اتحاد بین المسلمین

جو اتحاد بین المسلمیں کے علمبردار ہیں وہ اپنے مسلک پر قائم رہتے ہیں اور دوسرے کے مسلک کا احترام کرتے ہیں۔ یہ لوگ روداری اور برداشت کی تلقین کرتے ہیں۔ یہ کسی بھی دوسرے مسلک، مذہب اور نقطہ نظر کو فتوی نہیں لگاتے بلکہ برداشت اور ایسے پرامن مکالمے پر یقین رکھتے ہیں جس کا مطلب دوسروں کو قائل کرنا نہ ہو بلکہ ایک دوسرے کی بات کو بہتر انداز میں سمجھنا ہو یہ لوگ مذہب کو ریاستی نہیں سماجی تعلق کا ذریعہ سمجھتے ہیں اور کسی دوسرے پر اسلام کی کوئی مخصوص تشریح نافذ کرنے کی کوشش نہیں کرتے بلکہ ایک ایسی جدید فلاحی جمہوری سلامی ریاست کی بات کرتے ہیں جہاں اسلام کی آفاقی اقدار کو بالادستی حاصل ہو کسی مخصوص مسلک یا فرقے کی سوچ نہ نافذ کی جائے روداری اور برداشت والے اسلام میں کسی بھی مسلک کا شخص شامل ہو سکتا ہے جو دوسرے کے احترام پر یقین رکھتا ہو، وہ روداری اور برداشت رکھنے والے مسلمان کے طور پر کسی مخصوص تعبیر کا غلبہ نہیں چاہتا اور اپنے موقف کی آرام سے وضاحت پیش کرتا ہے روداری اور برداشت والا مسلمان کسی فرقے کا خاتمہ نہیں چاہتا بلکہ انتہا پسندی اور شدت پسندی کےخاتمے کی بات کرتا ہے اور تمام فرقوں کے مابین احترام اور برداشت کے کلچر کے فروغ کی کوشش کرتا ہے

دائود ظفر ندیم
دائود ظفر ندیم
غیر سنجیدہ تحریر کو سنجیدہ انداز میں لکھنے کی کوشش کرتا ہوں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *