نامعلوم مرض کے شکار بچے کا گردہ ٹانگ میں اُگ آیا

SHOPPING

لندن: طبّی دنیا کی تاریخ میں پہلی بار ایک بچے کا گردہ اس کی ٹانگ پر نکل آیا ہے، جس کی وجہ جینیاتی بتائی جارہی ہے۔

ڈیلی میل کے مطابق پوری دنیا میں اب تک کوئی بھی اس کیفیت میضں مبتلا نہیں ہوا۔ 10 سالہ ہامش رابنس کے جسم میں ایک کروموسوم 7p22.1 کی کمی ہے، جس سے مکمل گردہ اپنی مقررہ جگہ کی بجائے اس کی دائیں ران میں موجود ہے۔

اب تک اس مرض کا کوئی نام نہ تھا اور اب ڈاکٹروں نے اسے ‘ہامش سنڈروم’ کا نام دیا ہے۔ ڈاکٹر گردے کو ہٹانے کے حق میں نہیں کیونکہ اس سے نامعلوم مسائل پیدا ہوسکتے ہیں۔

Ms Robinson said she heard her son say 'mamma' at 17-months-old, and then didn't hear him speak anything else for six years

اگرچہ 900 بچوں میں سے کسی ایک کا گردہ اپنی جگہ سے دائیں بائیں ہٹا ہوا ہوسکتا ہے، لیکن طبی تاریخ میں یہ پہلا واقعہ ہے کہ گردہ دھڑ کی بجائے ٹانگ کا حصہ بن گیا ہے۔

The condition means Hamish only has hearing in one ear, suffers severe asthmatic attacks, has spinal problems, learning difficulties and requires a voice computer to speak

ہامش کئی امراض کے شکار ہیں جن میں ریڑھ کی ہڈی کے مسائل، دمہ، کمزور سماعت اور بولنے میں دقت شامل ہے۔ اسی وجہ سے وہ کمپیوٹر سافٹ ویئر کے ذریعے بات کرتے ہیں۔ تاہم ان کا دوسرا گردہ  بالکل درست کام کررہا ہے۔

Ms Robinson said it their journey has been difficult due to the fact no one else has the condition and doctors do not know what to expect 

ہامش کی والدہ کہتی ہیں کہ ڈاکٹر بتانے سے قاصر ہیں کہ اس کا مستقبل کیسا گزرے گا۔ اپنی پیدائش کے وقت ہامش کا وزن صرف دو پونڈ تھا ۔ پیدائش کے بعد اس کی افزائش بہت سست رہی اور اس نے 17 ماہ مکمل ہونے کے بعد ماں کا لفظ ادا کیا اور اس کے چھ سال بعد دوسرا جملہ ادا کیا۔

SHOPPING

Hamish was born over five weeks premature, but appeared to be healthy apart from his weight

تاہم ہامش اب اسکول جاتا ہے اور کراٹے کی تربیت بھی لے رہا ہے۔ اس کی والدہ کہتی ہیں کہ یہ بچہ میرے لیے نعمت سے بڑھ کر ہے تاہم میں اس کےمستقبل کے بارے میں فکرمند ہوں۔

Hamish's kidney, which is fully functioning at the top of his thigh, does not affect his health. But in the future, it could be fatal, according to doctor's beliefs 

SHOPPING

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *