چھوڑ دے ساری دنیا/محمد اقبال دیوان

سورت گجرات میں آٹھ برس کی دیو ناشی سنگھوی نے دکھشا لے لی ہے۔

اس فیصلے پر بھارت میں بڑی لے دے ہورہی ہے۔کہ کیا اتنی چھوٹی بچی کا یہ عمل درست ہے؟

والدہ کا کہنا ہے کہ دیوناشی نے تمام عمر ٹی وی نہیں دیکھا،اور دو سال کی عمر میں پہلا برت (روزہ)بھی رکھ لیا تھا۔

اس عالی شان تقریب میں امیت شاہ بھارت کے رانا ثنا اللہ کو شرکت کی دعوت تھی۔

وہ شریک نہیں ہوۓ کہ،اس سے ان کے سیاسی مقام پر حرف آتا۔
امیت شاہ خود بھی جین ہیں
ارب پتی ہیروں کے تاجر کی بیٹی،اپنے والدین کی دوسری بیٹی “دیوناشی”،اب جین مذہب کی رِیت رواج سے راہبہ بن کر رہے گی۔

اس وقت وہ سجاوٹ اور دولت دکھاوے کی انتہا پر ہے۔تاج بھی اصلی ہیروں کا ہے۔مگر اس تقریب کے اختتام پر   اس کے بال مونڈھ کر سادہ کاٹن کی ساڑھی پہنادیں گے۔
ایسی تقریبات بہ یک وقت بیلجئم اور ممبئی میں بھی ہوں گی جہاں ان کا بڑا کاروبار ہے۔
دنیا کی مالی کثافت سے پرے
ہات میں چلتے وقت جھاڑو ہوگی
جس سے وہ راستے میں کیڑوں کو ایک طرف کردے تاکہ کچلے نہ جائیں

جیو ن بھرے وجود کا لحاظ کرتے ہیں۔۔جین  گوشت ،مچھلی ،انڈے کچھ نہیں کھاتے۔

جین لوگوں کا ہیروں کی تجارت پر قبضہ ہے۔بہت مالدار کمیونٹی ہے۔بہت سے میمن بھی پہلے جین تھے۔ارب پتی جین لوگوں میں دکھشا لینے کا رجحان عام ہے۔
پورے پورے خاندان دکھشا لیتے ہیں ۔

تین برس کاProbation periodہے۔اس دوران ایک ٹرسٹ ان کی جائیداد کا نگران ہوتا ہے ،

ارادے بدل جائیں تو گھر دھندہ سب واپس لوٹا دیتے ہیں

ورنہ ٹرسٹ اسے اپنی سوجھ بوجھ سے reinvest کردیتا ہے۔اس میں واپسی ہوجاتی ہے۔

خاندان دکھشا لے تو مرد ایک طرف چل پڑتے ہیں،خواتین ایک آشرم میں ۔۔۔۔ساری عمر کی جدائی ہے!

اب ان کا تمام عمر ملاپ نہیں ہوگا۔

ایک بہترین شاندار تقریب میں دولت کے بھرے تھال کو لات مارکے اُلٹ دیتے ہیں۔

مدعا یہ ہے کہ دولت کو ہم نے پیر کی خاک جانا۔

بھارت کے مالدار ترین افراد میں دوسرے نمبر کے گوتم آڈانی اور پائلٹ ابھی نند ن،جنہوں نے گرفتاری پر کہا تھا

Tea is fantastic

وہ بھی جین ہیں اور اداکارہ ٹینا منیم جو انیل امبانی کی بیگم ہیں وہ بھی جین ہیں

اب پتہ چلا کہ اس کی فی الفور رہائی میں کون کون Active تھا۔آڈانی اور امیت شاہ دونوں جین ہیں

آڈانی ان چھ گجراتی تاجروں میں شامل ہیں جو مودی سرکار کے بہت بڑے سرپرست ہیں

امیت شاہ تو ہیں ہی ان کے وزیر داخلہ

جین کمیونیٹی ایک بے حد مالدار اور آپس میں جڑی ہوئی کمیونٹی ہے

سو پائلٹ ابھی نندن کی رہائی کے لیے بیسیوں طریقے کا دباؤ ڈالا ہوگا

اسی وجہ سے اسے نوکری پر بھی واپس لے لیا گیا اور ان کی جانب سے بہادری کے تمغے سے بھی سرفراز کیا گیا۔

ان کو مشہور ترین مندر راجھستان میں شری پاوا پوری تیرتھ دھام ہے۔

دکھشا کا احوال مزید تفصیل سے پڑھنا ہو تو کولمبیا یونیورسٹی کے بھارت نژاد پروفیسر سیکھ تو مہتا کی کتابThe maximum city میں پڑھیے گا۔ یہ دنیا کے  کسی بھی شہر پر لکھی جانے والی سب سے دل چسپ کتاب ہے۔

Advertisements
julia rana solicitors london

نوٹ: مضمون میں بی بی سی کی ایک خبر سے مدد لی گئی ہے!
دیوناشی سے متعلق تمام تصاویر ان کی سائیٹ سے لی گئیں!

  • merkit.pk
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply