• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • احسن اقبال نے نواز کے خلاف عدالتی فیصلے کے وقت پر سوال اٹھادیا

احسن اقبال نے نواز کے خلاف عدالتی فیصلے کے وقت پر سوال اٹھادیا

SHOPPING
SHOPPING

وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے سپریم کورٹ کی جانب سے نواز شریف کو پارٹی صدارت سے نااہل قرار دینے والے فیصلے کے وقت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے نے پاکستان مسلم لیگ ن کو سینیٹ انتخابات سے روک دیا تھا۔ پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ اور منصوبہ بندی احسن اقبال نے سوال کیا کہ کیا یہ فیصلہ سینیٹ الیکشن کے لیے کاغذاتِ نامزدگی کی آخری تاریخ سے قبل نہیں دیا جاسکتا تھا؟ عدالتِ عظمیٰ کے فیصلے نے سینیٹ الیکشن میں مسلم لیگ ن کے امیدواروں کو آزاد حیثیت میں انتخابات میں حصہ لینے پر مجبور کیا۔ عدالت کو اس بات کو سمجھنا چاہیے تھا کہ اس فیصلے کا براہِ راست اثر سینیٹ الیکشن پر پڑے گا۔ جو سیاسی جماعت باقاعدگی کے ساتھ نشانہ بن رہی ہے وہ روز بروز مضبوط سے مضبوط تر ہوتی جارہی ہے۔ تمام سٹیک ہولڈرز کو چاہیے کہ وہ حکومتی اداروں کے درمیان ہم آہنگی کو فروغ دیں، کیونکہ ہم اداروں کے درمیان ٹکرائو کے متحمل نہیں ہو سکتے۔ مسلم لیگ ن کے رہنما نہال ہاشمی کی نااہلی کے بعد سینیٹ سیٹ کے لیے انتخاب کے دوران ارکان ِ پنجاب اسمبلی نے اتحاد کا مظاہرہ کیا۔ سینیٹ الیکشن کے بعد پاکستان مسلم لیگ ن ایوانِ بالا کی سب سے بڑی جماعت بن کر ابھری ہے، اور پاکستان مسلم لیگ ن کی کامیابی سے ملک میں جمہوریت ڈیل ریل نہیں ہوگی۔ اب وہ وقت گزر چکا ہے جب ملکی فیصلے سٹیبلشمنٹ کیا کرتی تھی، تاہم اب ملک کے 20 کروڑ عوام ایک سٹیبلشمنٹ بن کر ابھرے ہیں۔ حکمراں جماعت آئندہ الیکشن جیت جائے گی کیونکہ عوام ملکی معاشی پالیسیوں کو جاری دیکھنا چاہتے ہیں۔ جب عوام کے فلاح و ترقی کی بات کی جائے تو پاکستان نے خطے میں بھارت جیسے ممالک کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ کچھ مخصوص عناصر سینیٹ انتخابات کے حوالے سے شکوک و شبہات پیدا کرنا چاہتے تھے، تاہم جمہوریت کو پٹڑی سے اتارنے کی تمام کوششیں دم توڑ گئیں۔ پاکستان کے عوام میں اب سیاسی شعور اجاگر ہوچکا ہے، اور پاکستان کے غریب عوام اور مزدور طبقہ بھی سیاست کی اتنی ہی سمجھ رکھتے ہیں جتنا کہ پاکستان کے دانشور، وکلا اور صحافی حضرات رکھتے ہیں۔ ہمیں آئین کی پاسداری کرتے ہوئے ایک مضبوط اور مستحکم جمہوری نظام کی طرف بڑھنا چاہیے۔

SHOPPING
SALE OFFER

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *