• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • ٹی ٹوئنٹی ولڈ کپ؛بھارت آئے یا انگلینڈ، ہم تیار ہیں ،پاکستان

ٹی ٹوئنٹی ولڈ کپ؛بھارت آئے یا انگلینڈ، ہم تیار ہیں ،پاکستان

ٹی 20 ورلڈ کپ کے پہلے سیمی فائنل میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو 7 وکٹوں سے شکست دے دی۔ پاکستان کی جانب سے عمدہ کھیل پیش کیا گیا۔ نیوزی لینڈ نے پاکستان کو جیت کیلئے 153 رنز کا ہدف دیا۔

آئی سی سی ٹی 20 ورلڈ کپ کا پہلا سیمی فائنل سڈنی میں پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان کھیلا گیا۔ پاکستان نے بہترین کھیل پیش کرتے ہوئے 7 وکٹوں سے شکست دی۔ بھارت آئے یا انگلینڈ پاکستان فائنل جیتنے کے لیے پر امید ہے۔

پاکستان نے 1992 کے ورلڈکپ میں بھی نیوزی لینڈ کو سیمی فائنل میں شکست دی تھی اور پھر اس کا مقابلہ انگلینڈ کے ساتھ فائنل میں ہوا تھا۔ اس بار بھی پاکستان نے نیوزی لینڈ کو سیمی فائنل میں ہرا دیا اب دیکھتے ہیں کہ فائنل انگلینڈ کے ساتھ ہوتا ہے کہ بھارت کے ساتھ۔

پاکستان تیسری بار ٹی 20 ورلڈ کپ کے فائنل میں پہنچ گیا۔ اس سے قبل پاکستان 2007 کے فائنل میں رنر اپ اور 2009 میں عالمی چیمپئن بنا تھا۔ پاکستان سب سے زیادہ 6 ورلڈ ٹی 20 سیمی فائنل کھیلنے والی ٹیم ہے۔

نیوزی لینڈ کے دیئے گئے 153 رنز کے تعاقب میں پاکستان کے بیٹرز نے عمدہ کھیل پیش کیا۔ اوپنر محمد رضوان اور کپتان بابر اعظم نے بہترین کھیل پیش کیا اور دونوں کی پارٹنر شپ میں پاکستان نے 105 رنز مکمل کیے۔ محمد رضوان نے کھیل کا اچھا آغاز کرتے ہوئے پہلی گیند پر ہی چوکا لگا دیا۔

محمد رضوان کو عمدہ بیٹنگ کرنے کی وجہ سے مین آف دی میچ دیا گیا۔

پاکستان نے 20 ویں اوور میں نیوزی لینڈ کی جانب سے دیا گیا ہدف حاصل کر لیا۔ قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم اپنی پہلی گیند پر آوٹ ہونے سے بال بال بچ گئے، ٹرینٹ بولٹ کی گیند پر بابر اعظم کا کیچ ڈراپ ہو گیا۔

محمد رضوان اور بابر اعظم نے بہترین کھیل پیش کرتے ہوئے مجموعی 105 رنز مکمل کیے۔ بابر اعظم اپنی ففٹی مکمل کرنے کے بعد 42 گیندوں پر 53 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے جبکہ محمد رضوان بھی 36 گیندوں پر ففٹی کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

کپتان بابر اعظم کے آؤٹ ہونے کے بعد محمد حارث میدان میں اترے۔ محمد رضوان 43 گیندوں پر 57 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

پاکستان کے 151 رنز پر 3 تیسرا کھلاڑی بھی آؤٹ ہو گیا۔ محمد حارث 26 گیندوں پر 30 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔ شان مسعود اور محمد حارث ناٹ آؤٹ رہے۔ شان مسعود نے 4 گیندوں پر 3 رنز بنائے۔

انگلینڈ کے ٹرینٹ بولٹ نے 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ مچل سینٹنر نے ایک وکٹ لی۔

نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پاکستان کے خلاف پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

قومی کرکٹ ٹیم کی جانب سے پہلا اوور شاہین شاہ آفریدی نے کرایا۔ پہلے اوور میں ہی نیوزی لینڈ کی پہلی وکٹ 4 رنز پر گر گئی۔ شاہین شاہ آفریدی نے فن ایلن کو ایل بی ڈبلیو آؤٹ کیا۔

نیوزی لینڈ کا دوسرا کھلاڑی 38 کے مجموعی رنز پر آؤٹ ہو گیا۔ اوپنر ڈیون کانوے 20 گیندوں پر 21 رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔ نیوزی لینڈ کا تیسرا کھلاڑی 49 کے مجموعی رنز پر آؤٹ ہو گیا۔ گلین فلپس 8 گیندوں پر 6 رنز بنا کر محمد نواز کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

117 کے مجموعی رنز پر نیوزی لینڈ کا چوتھا کھلاڑی بھی آؤٹ گیا۔ کین ولیمسن 42 گیندوں پر 46 رنز بنا کر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر پویلین لوٹ گئے۔ ڈیرل مچل نصف سینچری بنانے میں کامیاب ہوئے انہوں نے اچھا کھیل پیش کرتے ہوئے 35 گیندوں پر 53 رنز بنائے اور ناٹ آؤٹ رہے جبکہ جمی نیشم 12 گیندوں پر 16 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

نیوزی لینڈ نے مقررہ اوورز میں 4 کھلاڑیوں کے نقصان پر 152 رنز بنائے۔ چھٹے اوور میں پاکستان نے 50 رنز بنا لیے۔ شاہین شاہ آفریدی نے 4 اوورز میں 24 رنز دے کر 2 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا اور محمد نواز نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم کے کپتان نے ٹاس جیتنے کے بعد کہا کہ کیوی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔

قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے کہا کہ ٹاس جیت جاتے تو ہم بھی بیٹنگ کرتے جبکہ ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے اور ٹیم پراعتماد ہے جبکہ مومنٹم برقرار رکھیں گے۔ گزشتہ 3 میچوں میں ٹیم نے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس اچھے کھلاڑی ہیں اور میچ پر فوکس کر کے جیتنے کی کوشش کریں گے۔

سیمی فائنل میں قومی ٹیم کی قیادت بابر اعظم کر رہے ہیں اور ٹیم میں شاداب خان، شاہین شاہ آفریدی، شان مسعود، محمد رضوان، افتخار احمد، محمد نواز، نسیم شاہ، حارث رؤف، محمد وسیم جونیئر اور محمد حارث شامل ہیں۔

دونوں ٹیمیں میچ جیتنے کے لیے پر عزم ہیں۔ کیوی کپتان کا کہنا تھا کہ سیمی فائنل میں پاکستان فیورٹ ہے یا نیوزی لینڈ ؟ یہ کہنا ہے مشکل ہے۔ کیوی کھلاڑی سڈنی کی کنڈیشن سے واقف ہیں اچھا کھیل ہوگا۔

دوسری جانب پاکستانی ٹیم نے بھی میچ کے لیے حکمت عملی بنا لی ہے۔ مینٹور میتھیو ہیڈن کا کہنا ہے کہ پاکستان ٹیم ایسی ہے کچھ بھی کرسکتی ہے۔ بابر اعظم کی بڑے میچ میں واپسی طوفان کی طرح ہوسکتی ہے۔

سیمی فائنل سے قبل قومی ٹیم کے کپتان بابر اعظم گھنٹوں تنہا پریکٹس کرتے بھی نظر آئے۔ جبکہ دیگر کھلاڑیوں نے میچ سے پہلے آرام کیا۔

Advertisements
julia rana solicitors london

واضح رہے کہ ورلڈ کپ کے دوران سڈنی میں کھیلے جانے والے 6 میچوں میں سے 5 میں پہلے بیٹنگ کرنے والی ٹیم جیتی۔

  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply