمعہ تک کی ادائیگی میں علامتی شمولیت کی – ہر جگہ اذان کی آوازیں بلند ہوئیں اور وہاں کے عوام نے احتراماً کھڑے ہو کر خاموشی سے اذانیں سنیں – اس سب کچھ سے ہمیں بہت کچھ سیکھنے کو ملا – ہم سب کو ، اب یہی سوچنا اور طے کرنا ہے کہ انسانوں کو امن کا درس دینا ہے تو ہر انسان کو احترام دینا چاہیے – اسلام نے ہمیں ہر مذہب کی عبادت گاہوں اور ہر مذہب کے پیشواؤں کا احترام سکھایا ہے – ہمیں اپنے عمل سے اس کا اظہار بھی کرنا چاہیے – سری لنکا میں بے گناہ عیسائیوں کے قتل عام پر بھی ہمیں اسی طرح دکھ محسوس کرنا چاہیے – ان کے لواحقین بھی اسی کرب کا شکار ہوئے ہیں ، جس کرب میں نیو زی لینڈ کے مسلمان مبتلا ہوئے – دنیا ساری انسانیت کی مشترکہ جائے قرار ہے – دنیا میں امن کے لیے اللہ سے دعا بھی کیجیے اور سب انسانوں سے پیار بھی کیجیے !

tripako tours pakistan
  • merkit.pk
  • merkit.pk

محمد اسد شاہ
محمد اسد شاہ کالم نگاری اور تعلیم و تدریس سے وابستہ ہیں - پاکستانی سیاست ، انگریزی و اردو ادب ، تقابل ادیان اور سماجی مسائل ان کے موضوعات ہیں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply