ڈاکٹر روتھ فاؤ کی سرکاری اعزاز کے ساتھ تدفین

SHOPPING

اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک)جذام کے مریضوں کا علاج کرنے والی ‘پاکستان کی مدر ٹریسا’ ڈاکٹر روتھ فاؤ کو آخری رسومات کی ادائیگی کے بعد گورا قبرستان میں سپردِ خاک کردیا گیا۔وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی ہدایت کے مطابق آنجہانی ڈاکٹر روتھ فاؤ کی آخری رسومات پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ ادا کی گئیں۔صدر مملکت ممنون حسین، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سمیت تینوں مسلح افواج کے سربراہان نے بھی ڈاکٹر روتھ فاؤ کی تدفین میں شرکت کی۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ، گورنر سندھ محمد زبیر سمیت متعدد اہم شخصیات اور شہریوں کی بڑی تعداد ڈاکٹر روتھ فاؤ کو آخری الوداع کہنے گورا قبرستان پہنچی جہاں سخت سیکیورٹی کے انتظامات کیے گئے تھے۔اس سے قبل کراچی کے علاقے صدر میں واقع سینٹ پیٹرک چرچ میں پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ ڈاکٹر روتھ فاؤ کی آخری رسومات ادا کی گئیں، مسلح افواج کے اہلکار ڈاکٹر روتھ کے جسدِ خاکی کو لے کر چرچ میں داخل ہوئے جبکہ ان کا تابوت پاکستانی پرچم میں لپٹا ہوا تھا۔واضح رہے کہ آخری رسومات کے دوران سیکیورٹی کی صورتحال یقینی بنانے کے لیے تینوں مسلح افواج کے اہلکاروں نے ذمہ داریاں سنبھال رکھی تھیں۔ یاد رہے کہ جذام/کوڑھ کے مریضوں کا علاج کرنے والی ‘پاکستان کی مدر ٹریسا’ ڈاکٹر روتھ فاؤ گذشتہ ہفتے (10 اگست) کی رات کراچی میں انتقال کر گئی تھیں۔کراچی کے علاقے صدر میں جذام کے مریضوں کے علاج کے لیے قائم میری ایڈیلیڈ سینٹر کے سی ای او کے مطابق 88 سالہ ڈاکٹر روتھ فاؤ 2 ہفتے سے نجی ہسپتال میں زیر علاج تھیں۔اس موقع پر آرمی چیف، ایئرچیف سمیت عسکری حکام نے ڈاکٹر روتھ فاؤ کو سلامی بھی دی۔

SHOPPING

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *