نئی دہلی،مسلمانوں کے درجنوں گھر مسمار کردیے گئے

بھارت میں مسلمانوں پر زمین تنگ کر دی گئی، نئی دہلی میں مسلمانوں کے 25 گھر مسمار کر دیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق مودی سرکار نے بھارت میں مسلمانوں کا جینا مشکل کر دیا ہے، بھارتی حکام نے ایک اور غنڈہ گردی کی کارروائی کرتے ہوئے دارالحکومت نئی دہلی کے جنوب مغربی علاقے میں مسلمانوں کے مکانات کی ایک بڑی تعداد کو مسمار کر دیا ہے۔

دہلی ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے فتح پور بیری میں تجاوزات کی آڑ میں مسلمانوں کے گھر گرائے، خواتین دہائیاں دیتی رہیں لیکن حکام نے ایک نہ سنی، مکانات منہدم کرنے سے پہلے ضروری سامان بھی لینے نہ دیا گیا۔

دہلی ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے عملے کی مدد کرنے والی پولیس نے بغیر کسی پیشگی اطلاع کے انہدام کے خلاف احتجاج کرنے والی خواتین کے خلاف بھی طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا۔

Advertisements
julia rana solicitors london

ہیومن رائٹس واچ اور دیگر بین الاقوامی اداروں نے پہلے ہی تشویش کا اظہار کیا ہے کہ ہندوستان میں حکام ایسے قوانین اور پالیسیاں اپنا رہے ہیں جو منظم طریقے سے مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک پر مبنی ہیں۔

  • merkit.pk
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply