• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • ’16 دسمبر 2014 کو ملکی تاریخ میں یوم سیاہ کے طور پر یاد رکھا جائے گا’

’16 دسمبر 2014 کو ملکی تاریخ میں یوم سیاہ کے طور پر یاد رکھا جائے گا’

سانحہ آرمی پبلک اسکول (اے پی ایس) کے شہداء کی تیسری برسی پر اپنے پیغام میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ 16 دسمبر 2014ء کا دن ملکی تاریخ میں یوم سیاہ کے طور پر یاد رکھا جائے گا۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ سانحہ آرمی پبلک اسکول نے قوم میں دہشت گردی کے خلاف تاریخ ساز وحدت کو جنم دیا اور اس واقعے کے بعد اس قوم نے دہشت گروں کے خلاف فیصلہ کن معرکہ لڑنے کا ارادہ کیا۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستانی قوم جیسی قربانیاں شاید ہی کسی دوسری قوم نے دی ہوں، دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قوم نے جان ومال کی قربانیاں دی ہیں۔

tripako tours pakistan

انہوں نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت بہادر افواج اور سیکیورٹی اداروں نے دہشت گردوں کو شکست دی اور ان کی دن رات کی محنت اور قربانیوں سے دہشت گردوں کی کمر ٹوٹ چکی ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ قوم اپنے شہداء کو خراجِ عقیدت پیش کرتی ہے اور شہداء کے خون سے لکھے اس باب کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پشاور کے آرمی پبلک اسکول کے شہداء کی تیسری برسی پر اپنے پیغام میں کہا کہ سانحہ اے پی ایس میں معصوم بچوں کی شہادت پر پوری قوم آج بھی سوگوار ہے۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ قوم شہدائے  اے پی ایس کی عظیم قربانی کو کبھی نہیں بھلا پائے گی، جن کے بہنے والے خون سے قوم کو امن نصیب ہوا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ اے پی ایس کے بچو ں نےاپنے لہو سے تاریخ لکھی ہے اور شہید بچوں کے خون کا قرض دہشت گردوں کا صفایا کرکے اتارنا ہے۔شہباز شریف نے کہا کہ آرمی پبلک اسکول پشاور کے بچوں نے بہادری اور جرأت کی نئی تاریخ رقم کی، شہید ہونے والے بچے اور اساتذہ پوری قوم کے ہیرو ہیں اور رہیں گے۔انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دہشت گردی کی لعنت کو جڑ سے اکھاڑنے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔

Advertisements
merkit.pk

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ ‘آج جبکہ ہم اے پی ایس پشاور کے شہداء کو یاد کر رہے ہیں تو ہمیں اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ دوبارہ ایسا سانحہ کبھی رونما نہ ہو اور ہماری نئی نسل اپنے خوابوں کی تکمیل کے لیے محفوظ طریقے سے پروان چڑھ سکے’۔

  • merkit.pk
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply