روزانہ کتنے قدم چلنا آپ کا وزن کم کرسکتا ہے؟

ایک نئی تحقیق سامنے آئی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ روزانہ 10 ہزار قدم چلنے سے بھی وزن کم نہیں ہوتا۔

برطانوی اخبار ”دی انڈیپنڈنٹ“ کے جریدے اوبیسٹی کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ 10 ہزار قدم چلنا درحقیقت وزن میں اضافے کو نہیں روک سکے گا اور نہ ہی وزن میں کمی کا باعث بنے گا۔

طالبات پر تجربات
رپورٹ کے مطابق برطانوی یونیورسٹی کے شعبہ ورزش سائنس کے محققین نے ڈائیٹیٹکس اور فوڈ سائنسز کے شعبہ کے ماہرین کے ساتھ مل کر یونیورسٹی میں نئے افراد کے ایک گروپ پر ایک مطالعہ کیا۔

کالج کے پہلے 6 مہینوں کے دوران 120 طالبات کے ڈیٹا کا تجزیہ کیا گیا جنہوں نے مرحلہ وار اس تجربے میں حصہ لیا، جو یومیہ 10 ہزار، ساڑھے 12 ہزار یا 15 ہزار قدم ہفتے میں مسلسل 6 دن چلتی رہیں۔

اعداد و شمار میں طالبات کے قدموں اور کیلوریز کی تعداد اور ان کا وزن بھی شامل تھا۔

وزن میں کمی کے بجائے اضافہ
محققین نے دریافت کیا کہ چلے گئے قدموں کی تعداد خواتین طالب علموں کو زیادہ وزن حاصل کرنے سے نہیں روک سکی، یہاں تک کہ شرکاء میں سے جو روزانہ 15 ہزار قدم چلتی ہیں ان کا بھی وزم کم نہیں ہوا۔

مطالعہ کی مدت کے اختتام پر یہ بھی پایا گیا کہ طالبات نے اوسطاً 1.5 کلو گرام کا وزن بڑھایا، جو کہ اضافی وزن ہے۔

محققین نے مزید لکھا کہ قدموں کی تعداد کے لحاظ سے شرکاء میں وزن میں کمی کا نہ ہونا ایک حیران کن نتیجہ ہے، کیونکہ جسمانی سرگرمیاں ہر قدم کے ساتھ بتدریج بڑھتی ہیں اور اس کے نتیجے میں توانائی کی کھپت میں اضافہ ہوتا ہے اور جسم کی توانائی کے توازن میں تبدیلی آتی ہے۔ چلنے کے دیگر فوائد تحقیق کے دوران برِگھم ینگ یونیورسٹی کے فزیکل ایکسرسائز سائنسز کے پروفیسر بروس بیلی نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ اکیلی ورزش وزن کم کرنے کا ہمیشہ سب سے مؤثر طریقہ نہیں ہے، لیکن مطالعہ کے نتائج سے پتہ چلتا ہے کہ قدموں کی تعداد وزن کو برقرار رکھنے یا وزن میں اضافے کو روکنے میں مؤثر ذریعہ نہیں ہوسکتی۔

تاہم محققین کی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ زیادہ قدم چلنے کا طلباء کے ”جسمانی سرگرمی کے نمونوں“ پر مجموعی طور پر مثبت اثر پڑتا ہے اور اس کے ”دیگر اخلاقی اور صحت کے فوائد“ بھی ہوسکتے ہیں۔

Advertisements
julia rana solicitors

بیلی نے نتیجہ اخذ کیا کہ زیادہ قدم چلنے کی سفارشات کا سب سے بڑا فائدہ یہ ہے کہ وہ بیٹھے رہنے کے طرز زندگی سے باہر نکلیں۔

  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply