​ بانوےبرسوں کا یہ بوجھ۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

کھول یہ گانٹھوں بھری پوٹلی، اے ستیہ پال

جانے کیا اس میں ہے پوشیدہ تری نظروں سے
آج کا ’’کل‘‘ تو نہیں؟ ہو بھی تو مخفی ہی رہے
کل‘‘ تو ’’ایمائی‘‘ ہے، ’’اَن دیکھا ‘ہے، ’در پردہ‘ہے’ ’
تُو، سر ِ دست اسی ’حال‘‘ کو ’’حاضر‘‘ پہچان
بانوے سال کی انگنائی میں پہلا یہ قدم
تیرا یہ دوسرا بچپن ہے، اسے مت ٹھکر ا

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

نا نوشتہ ہی رہے گی تری وہ لوح کہ جو
ضبط ِ تحریر میں اب تک تو نہیں لائی گئی
صرف اک رفع ِ نشاں،حزف شدہ باقی ہے
کوئی اعلامیہ، منشور،  کوئی فال نہیں
تُو نے تو نام و نشاں تک نہیں چھوڑا اپنا
صفحہ ِ ایام پر ا رجاعِ ، سند کچھ بھی نہیں

Advertisements
julia rana solicitors london

بانو ے برسوں کی یہ پوٹلی، گانٹھوں کی اسیر
اب نہ کھُل پائی اگر تجھ سے تو اے ستیہ پال
بند رہ جائے گی مستور، نظر سے اوجھل
صم بکم، چپکے سے یہ جان بھی رخصت ہو گی
ساکت و صامت و منہ بند تُو مر جائے گا
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ۔۔۔۔۔۔۔
۲۴ْ اپریل ۲۰۲۲ عیسوی، اپنے ۹۲ وے جنم دن پر تحریر کردہ

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • merkit.pk

ستیہ پال آنند
شاعر، مصنف اور دھرتی کا سچا بیٹا

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply