فاروق ستار سمیت دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد

عدالت نے اشتعال انگیز تقریر کیس میں فاروق ستار اور عامر خان سمیت دیگر ملزمان پر  فرد جرم عائد کردی۔ انسدادِ دہشت گردی کی عدالت میں اشتعال انگیز تقریر، قتل، بغاوت اور میڈیا ہائوسز پر حملے کے مقدمات کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران فاروق ستار کے علاوہ عامر خان اور دیگر ملزمان عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے فاروق ستار سمیت 60 ملزمان پ ردو مقدمات میں فرد جرم عائد کردی۔ فرد جرم  کے مطابق مقدمے میں مفرور ایم کیو ایم کے بانی نے 22 اگست 2016 کو کراچی پریس کلب کے باہر اشتعال انگیز تقریر کی، ملزمان نے اس تقریر میں سہولت کاری کی، تقریر میں ملکی سالمیت اور ملکی بغاوت کا اعلان کیا گیا، ایم کیو ایم کے بانی نے نجی ٹی وی چینلز کے دفاتر پر حملہ کرنے کا بھی کہا۔ عدالت نے ملزمان سے استفسار کیا کہ کیا آپ لوگوں نے یہ سنا جس پر کمرہ عدالت میں موجود تمام ملزمان کا بیک وقت صحت جرم سے انکار کیا، جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کچھ تو خدا کا خوف کریں اور سچ بولیں کیا ایسا کچھ نہیں کہا جس پر ملزمان نے ایک بار پھر دہرایا کہ ہم نے ایسا کچھ نہیں سنا۔ واضح رہے کہ 22 اگست سے قبل ایم کیو ایم کے بانی نے پارٹی کے کارکنوں سے خطاب کے دوران ملک کے اداروں کے خلاف اشتعال انگیز باتیں کی تھیں جس پران سمیت کئی دیگر پارٹی رہنمائوں کے خلاف مقدمات درج کئے گئے تھے۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *