سو سال قبل ملنے والی ممی بارے اہم انکشاف

مصر میں سو سال قبل ملنے والی ممی کی شناخت کے حوالے سے اہم انکشاف نے ماہرین آثار قدیمہ کے مخمصے کو حل کر دیا۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق 1915 میں مصر کے نواحی علاقے بیت البرشہ کے قبرستان میں واقع ایک مقبرے سے دریافت ہونے والی چار ہزار سال پرانی ممی کے سر کو ایف بی آئی نے فرانزک لیب کی مدد سے شناخت کرلیا ۔ یہ ممی اس وقت دریافت ہوئی جب ماہرین آثار قدیمہ مصر اور یورپ میں صدیوں تک حکمرانی کرنے والے شاہی خاندان کے چوتھے گورنر اور ان کی اہلیہ کے مقبرے پر کام کر رہے تھے۔

Advertisements
julia rana solicitors

تاہم ماہرین آثار قدیمہ دریافت ہونے سر کی جنس کا تعین نہیں کر سکے تھے۔ کچھ کا خیال تھا کہ یہ عظیم شاہی خاندان کے گورنر کا سر ہے، جبکہ چند محققین اسے گورنر کی اہلیہ کا سر قرار دیتے تھے۔ جنس کو جانچنے کے لئے ممی کے سر کے کئی ٹیسٹ کئے گئے لیکن ناکامی کا سامنا رہا تھا کیونکہ ماہرین کو ڈی این اے کا سیمپل نہیں مل رہا تھا۔ ایف بی آئی کی بائیولوجسٹ نے اس مشکل کو حل کرنے کی ٹھانی اور ممی کے دانت کو باریکی کے ساتھ ڈرل کر کے دانت کے اجزا کو کیمیکل سے ملا کر ڈی این اے کی کاپی حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئیں۔ ڈی این اے کی جانچ میں کروموسوم کی تعداد اور ساخت سے پتا چلا کہ ممی کا یہ سر ایک مرد یعنی گورنر کا ہے۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply