• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • انوکھے لاڈلے نے کھیلنے کو چاند مانگا تو پورا ملک دیدیا گیا،بلاول

انوکھے لاڈلے نے کھیلنے کو چاند مانگا تو پورا ملک دیدیا گیا،بلاول

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ایک اور لاڈلہ میدان میں اتارا گیا ہے جو کہ انوکھا لاڈلہ ہے جس نے کھیلنے کو چاند مانگا تو اسے پورا ملک دے دیا گیا۔ سکھر میں ہونے والے پاکستان پیپلزپارٹی کے یوم تاسیس کے جلسے سے خطاب میں بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ آمروں نے جعلی اقتدار کو طول دینا چاہا تو مذہب کو آلے کے طور پر استعمال کیا جس کا نتیجہ آج ہم سب بھگت رہے ہیں، آج ملک جل رہا ہے تو یہ آگ آمروں نے لگائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام امن پرستی کا مذہب ہے لیکن اس کو دہشت گردی کے نام سے بدنام کیا گیا اور اب وہ انتہا پسندی کی آگ ہمارے گھروں کی دہلیز تک پہنچ چکی ہے جس نے سارے سماج کو لپیٹ میں لے لیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ پاکستان کو بچانا ہے، اب اس آگ کو اس وقت تک بھجانے میں کامیاب نہیں ہوں گے جب تک ملک کا وزیر اعظم اس جنگ کو اپنی جنگ تسلیم نہیں کرے گا، ملک کا وزیر اعظم یوم شہدا پر یہ کہے گا کہ یہ جنگ ہماری جنگ نہیں تو شہداء کے ورثا پر کیا گزری ہوگی؟  بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ خان صاحب میں پوچھتا ہوں کہ بہادر افواج اور پولیس کی قربانی کس لیے تھی؟ دہشت گردی کیخلاف جنگ ہماری جنگ ہے۔

Advertisements
merkit.pk

انہوں نے کہا کہ پی پی کا مقابلہ غیر جمہوری قوتوں اور ان کے لاڈلوں سے رہا ہے لیکن ایک اور لاڈلہ میدان میں اتارا گیا ہے جو کہ انوکھا لاڈلہ ہے جس نے کھیلنے کو چاند مانگا تو پورا ملک کھیلنے کو دے دیا گیا۔ پی پی چیئرمین کا کہنا ہے کہ یہ ایسا لاڈلہ ہے جو چوری بھی کرتا ہے اور سینا زوری بھی کرتا ہے لیکن اس لاڈلے کا نتیجہ بھی پہلے لاڈلے سے مختلف نہیں ہوگا، دن کو کچھ رات کو کچھ کہتا ہے اور پھر باتوں سے مکر جاتا ہے، پھر کہتا ہے کہ یوٹرن کے بغیر لیڈر نہیں بن سکتا۔ ان کا کہنا تھا کہ لیڈر وہی ہوتا ہے جو عوام سے کیا ہوا وعدہ پورا کرتا ہے، لیڈر بننا ہے تو شہید محترمہ بینظیر بھٹو سے سیکھو جس نے آمروں کے سامنے سر  نہیں جھکایا۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ لوگ 100 دن میں نئے پاکستان سے تنگ آچکے ہیں، مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی ہے لیکن یہ حکومت کنٹینر سے اترنے کا نام ہی نہیں لے رہی، احتساب کے نام پر انتقام کا بازار گرم کیا ہوا ہے اور خود کے پی کے میں احتساب کمیشن کو بند کردیا، بلین ٹری سونامی اور بی آرٹی کی فائل بندکردی اور مقدمات کا سامنا کرنے والے کو وزیر بنادیا۔ ان کا کہنا ہے کہ خان صاحب، آپ نے اداروں کو غیر سیاسی کرنے کی بات کی لیکن آپ نے گائے کے مقدمے میں آئی جی کو گھر بھیج دیا، ڈی پی او اور آئی جی پنجاب کا تبادلہ کردیا، آپ سیاسی مداخلت میں مصروف تھے تو اس وقت اسلام آباد سے ایس ایس پی پشاور اغوا ہوتا ہے جس کی لاش افغانستان سے مسخ شدہ ملتی ہے۔ بلاول کا خطاب میں کہنا تھا کہ 100 دن میں انقلاب لانے کی بات کی تھی لیکن انہوں نے جنوبی پنجاب صوبے کیلئے کچھ نہیں کیا، جنوبی پنجاب کا سہانا خواب چند وزارتوں کیلئے بیچ دیا گیا اور یہ صوبائی خود مختاری کو ختم کرنے کی کوشش کررہے ہیں، یہ ملک کو ون یونٹ بنانے کی کوشش کررہے ہیں، اگر فیڈریشن اور 18 ویں ترمیم پر حملہ ہوا تو بھرپورمخالفت کریں گے اور ناکام بنادیں گے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے غربت مکانے کا وعدہ کیا تھا یہ تو غریب مکاؤپر کام کررہے ہیں، کیا یہی ہے تمہارا نیا پاکستان، جواب دو عمران خان، آپ لاکھوں لوگوں کو بے گھر اور بے روزگار کر رہے ہیں ، اگر یوٹرن لینا ہے تو مہنگائی اور مہنگی بجلی پر یوٹرن لو، اگر یوٹرن لینا ہے تو مہنگے پٹرول پر یوٹرن لو اور یوٹرن لینا ہے تو عوام دشمن پالیسیوں پر یوٹرن لو۔  پی پی چیئرمین کے مطابق آپ تو بیرونی سرمایہ کاری کرنے آئے تھے،100 دن میں کمی کیوں آئی اور سرکلر ڈیٹ پچھلے سارے ریکارڈ کیوں توڑ گیا؟   ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے پاکستان کے عوام کا مستقبل خطرے میں ڈال دیا ہے، ہم اس یوٹرن حکومت کا راستہ روکیں گے اور پاکستان کے عوام کے حقوق کے تحفظ کو سیاست کا مرکز بنائیں گے، اقتدار کوئی بھی کرے اسے ملک کو آگے لےجانا پڑے گا۔

tripako tours pakistan
  • merkit.pk
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply