بانوے نیوز بھوٹان سپیشل۔۔۔معاذ بن محمود


آج کا دن

ریاست بھر میں امن کا دور دورہ ہے۔ راوی سست ہے لہذا اب تک چین کا چ ہی لکھ پایا ہے۔ راوی سے سست روی کی شکایت کرو تو کہتا ہے  تمہارا نظام سمجھنے میں وقت لگتا ہے۔ ریاستی نظام کی بڑھتی رفتار سے البتہ تمام ذی شعور نہایت ہی خوش ہیں۔

عدالتی خبریں
مملکت بھوٹان میں چیف الیکشن کمیشن نے پچھلے دنوں دو نمبر سانڈے کے تیل اور غیر موثر قبض کشا پھکی پہ از خود نوٹس لیا۔ یہ مقدمہ خوب اخبارات کی زینت بنا۔ صدر بھوٹان نے اس مقدمے میں گواہ کی حیثیت سے حصہ لیا۔ شنید ہے کہ صدر سات بار پھکی کے غیر آزمودہ ہونے پر آبدیدہ ہوئے۔ چیف جسٹس نے ذاتی طور پر کم سے کم دو درجن ایسے افراد کی نشاندہی فرمائی جو جعلی سانڈے کا تیل بیچ رہے ہیں۔ بھوٹان کی وزارت صحت نے حکام کو یقین دہانی کروائی کہ مضر صحت سانڈے کے تیل کے خلاف بھرپور کاروائی کی جائے گی اور وزارت عنقریب اصلی خالص گلگتی سلاجیت پہ خصوصی سبسڈی جاری کرے گی۔

عسکری احوال

بھوٹان کا ادارہ آئی ہیو پی آر پچھلے چار سال میں تین کامیاب فلمیں سنیما میں پیش کر چکا ہے۔ یہ بات ادارے کے سربراہ نے گزشتہ روز تین ماہ میں بارہویں ناکام فلم کی رونمائی تقریب میں بتائی۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ بھوٹانی نمبر ون ایجنسی وائے ایم آئی اب تک تین کامیاب رئیلٹی شو پیش کر چکی تھی۔ ان رئیلٹی شوز میں پینتیس پنکچر دھرنہ، پاجامہ سکینڈل دھرنہ اور حال ہی میں نشر ہونے والا توہین رسالت دھرنہ شامل ہیں۔

سیاسی منظرنامہ

افواج بھوٹان چونکہ سیاست میں حصہ نہ لینے کا حلف اٹھاتی ہیں لہذا الیکشن میں باقاعدہ پارٹی رجسٹر کرانے سے قاصر ہیں۔ ان حالات میں مملکت بھوٹان نے گلی ڈنڈے کے سابق کپتان کو اپنا نمائندہ متعین کر کے الیکشن میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا۔ گلی ڈنڈے کے سابق کپتان ڈنڈے کے ذریعے گلیاں پھڑکانے کے ماہر سمجھے جاتے ہیں البتہ ان کے ناہنجار مخالفین اس حقیقت کو ان پہ ذاتی حملے کرنے کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ کپتان کا کہنا ہے کہ وہ ڈنڈوں سے گلیاں پھڑکانے کا شغف اب مکمل طور پہ ترک کر چکے ہیں اور اب ان کا پورا ارتکاز ریاست بھوٹان سے ہمپٹی ڈمپٹی کو زمین پہ گرانے کا ہے۔ ہمپٹی ڈمپٹی ریاست بھوٹان کی حکومت میں ہوتے ہوئے بھی اپوزیشن کرتے ہیں اور دیوان پہ گرنے سے انکاری ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ مجھے چونکہ بھوٹان کی عوام نے دیوار پہ بٹھایا ہے لہذا اتارنے یا گرانے کا حق بھی انہی کا ہے۔ ذرائع کے مطابق بھوٹان کی ریاست کے اندر ریاست کے شاہ اور ان کے بندے گھوڑوں سمیت ہمپٹی ڈمپٹی کو گرانے کے قریب ہیں۔

صوبہ دودھ اور شہد خواہ کے حالات

عوام خوش و خرم ہیں۔ ہوں بھی کیوں نہ۔ یہاں ادارے اپنے آئینی فرائض سے دو قدم آگے بڑھ کر عوامی خدمت میں مصروف جو ہیں۔ حال ہی میں وزیر پانی و بجلی نے دودھ اور شہد خواہ کے دور دراز علاقے میں موجود ہسپتال کا دورہ کیا اور جعلی دوائیوں پہ تین خاکروب معطل کر دیے۔ بھوٹان کے صوبہ دودھ اور شہد آباد کے شہر پھرشاور کے وزیر اعلی کا کہنا ہے کہ شہر میں سڑکوں کو عارضی طور پر کھود کر نہروں میں تبدیل کر دیا گیا ہے تاکہ باسیان پھرشاور کو شہر وینس کا مزا مل سکے۔ ان کا کہنا ہے کہ فی الحال عوام پانی کی جگہ گرد و غبار کے دریاؤں سے گزارا کریں اور سڑکوں کی واپسی کے لیے ان کی جماعت بھوٹان تحریک انصاف کو ووٹ دیں بصورت دیگر انہیں کھدی ہوئی نہروں میں اگلے پانچ سال گزارنے پڑیں گے۔ عوام الناس کا ماننا ہے کہ ہمارے چاہنے نہ چاہنے کی فکر نہ کریں، نصر من اللہ و فتح قریب، انشاءاللہ آپ کو فرشتوں کی امداد حاصل رہے گی۔

صوبہ فساد کی خبریں

صوبہ فساد بھوٹان کا سب سے بڑا اور سیاسی منظرنامے میں اہمیت کا حامل ہونے کی وجہ سے فساد فی الارض کا شکار ہے۔ یہاں سابق کپتان گلی ڈنڈہ اور سابق وزیراعظم ہمپٹی ڈمپٹی کے درمیان جنگ کا سا سماں ہے۔ حال ہی میں ہمپٹی ڈمپٹی نے خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ کا بیان دہرایا جس کے تحت بھوٹان کے شہری ہمسایہ ممالک میں دہشتگردی کے مرتکب پائے گئے۔ صوبہ فساد میں اس وقت یہ رائے قائم کی جارہی ہے کہ ہمپٹی ڈمپٹی چونکہ جرنیل نہیں لہذا اسے ایسا بیان دینے کی پاداش میں غدار قرار دیا جائے۔

شہر کرانچی سے

بھوٹان کے شہر کرانچی میں سابق گلی ڈنڈہ کپتان نے کل رات کامیاب ترین جلسے سے خطاب فرمایا۔ ذرائع کے مطابق جلسے میں ساڑھے تین لاکھ کرسیوں، بارہ کروڑ فرشتوں اور پانچ سو بیس افراد نے شرکت فرمائی۔ روح پرور خطاب میں کپتان نے اپنا آزمودہ شوکت خانم منجن اور کرپشن ٹوتھ پیسٹ کامیابی سے بیچا۔ شہر کرانچی کے باسیوں کا کہنا ہے کہ ہم کپتان کی کال پہ لبیک کہتے ہیں اور انشاءاللہ اپنا ووٹ اسی کو دیں گے جسے الٹاف بھائی کہیں گے۔

کوٹے کی خبریں

بھوٹان کے شہر کوٹے سے فی الحال کوئی خبر موصول نہیں ہوئی۔ ذرائع کے مطابق کوٹے سے تعلق رکھنے والے چئیرمین سینیٹ سے جب رابطہ کیا گیا تو وہ “اپنا کام پورا باں پھڑائے نورا” کہتے واپس خراٹے لینے لگے۔

انٹرٹینمنٹ کی خبریں

بھوٹان کے پرائیویٹ ٹی وی چینل تم ٹی وی جسے چیف جسٹس آف بھوٹان چاچے رحمتاں نے عریانی پہ شوکاز نوٹس جاری کیا، نے عدالت میں بیان دیا جس کے مطابق تم ٹی وی پہ دکھائے جانے والا مواد بعینہ اسی لائف سٹائل کی ترجمانی کرتا ہے جو ریاست بھوٹان کے سیاستدانوں، جرنیلوں اور ججوں کے اہل و عیال میں نافذ ہے۔ اس بیان کے بعد جسٹس چاچے نے ریمارکس میں “توبہ استغفر اللہ” تحریر فرمایا۔ چیف جسٹس چاچے نے یہ بھی کہا کہ ان تم ٹی وی ان کی نقل نہ کرے کیونکہ یہ لائف سٹائل انہی پہ جچتا ہے۔ انہوں نے اقراء عزیز کے برقعہ پوش غریب خاتون کا کردار نبھانے پہ تم ٹی وی کی سرزنش کی اور ہدایت دیں کہ اقراء عزیز پہ صرف چست لباس ٹھیک لگتا ہے۔ عدالت نے اگلی سماعت غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کر دی۔

معاذ بن محمود
معاذ بن محمود
انفارمیشن ٹیکنالوجی، سیاست اور سیاحت کا انوکھا امتزاج۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *