ذوالفقارعلی بھٹو کی 91ویں سالگرہ آج منائی جارہی ہے

SHOPPING

کراچی: پاکستان کے سابق وزیراعظم اور پیپلز پارٹی کے بانی ذوالفقار علی بھٹو کی 91ویں سالگرہ آج منائی جارہی ہے۔

پانچ جنوری 1928 کو لاڑکانہ ميں سر شاہنواز بھٹو کے گھر پیدا ہونے والےذوالفقار علی بھٹو نے اعلیٰ تعلیم اور قانون کی ڈگری کيلیفورنیا اور آکسفورڈ سے حاصل کی اور 1963 میں جنرل ایوب خان کی کابینہ میں وزیر خارجہ بنے۔

بعد میں سیاسی اختلافات کی وجہ سے انہوں نے حکومت سے کنارہ کشی اختیار کی اور ترقی پسند دوستوں کے ساتھ 30 نومبر1967 کو پاکستان پیپلز پارٹی کی بنیاد رکھی۔

پیپلز پارٹی سماجی انصاف، سوشلسٹ نظریات اور جمہوریت کے فروغ پر مبنی منشور کے باعث روز بروز مقبول ہوتی گئی۔

ذوالفقار علی بھٹو1970کے الیکشن میں روٹی، کپڑا اور مکان کا نعرہ لے کر عوام میں گئے تو انہیں انتہائی والہانہ پذیرائی ملی۔

انتخابات میں کامیاب ہوکر ذوالفقار علی بھٹو نے اقتدار سنبھالا تو ملک دولخت ہوچکا تھا، جس کی وجہ سے سویلین مارشل لاء ایڈمنسٹریٹر اور پھر 1971 سے 1973 تک پاکستان کے صدر رہے۔

ذوالفقار علی بھٹو 1973 سے 1977 تک منتخب وزیراعظم رہے، انہوں نے ملک کو 1973 کا متفقہ آئین دیا اور بھارت سے شملہ معاہدہ کرکے پائیدار امن کی بنیاد رکھی۔

سیاسی مبصرین کے مطابق بھٹو دور میں پسے ہوئے طبقات کے حقوق کے لیے کئی اقدامات کیےگئے۔

تاہم مبینہ داخلی اور خارجی سازشوں کے نتیجے میں اُس وقت کے آرمی چیف جنرل ضیاء الحق نے منتخب حکومت کا تختہ الٹا اور قتل کے الزام ميں مقدمہ چلا کر ذوالفقار علی بھٹو کو 4 اپریل 1979کو تختہ دار پر لٹکا دیا۔

SHOPPING

تاہم بھٹو کی پھانسی کے باوجود بھی چاہنے والوں کے دل سے ان کی محبت کو ختم نہیں کیا جاسکا۔

SHOPPING

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *