• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • سودی مالیاتی نظام سے متعلق اسٹیٹ بینک کی رپورٹ وفاقی شرعی عدالت میں پیش

سودی مالیاتی نظام سے متعلق اسٹیٹ بینک کی رپورٹ وفاقی شرعی عدالت میں پیش

سودی مالیاتی نظام سے متعلق کیس میں اسٹیٹ بینک کی طرف سے اسلامی بینکاری نظام کےلیے اقدامات کی مفصل رپورٹ وفاقی شرعی عدالت میں پیش کردی گئی۔

چیف جسٹس نورمسکانزئی نے ریمارکس دیئے کہ جب تک قانون سازی نہیں ہوگی تب تک کوئی نظام نہیں چل سکتا۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

دوران سماعت سٹیٹ بینک کے وکیل سلمان اکرم راجہ نے دلائل دیئے کہ اسٹیٹ بینک بلا سود لین دین کا نظام قائم کرنے میں سنجیدہ ہے، اسلامی بینکنگ سسٹم راتوں رات قائم نہیں ہوسکتا۔

یہ ایک ارتقائی عمل ہے، یہ کام آسان نہیں قانونی دشواریاں بھی درپیش ہیں۔ یہ سوال اپنی جگہ قائم ہے کہ اسلامی بینکنگ نظام پالیسی معاملہ ہے یا عدالت کے حکم کے تابع ہوگا۔

چیف جسٹس نے کہا کہ حکومت اور مالیاتی ادارے اتفاق رائے پیدا کریں تو یہ کام آسان ہو سکتا ہے۔ حکومت اور حکومتی ادارے اس ضمن میں رکاوٹیں پیدا نہ کریں۔

Advertisements
julia rana solicitors london

جسٹس ڈاکٹرسید محمد انورکا کہنا تھا کہ پارلیمنٹ سپریم ہے، پارلیمنٹ نے قانون بنا دیا ہے کہ قوانین اسلامی شریعت کے مطابق ڈھالے جائیں گے۔ اب تو مالیاتی نظام میں آئی ایم ایف کا بھی کردار ہے۔۔جب حکومت خود اسلامی بنکاری نظام کی طرف جارہی ہے تو پھر رکاوٹ کیوں۔ عدالت نے اٹارنی جنرل کوطلب کرتے ہوئے سماعت یکم فروری تک ملتوی کردی۔

  • julia rana solicitors london
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply