• صفحہ اول
  • /
  • نگارشات
  • /
  • مہنگائی کا راج: ہفتہ وار شرح تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، 23 اشیا کی قیمتیں بڑھ گئیں

مہنگائی کا راج: ہفتہ وار شرح تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، 23 اشیا کی قیمتیں بڑھ گئیں

اسلام آباد: ملک میں مہنگائی کا راج برقرار ہے، ہفتہ وار شرح ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔

وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ ہفتہ وار جائزہ رپورٹ کے  مطابق  ملک میں مسلسل دوسرے ہفتے مہنگائی کی شرح میں ایک اعشاریہ 83 فیصد اضافہ ہوا ہے جس کے بعد مہنگائی کی شرح 44 اعشاریہ 58 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ ہفتہ وار جائزہ رپورٹ کے تحت حالیہ ہفتے کے دوران 23 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔

اعداد و شمار کے تحت رواں ہفتے ٹماٹر کی فی کلو قیمت 47 روپے 42 پیسے بڑھ گئی جس کے بعد فی کلو ٹماٹر کی قیمت 110 روپے سے بڑھ کر 157 روپے تک پہنچ گئی ہے جب کہ پیاز کی فی کلو قیمت میں بھی 35 روپے 6 پیسے کا اضافہ ہوا ہے۔

ایک ہفتے کے دوران آلو کی فی کلو قیمت 3 روپے 88 پیسے بڑھ گئی، انڈوں کی قیمتوں میں فی درجن 7 روپے 25 پیسے کا اضافہ ہوا، ایل پی جی کا گھریلو سلنڈر51 روپے 2 پیسے مہنگا ہو گیا۔

وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ رپورٹ کے تحت بچوں کے خشک دودھ کا 390 ملی گرام کا پیکٹ 8 روپے 57 پیسے مہنگا ہو گیا، برائلر مرغی کی فی کلو قیمت 2 روپے 48 پیسے بڑھ گئی، گندم کا 20 کلو آٹے کا تھیلا بھی 7 روپے تک مہنگا ہو گیا۔ رواں ہفتے دال مونگ ، دال ماش اور جلانے کی لکڑی بھی مہنگی ہوگئی۔

جائرہ رپورٹ کے تحت ایک ہفتے کے دوران صرف 7 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی، دال مسور کی فی کلو قیمت میں 3 روپے 91 پیسے کی کمی آئی، ویجیٹیبل گھی کی قیمت میں 5 روپے 52 پیسے کی کمی ہوئی جب کہ چینی، کیلے، ڈالڈ اور کوکنگ آئل بھی سستا ہو گیا۔

Advertisements
julia rana solicitors

وفاقی ادارہ شماریات کی جاری کردہ جائزہ رپورٹ کے تحت ایک ہفتے کے دوران بریڈ، تازہ دودھ اور دہی سمیت 21 اشیا کی قیمتوں میں استحکام پایا گیا۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors

اسما مغل
خیالوں کے سمندر سے چُن کر نکالے گئے یہ کچھ الفاظ ہی میرا تعارف ہیں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply