صنفی مساوات ۔۔۔ قمر سبزواری

اس لڑکی کو کس نے ہائر کیا؟

سر آپ چھٹی پر تھے، آپ کی دی ہوئی اتھارٹی کو استعمال کرتے ہوئے

میں نے آفر لیٹر سائن کیا تھا۔

سر آپ کو یہ جان کر خوشی ہو گی کہ آپ کی ہدایات پر عمل پیرا ہوتے ہوئے

ہم نے صنفی مساوات کی خاطر  اس بار کسی مرد کی بجائے ایک خاتون کو ہی موقع دیا۔

اس کو فارغ کر دو۔۔۔۔۔

سر میں پوچھ سکتا ہوں۔۔ میرا مطلب ہے۔۔۔۔؟

ابے چغد، یہ بالکل فلیٹ ہے اوپر سے لباس دیکھو کیسا پہنتی ہے۔

کوئی کسٹمر ریسپشن پر کچھ دیر رکے گا تو کچھ ڈیل کرے گا نا۔

Save

Save

قمر سبزواری
قمر سبزواری
قمر سبزواری ۲۲ ستمبر ۱۹۷۲ عیسوی کو راولپنڈی میں پیدا ہوئے۔ ابتدائی تعلیم کے بعد ملازت شروع کی جس کے ساتھ ثانوی تعلیم کا سلسلہ جاری رکھا۔ صحافت میں گریجوئیشن کرنے کے بعد کالم نگاری اور افسانوی ااادب میں طبع آزمائی شروع کی۔ کچھ برس مختلف اخبارات میں کالم نویسی کے بعد صحافت کو خیر باد کہ کر افسانہ نگاری کا باقائدہ آغاز کیا۔ وہ گزشتہ دس برس سے متحدہ عرب امارات میں مقیم ہیں۔ اُن کا پہلا افسانوی مجموعہ “پھانے” کے نام سے شائع ہوا۔دو مزید مجموعے زیر ترتیب اور دو ناول زیر تصنیف ہیں ۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *