• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • انسانی گوشت کھانے سے جسم میں کیاخوفناک تبدیلی آتی ہے؟

انسانی گوشت کھانے سے جسم میں کیاخوفناک تبدیلی آتی ہے؟

ایک صدی قبل تک دنیا میں آدم خور قبائل کی بہتات تھی۔ اگرچہ اب ان کی تعداد انتہائی کم ہو گئی ہے لیکن ایسے قبائل اب بھی بعض ممالک میں پائے جاتے ہیں جو انسانوں کا گوشت کھاتے ہیں۔

لیکن سوال یہ ہے کہ کیا انسانوں نے اخلاقی پہلو کو مدنظررکھتے ہوئے آدم زادوں کو کھانا ترک کر دیا تھا یا اس کی وجہ کچھ اور تھی؟

tripako tours pakistan

برطانوی اخبار   دی مرر کی رپورٹ کے مطابق اس کی وجہ انسانی گوشت سے لاحق ہونے والی وہ لاعلاج بیماری تھی جو کچھ ہی عرصے میں انسان کو موت کے گھاٹ اتار دیتی ہے۔

اس بیماری کا نام کورو (Kuru) ہے۔ رپورٹ کے مطابق انسانی گوشت میں پریونز (Prions)نامی انفیکشن کرنے والے پروٹین کے اجزاءپائے جاتے ہیں جو آدم خوروں کے کورو میں مبتلا ہونے کا باعث بنتے ہیں۔

یہ بیماری آدم خوروں کے دماغ پر اثرانداز ہوتی ہے اور چند ماہ میں ہی اس میں اتنے سوراخ کر دیتی ہے کہ اس کی حالت اسفنج کے جیسی ہو جاتی ہے۔

کورو کے معنی کانپنا یا خوف سے کانپنا کے ہیں۔ اس بیماری میں بھی انسان کا جسم تھرتھر کانپنے لگتا ہے، اسے چلنے، بولنے، کھانے اور دیگر جسمانی حرکات میں مشکلات پیش آنے لگتی ہیں۔ چنانچہ اس کا یہ نام پڑ گیا۔

Advertisements
merkit.pk

رپورٹ کے مطابق کورو نامی یہ بیماری لاحق ہونے کے ایک سال کے اندر اندر آدم خور موت کے گھاٹ اتر جاتا ہے۔

  • merkit.pk
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply