ویمپائر زندگی کی طرف لوٹنے کا خواہشمند

برطانوی شہری ڈار کنیس ولیڈ ٹیپیس پچھلے 13 برس سے ایک ویمپائر کی زندگی گزار رہا ہے جس میں وہ جانوروں کا خون پینے کا عادی ہے لیکن اب وہ اپنی اس زندگی سے تنگ آچکا ہے ۔ برطانوی علاقے لنکا شائر کے رہائشی ڈارکنیس  نے 25 سال کی عمر میں اپنا نام بدل کر ڈار کنیس ولیڈ ٹیپیس رکھ لیا تھا اور خود کو ویمپائر کہنا شروع کر دیا تھا ۔ اس نوجوان کو دن کی روشنی سے خوف نہیں آتا لیکن رات ہوتے ہی یہ ایک لکڑی کے تابوت میں سوتا ہے اور گائے اور سور کا خون پیتا ہے ۔ ڈار کنیس نے بتایا وہ نو عمری میں ہی ویمپائر بننا چاہتا تھا جس کیلئے اس نے وہی طرزِ زندگی اختیار کرنے کا ارادہ کیا لیکن اب جب وہ دوستوں کے ساتھ باہر جاتا ہے تو اسے تضحیک کا نشانہ بنایا جاتا ہے جس کے باعث وہ اب اس زندگی سے جان چھڑا کر اپنی زندگی کو دوبارہ معمول پر لانا چاہتا ہے۔

  • merkit.pk
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply