• صفحہ اول
  • /
  • نگارشات
  • /
  • یعقوب: ہندوستانی فلموں کا عظیم اداکار، جو اب ہمیں یاد نہیں۔۔۔احمد سہیل

یعقوب: ہندوستانی فلموں کا عظیم اداکار، جو اب ہمیں یاد نہیں۔۔۔احمد سہیل

فلی نام : محبوب
دیگر نام : یعقوب خان ۔۔۔ محبوب خان،
پیدائش 1904
مقام پیدائش جبل پور، مدھیہ پردیش، (بھارت )
یعقوب ایک پٹھان خاندان میں پیدا میں پیدا ہوئے تھے۔
1958 میں ان کی موت برج کینڈی ہسپتال بمبئی، مہاراشٹر، بھارت میں گردے کی تکلف اور حرکت قلب بند ہونے سے ہوئی۔موت کے وقت عمر 54 سال تھی۔انھوں نے اپنے فلمی کیریئر کا آغاز ایک ہیرو کے طور پر کیا اور بعد میں ایک درجن فلموں میں مزاحیہ کردار ادا کیے۔
یعقوب نے شروع میں موٹر مکینکس اور چھوٹے موٹے کام کیے ،پھر وہ گھر سے بھاگ کر ممبئی پہنچے اور انھیں ایک بحری ” مدرا” کے باورچی خانے ( رسوئی) میں ملازمت مل ۔ انہوں نے یورپ کے کئی ممالک اورلندن کے سفر کرنے کے بعد بحری جہاز کی ملازمت کو خیر باد کہہ کر  برسلز اور پیرس  کے درمیان ایک سیاح گائیڈ کے طور پر بھی کام کیا پھر وہ کولکتہ واپس آئے  اور اس کے بعد 1924 میں روزگار کی تلاش میں ممبئی آئے اور شاردا فلم کمپنی میں شمولیت اختیار کی۔

یعقوب ہالی وڈ کے اداکاروں ایڈی پولو، ڈگلس فیر بینک سینئر، والس بیری، ہمفرے بوگارڈ، سے متاثر تھے ۔ 1925 میں شادرا فلم کمپنی کی جانب سے ہدایت کار بالا جی پرندکار فلم بنائی اور یوں انھوں نےاپنی پہلی فلم ” باجی راؤ مستانی” میں کام کیا۔ ( اسی کہانی پر 2016 میں   بھی فلم بنی ہے ، اس میں رنویرسنگھ ،دیپیکا  اور پریانیکا چوپڑا نے کام کیا تھا) جس میں ستار نواز ماسٹر وٹھل نے بھی کام کیا تھا۔ ان کی پہلی ٹاکیز فلم ” میری جان 1931 میں بنی۔جو ان کی شہرت کا سبب بنی۔ اس فلم کے ہدایت کار پرفولا گھوش تھے اور اداکاروں میں ماسٹر وٹھل، محبوب خان اور زبیدہ نے بھی اداکاری کے جوہر دکھائے تھے۔

1940 میں محبوب خان کی فلم ” عورت” میں یعقوب نے ایک غصیلے اور ناراض بیٹے کا کردار ادا کیا۔۔ پھر محبوب خان نے اسی فلم کو 1957 میں اپنی مشہور فلم ” مدر انڈیا” کے نام سے دوبارہ بنایا۔ جس میں یعقوب والا کردار سنیل دت نے ادا کیا۔ 1951 میں کے۔ اوجھا کی ہدایت کاری میں بننے  والی فلم “ہلچل” میں ان کی اداکاری بام عروج پر تھی۔ اس فلم میں یعقوب کے ساتھ دلیپ کمار، نرگس، ستارہ دیوی نے بھی کام کیا تھا۔ یہ یعقوب کی پسندیدہ فلم تھی۔

اس زمانے میں ان کا نام بڑے مزاحیہ اداکاروں جانی واکر، اور گوپ کے ساتھ آنے لگا۔ اسی وقت یعقوب  پرتھوی راج کپور، چندر موہن سے زیادہ معاوضہ لیا کرتے تھے۔اس کے بعد دلیپ کمار، راج کپور اور دیوآنند کے نام آتے ہیں۔ اس زمانے میں یعقوب کو اداکاروں میں سب سے زیادہ ساٹھ (60) روپے  ماہانہ تنخواہ ملتی تھی۔ اس زمانے میں فلم چالیس (40) ہزار روپے  میں بن جاتی تھی۔ یعقوب 1930 سے 1950 تک چندر موہن اور شیام کے ساتھ ہندوستانی فلموں پر چھائے رہے۔ یعقوب نے 1930 کی دہائی میں تین   فلمیں ” ساگر کا شہر”،” اس کی تمنا” ۔۔۔ اور 1947 میں ” آئی ” ( ماتھی زبان میں آئی” ماں ” کو کہتے ہیں) بنائیں۔

” ساگر کا شہر” میں ببو، پیپسی پٹیل، سنکارا پرساد، راجہ مہدی، اور ڈیوڑ نے اداکاری کی تھی۔ ان کی ہدایت کاری میں 1939 میں فلم ” اسکی تمنا” بنائی گئی۔ اس فلم میں یعقوب کے ساتھ بدوایڈوانی،، کوشیلا، شکنتلا پرشاد، ستیش اور پولی نے کام کیا۔ 1947 میں انھوں نے اپنی آخری فلم ” آئی” (ماں) بنائی جس میں سلوچنا چیٹرجی، ، مسعود، جانک داس، شیلا نائیک   اور اشرف خان شریک تھے۔ اس فلم کے سنگیت کار ” ناشاد ( شوکت دہلوی) تھے۔ اسی فلم میں گلوکارہ مبارک بیگم نے اپنا پہلا فلمی گانا گایا تھا۔ فلم ” آئی” کے ساؤنڈ  ریکارڈسٹ یعقوب کے کزن علاؤالدین  تھے۔ یہ فلم بری طرح فلاپ   ہوئی۔۔ جس کو یعقوب اپنی زندگی کی سب سے بڑی غلطی تسلیم کرتے تھے۔ 

وہ ہیرو ، مزاحیہ اور ولن کرداروں میں مصروف اور کامیاب رہے۔ ان کی پہلی فلم ” باجی راؤ  مستانی” 1925 میں بنی۔ ان  کی آخری فلم کانام ” ٹین او کلاک” (دس بجے) تھا یہ فلم 1958 میں ریلز ہوئی۔ انھوں نے بتیس  فلموں میں کام کیا۔ یعقوب کی چند اہم فلموں میں” ملاپ،زینت ، پتنگا، واراث، حویلی، عدالت، تیں سو دن بعد،ہلچل   اور بے قصور شامل ہیں۔

یعقوب صاحب نے 34 سالوں کے کیریئر میں 300 سے زیادہ فلموں میں کام کیا۔ فلمیں بھی بنائی فلم ساز اور ہدایت کار بھی رہے۔یعقوب بہت مذہبی انسان تھے۔ سوم صلوۃ کے پابند تھے۔ ان کے دوست احباب ان کو “مولانا” کہتے تھے۔ وہ بہت ملنسار ، مرنجاں مرنج  اور باغ وبہار شخصیت کے مالک تھے۔ اچھے لطیفہ گو بھی تھے۔ یعقوب کو بلیرڈ کھیلنے کا بہت شوق تھا۔ انھوں نے اپنے تیس  سال  کے فلمی کیرئیر میں شوٹنگ کرتے ہوئے کبھی نگار خانے   کا کھانا نہیں کھایا۔ ان  کی شریک حیات کانام ” لکشمی بائی” تھا۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *