• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • بی جے پی حکومت ہٹلر اور موسولینی سے بھی بدتر ہے، ممتا بینرجی

بی جے پی حکومت ہٹلر اور موسولینی سے بھی بدتر ہے، ممتا بینرجی

بھارتی ریاست مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بینرجی نے مودی سرکار کی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی حکومت ہٹلر، جوزف سٹالن یا موسولینی سے بھی بدتر ہے۔

بھارتی ٹی وی کے مطابق کلکتہ میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ممتا بینر جی نے کہا کہ حکومت ریاستی معاملات میں مداخلت کے لیے مرکزی ایجنسیوں کو استعمال کر رہی ہے اور ملک کے وفاقی ڈھانچے کو روند رہی ہے۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

ممتا بینر جی نے مرکز کی مداخلت کی کوششوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کی زیرقیادت حکومت کے تحت حالات اس ایڈولف ہٹلر، جوزف اسٹالن یا بینیٹو مسولینی جیسے آمروں کے دور سے زیادہ بدتر ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مرکزی ایجنسیوں کو جمہوریت کو بچانے کے لیے مکمل اختیارات دینے چاہییں۔

وزیراعلیٰ ممتا بینرجی نے نام لیے بغیر مودی اور امیت شاہ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایجنسیاں کام نہیں کر سکتیں کیونکہ کوئی خود مختاری نہیں ہے۔ خود مختاری دو افراد اور بی جے پی کے ہاتھ میں ہے۔ اس طرح کی سیاسی کسی آمر کے زمانے میں نہیں تھی۔

بنگال کی وزیر اعلیٰ طویل عرصے سے مرکز کی بی جے پی حکومت پر سی بی آئی، انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ جیسی مرکزی ایجنسیوں کو مخالفین بشمول ان کی پارٹی کے لوگوں کو “ہراساں” کرنے کے لیے استعمال کرنے کا الزام لگا رہی ہیں۔

Advertisements
julia rana solicitors london

انہوں نے پریس کانفرنس میں اصرار کیا کہ میں چاہتی ہوں کہ مرکزی حکومت کی ایجنسیوں کو خود مختاری دی جائے تاکہ وہ غیر جانبداری سے کام کر سکیں۔ کوئی سیاسی انتقام نہیں ہونا چاہیے۔ حکومت ایجنسی کے ملازمین کو تنخواہ فراہم کرے اور کچھ نہیں۔ میں پہلی ہوں جس نے یہ مسئلہ اٹھایا۔ اگر ہم ہندوستان میں جمہوریت کو بچانا چاہتے ہیں تو یہ کرنا پڑے گا۔

  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply