قائد تیرا اک اشارہ( 100 لفظوں کی کہانی )

کراچی کی سرزمین پہ قدم رکتھے ہی قائد سے ملنےکیلئے روانہ ہوا۔
قائد سے مزار کی سیڑھیوں پر ملاقات ہوگئی قائد نے بڑے تپاک سے گلے لگایا۔
قائد:میرے ملک اور قوم کا کیا حال ہے.
میں: قائد آپ کے لوگ، آپ اور آپ کے اصولوں کو بھول چکے ہیں۔ ہر طرف طوفان بدتمیزی برپا ہے۔
قائد:مجھے اپنے نوجوانوں پہ فخر ہے۔
میں:خود چل کر دیکھ لیں۔
لوگوں کا جمِ غفیرنعرے لگا رہا تھا۔ نعروں کو سن کر قائد کے چہرے پہ خوشی کے آثار نمودار ہوئے۔
قائد تیرا اک اشارہ، حاضر ہے لہو ہمارا۔

عبدالحنان ارشد
عبدالحنان ارشد
عبدالحنان نے فاسٹ یونیورسٹی سے کمپیوٹر سائنس کی ڈگری حاصل کر رکھی ہے۔ ملک کے چند نامور ادیبوں و صحافیوں کے انٹرویوز کر چکے ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ آپ سو لفظوں کی 100 سے زیادہ کہانیاں لکھ چکے ہیں۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *