• صفحہ اول
  • /
  • ادب نامہ
  • /
  • نعتِ در بارگاہِ رحمت للعالمین از طرفِ احقرالعباد۔۔۔۔۔۔ محمد علی جعفری

نعتِ در بارگاہِ رحمت للعالمین از طرفِ احقرالعباد۔۔۔۔۔۔ محمد علی جعفری

منقبت ایک ہے، مدحِ شہِ  صفدر   ہوجائے،
پاک محفل ہے ذرا نعرہِ حیدر ہوجائے
ہم ثنا خوانِ ہیں ،ذکرِ شہ  ِداور ہوجائے
آؤ جبریل ذرا نعتِ پیمبر ہوجائے

والضحی ضو ہے تمہاری تو غنی وصف تیرا،
مالکِ کُل کے لیے علتِ خلقت ٹھہرا
میں تیری مدح کروں،ذات تونگر ہوجائے
آؤ جبریل ذرا نعت پیمبر ہوجائے

جو مربیِ شہِ نہجِ بلاغہ وہ نبی
جو مکرم بھی ہے تکریم سے برتر وہ نبی،
جس کی دزدیدہ نگاہ ،غم سے سپر غم ہوجائے
آؤ جبریل ذرا نعتِ پیغمبر ہوجائے

رحمتِ عالم و درمانِ طبیبانِ جہاں،
شاہد و منذر و ہادی و فروزاں شمع
اب مدد کیجیے ،غرقاب سفینہ ڈھوجائے
جبریل ذرا نعتِ پیغمبر ہوجائے ۔

ہے خدا، جن و ملائک بھی حدی خوان تیرے
قدسیانِ شجرِ سدرہ ہیں دربان تیرے
تذکرہ تیرا جو فردوس سے بہتر ہوجائے،
آؤ جبریل ذرا نعتِ پیغمبر ہوجائے!

محمد علی
محمد علی
علم کو خونِ رگِِِ جاں بنانا چاہتاہوں اور آسمان اوڑھ کے سوتا ہوں ماسٹرز کر رہا ہوں قانون میں اور خونچکاں خامہ فرسا ہوں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *